مسلم لیگ ق نے کا تحریک انصاف کے رویے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کو تحفظات سے آگاہ کرنے کا فیصلہ     No IMG     تحریک انصاف نے سابق صدرآصف علی زرداری کی نااہلی کے لیے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے سانحہ ساہیوال پر بغیر تحقیقات کے بیانات دینے پر وزرا اور پنجاب پولیس پر سخت اظہار برہمی     No IMG     وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کی جسٹس ثاقب نثارپرتنقید، موجود چیف جسٹس کی تعریف     No IMG     برطانیہ میں بھی برف باری سے شدید سردی     No IMG     برطانیہ کے سابق وزیراعظم کے جان میجر نے موجودہ وزیرِاعظم تھریسا مے سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ یورپ سے علیحدگی (بریگزٹ) پر ریڈ لائن سے پیچھے ہٹ جائیں     No IMG     میکسیکو میں پیٹرول کی پائپ لائن میں دھماکے اور آگ لگنے کے حادثے میں ہلاکتوں کی تعداد 73 ہوگئی     No IMG     امریکی سینیٹر لنزے گراہم کی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات     No IMG     سی ٹی ڈی کے مطابق ذیشان کا تعلق داعش سے تھا ,صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت     No IMG     وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو معلوم ہی نہیں پھولوں کا گلدستہ کہاں پیش کرنا ہے کہاں نہیں؟     No IMG     لاہورمیں شہریوں نے پولیس کی دھلائی کر ڈالی، بھاگ کر جان بچائی     No IMG     وزارتِ تجارت نےکاروں کی درآمد پر لگائی جانی والی پابندیوں پر نظر ثانی کرتے ہوئے انہیں مزید سخت کردیا     No IMG     خواتین کے مساوی حقوق اور تشدد کے خاتمے کے لیے امریکہ، برطانیہ سمیت مختلف ممالک میں خواتین کی جانب سے ریلیاں نکالی گئیں۔     No IMG     فرانس میں صدر میکروں کی حکومت کے خلاف پیلی جیکٹ والوں کا احتجاج اس ہفتے بھی جاری رہا، کئی مقامات پر پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں     No IMG     وزیراعلیٰ پنجاب نے اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کرلیا     No IMG    

کابل اور اسلام آباد کے تعلقات کشیدہ ہونے کا خدشہ,سیاسی مبصرین
تاریخ :   07-11-2017

افغانستان(ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) کے شہر جلال آباد میں پاکستانی سفارت خانے کے ایک رکن رانا نیئر اقبال کے قتل پر پاکستان میں غم و غصے کی لہر دوڑ گئی ہے۔ کئی سیاسی مبصرین کا خیال ہے کہ اس قتل سے دونوں ممالک کے تعلقات مزید کشیدہ ہوں گے۔

 

پاکستانی صدر ممنون حسین اور وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی نے اس قتل کی پر زور مذمت کی ہے جب کہ پاکستان کے دفترِ خارجہ نے اس قتل پر افغانستان سے احتجاج بھی کیا ہے۔ نیئر اقبال کا نمازِ جنازہ آج سات نومبر کو اسلام آباد میں ادا کیا گیا، جس میں وزیرِ خارجہ خواجہ محمد آصف اور کئی اعلیٰ سرکاری حکام نے شرکت کی۔ بعد ازاں انہیں اسلام آباد کے ایک مقامی قبرستان میں دفن کر دیا گیا۔

کئی سیاسی رہنماؤں اور تجزیہ کاروں کے خیال میں اس افسوناک قتل سے دونوں ممالک کے تعلقات میں مزید کشیدگی آئے گی۔ پاکستانی سینٹ کے رکن عثمان کاکڑ نے اس قتل پر اپنے تاثرات دیتے ہوئے ڈوئچے ویلے کو بتایا، ’’پاکستان اور افغانستان کے درمیان دہشت گردوں کے خفیہ ٹھکانے اور افغانستان میں ہونے والے دہشت گردانہ حملوں سمیت کئی امور پر پہلے ہی کشیدگی چل رہی تھی اور اب اس میں مزید شدت آئے گی۔ پہلے یہاں افغانستان کے ایک صوبے کے ڈپٹی گورنر اور ان کے رشتہ داروں کو اغواء کیا گیا اور بعد میں یہ افسوناک واقع رونما ہوا۔ دونوں ممالک کو اپنے تعلقات میں بہتری لانا ہوگی اور مل جل کر اختلافات کو حل کرنا ہوگا تاکہ خطے میں امن ہوسکے۔‘‘
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا، ’’افغانستان میں صدر اشرف غنی نے اپنی پارلیمنٹ، کابینہ اور عوام کو ناراض کر کے پاکستان کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھایا لیکن افغانستان میں حملے کم ہونے کی بجائے اور شدید ہوگئے، جس کی وجہ سے اشرف غنی کو بہت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ جب تک اسلام آباد دہشت گردوں کے خفیہ ٹھکانے ختم کرنے کے عالمی مطالبے کو پورا نہیں کرتا، افغانستان میں امن ممکن نہیں ۔‘‘

 لیکن کئی دوسرے تجزیہ نگاروں کے خیال میں پاکستان پر الزام تراشی بلاجواز ہے۔ معروف تجزیہ نگار کرنل ریٹائرڈ انعام الرحیم نے اس قتل پر اپنا ردِ عمل دیتے ہوئے ڈی ڈبلیو کو بتایا، ’’پاکستانی حکام نے اس بات کی چانچ پڑتال کی کہ آیا جن افغان حکام کے پاکستان آنے کا دعویٰ کیا جارہا ہے وہ یہاں آئے بھی تھے یا نہیں۔ ریکارڈ سے پتہ چلتا ہے کہ ایسے کوئی بندے یہاں علاج یا کسی اور مقصد کے لیے نہیں آئے۔ تاہم پاکستانی اہلکار، جن کو شہید کیا گیا، وہ تو ایک بہت محفوظ علاقے میں رہ رہے تھے۔ ان کا قتل اس بات کا غماز ہے کہ وہاں بھارتی موجودگی بڑھ رہی ہے ۔‘‘
انہوں نے کہا کہ امریکا بھارت کو افغانستان میں کوئی کردار دینا چاہتا ہے لیکن ایسا کردار دینے کی صورت میں وہاں اس طرح کے واقعات میں اضافہ ہوگا: ’’سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ امریکا بھارت کو کوئی بھی کردار کیوں دینا چاہتا ہے۔ بھارت کی افغانستان سے سرحد نہیں ملتی، وہ یہاں بیٹھ کر ایک طرف ہمارے خلاف سازش کرے گا اور دوسری طرف لائن آف کنٹرول پر بھی ہمیں خون میں نہلانے کی کوشش کرے گا۔ بھارت اور اس کے پروردہ افغانستان میں امن نہیں چاہتے۔ جب مغربی ذرائع خود اعتراف کرتے ہیں کہ افغانستان کے پچاس فیصد سے زائد حصے پر طالبان کی عملداری ہے، تو پھر پاکستان پر الزام تراشی کا کیا جواز ہے۔ امریکا نے اپنی پوری فوجی طاقت کے ساتھ اس عملداری کو ختم کیوں نہیں کیا۔‘‘
Print Friendly, PDF & Email
جیشِ محمد کے سربراہ مسعود اظہر کا بھتیجا جھرپ میں ہلاک،بھارتی پولیس فورس سی آر پی ایف
سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے کہا ہے کہ ایران کی طرف سے یمنی ملیشیا گروہوں کو راکٹ سپلائی،

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »