پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

ہمیں ملک ریاض کی گرفتاری کا حکم دینے کے لیے مجبور نہ کریں,چیف جسٹس میاں ثاقب نثار
تاریخ :   07-01-2019

اسلام آباد ( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جعلی بنک اکاؤنٹس کیس کی سماعت جاری ہے۔دوران سماعت ملک ریاض کے وکیل عدالت میں پیش ہوئے جنھوں نے ملک ریاض کے حق میں کچھ بولنے کی کوشش کی تو چیف جسٹس

نے ریمارکس دئیے کہ ملک ریاض کے خلاف بہت مواد ہمارے پاس آیا ہے۔
ہمیں مجبور نہ کریں ہم ملک ریاض کی گرفتاری کا حکم دیں۔بڑے آدمی کو بچانے پوری ٹیم آ جاتی ہے۔سارے ایسے کہتے ہیں جیسے ملک ریاض معصوم ہوں۔چیف جسٹس نے کہا کہ رپورٹ کی مزید تفتیش کر کے نیب کو بھیج دیں گے پھر یہ لوگ جانیں اور نیب جانے۔چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ آپ کہتے ہیں ملک ریاض ایماندار آدمی ہے؟ چیف جسٹس نے کہا کہ جے آئی ٹی رپورٹ میں جواب مانگا ہے۔
اپنی پوزیشن واضح کریں۔واضح رہے مذکورہ کیس کی 31دسمبر کو ہونے والی سماعت میں چیف جسٹس آف پاکستان نے چئیرمین بحریہ ٹاؤن ملک ریاض سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ ملک ریاض صاحب آپ کا نام ہر جگہ کیوں آجاتا ہے؟کراچی میں جو آپ کر رہے ہیں کیا وہ جائز ہے؟ جس پر چئیرمین بحریہ ٹاؤن ملک ریاض نے کہا کہ میں سارا کچھ سیٹل کرنا چاہتا ہوں آپ بس حکم کریں۔
ملک ریاض کی اس بات پر چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ میں نے آپ سے ایک ہزار ارب روپے مانگے تھے آپ وہ دے دیں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آپ ملک کو چلا رہے ہیں، ملک کا مال واپس کریں، زندگی گزارنے کے لیے آپ کو کتنے ارب روپے چاہئیں، وہ رکھ لیں باقی دے دیں۔ آپ حکومتیں بناتے اور گراتے ہیں۔ آپ کہتے ہیں کہ آپ کو ایک پلاٹ کا علم نہیں تھا۔ ملک ریاض نے کہا کہ میں نے کبھی ملک نہیں چلایا۔ میری جائیداد چاہیں تو لے لیں، علی ریاض کا گھر چاہیں تو لے لیں، شکر کریں پاکستان میں کوئی 70 منزلہ عمارت بنی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
بلاول بھٹو زرداری اور وزیر اعلیٰ سندھ کا نام ای سی ایل اور جے آئی ٹی رپورٹ سے نکالنے کا حکم
کپتان کے آنے سے پہلے اسٹاک مارکیٹ90 بلین ڈالر تھی،50 بلین ڈالر اسٹاک مارکیٹ سے اڑ گیا
Translate News »