امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔     No IMG     افریقی ملک مراکش کی عدالت نے ایک بچی کی اجتماعی عصمت ریزی کے گھناؤنے واقعے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع     No IMG     دوست کو چاقو کے وارسے قتل کرنے والی حسینا کو سزائے موت     No IMG     بہاولپور جلسے میں کم تعداد پر عمران خان برہم لیکن پارٹی عہدیداران نے ایسی بات بتادی کہ کپتان کیساتھ جہانگیر ترین بھی حیران پریشان     No IMG     اکرام گنڈا پور کے قافلے پر خود کش حملہ، ڈرائیور شہید، تحریک انصاف کے امیدوار اور 2 پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد زخمی     No IMG     پاکستان اچھا کھیلاہم بہت براکھیلے،زمبابوین کھلاڑی کا اعتراف     No IMG     پاکستان سمیت دنیا بھر میں28 جولائی کو مکمل چاند گرہن ہوگا     No IMG     حنیف عباسی کا فیصلہ انصاف کے اصولوں پر مبنی نہیں , شہباز شریف     No IMG     سعودی عرب غیر ملکی ٹرک ڈرائیوروں پر پابندی سے ماہانہ 200ملین ریال کا نقصان ہوگا     No IMG     امریکہ میں کال سینٹر اسکینڈل میں ملوث 21 بھارتی شہریوں کو20 سال تک کی سزا     No IMG     اسرائیی حکومت نے القدس میں سرنگ کی مزید کھدائی کی منظوری دے دی     No IMG     ویتنام کے شمالی علاقوں میں سمندری طوفان سے 20 افراد ہلاک اور14 زخمی ہوگئے     No IMG     شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا ملنے سے اب این اے 60 راولپنڈی کا الیکشن یکطرفہ ہو جائے گا     No IMG     حنیف عباسی نے انسداد منشیات عدالت کی جانب سے دی گئی عمرقید کو ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان     No IMG     اسرائیل کے مجرمانہ حملوں میں 4 فلسطینی شہری شہید     No IMG    

یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور امریکا کی پالیسی میں تبدیلی کو ’اعلان جنگ‘ قرار دیا ہے۔حماس
تاریخ :   07-12-2017

فلسطین (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) حماس کے لیڈر اسماعیل ہنیہ نے فلسطینیوں سے نئی ’انتفادہ‘ یا مزاحمت شروع کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور امریکا کی پالیسی میں تبدیلی کو ’اعلان جنگ‘ قرار دیا ہے۔فلسطینیوں کے بااثر گروپ حماس نے جمعے کے روز  سے اسرائیل کے خلاف تیسری ’انتفادہ تحریک‘ شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔ جمعرات کو غزہ میں بات چیت کرتے ہوئے اسماعیل ہنیہ کا کہنا تھا، ’’ہمیں صہیونی دشمن کے خلاف انتفادہ شروع کرنے کی اپیل اور اس کے لیے کام کرنا ہوگا۔‘‘ ان کا مزید کہنا تھا کہ اس وقت تک ’مزاحمت جاری رکھی جائے، جب تک ٹرمپ اور قابض طاقتوں کو احساس نہیں ہو جاتا کہ انہوں نے یہ غلط فیصلہ کیا ہے‘۔ ٹوئٹر پر بھی ایک پیغام جاری کرتے ہوئے حماس نے اس امریکی فیصلے کو ’اعلان جنگ‘ قرار دیا ہے۔دریں اثناء فلسطینی اتھارٹی نے مغربی کنارے اور مشرقی یروشلم میں عام ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔ فلسطین میں آج بھی امریکی پالیسی میں تبدیلی کے خلاف مظاہرے جاری ہیں جب کہ تمام تر دکانیں اور اسکول بند رکھے گئے ہیں۔ گزشتہ روز مشرقی یروشلم میں دس فلسطینیوں کو  پرتشدد احتجاج کی وجہ سے گرفتار کر لیا گیا تھا۔

دوسری جانب امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے حقیقت کو تسلیم کیا ہے۔ انہوں نے یہ بیان ویانا میں ایک کانفرنس میں شرکت کے دوران دیا ہے۔ ترک وزیراعظم علی بن یلدرم نے کہا ہے کہ امریکا نے ’اس بم کی پِن کھینج دی ہے، جو خطے میں پھٹنے کے لیے تیار ہے‘۔ انہوں نے واشنگٹن حکومت سے یہ فیصلہ واپس لینے کی اپیل کی ہے۔

یورپ کے اٹھائیس رکنی اتحاد یورپی یونین کے خارجہ امور کی سربراہ فیڈریکا موگیرینی نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ کا یہ فیصلہ ’ہمیں ماضی کے تاریک دور میں واپس بھیج سکتا ہے‘۔ادھر اسرائیلی وزیراعظم بینجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ وہ کئی دیگر ممالک کے ساتھ بھی رابطے میں ہیں، جو ٹرمپ جیسا فیصلہ کریں گے، ’’ہم پہلے سے ہی کئی دیگر ممالک کے ساتھ رابطے میں ہیں، جو اسی طرح کا فیصلہ کریں گے۔ اور مجھے اس میں کوئی شک نہیں کہ امریکی سفارت خانہ منتقل ہونے کے بعد کئی ممالک اپنے سفارت خانے یروشلم منتقل کر دیں گے۔‘‘ ان کا مزید کہنا تھا، ’’یہ صرف وقت کا سوال ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*