پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

پاکستان اب ‘کمرشل جہاز بھی بنائے گا منصوبے پر کام شروع
تاریخ :   16-11-2017

پاکستان (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) میں لڑاکا اور دیگر تربیتی جہاز بنانے والے سرکاری ادارے کے ایک عہدیدار نے کہا ہے کہ پاکستان بہت جلد کمرشل جہاز بنانے کے منصوبے پر کام شروع کر دے گا۔

پاکستان ایئرو ناٹیکل کمپلیکس ‘پی اے سی’ کے سربراہ ایئر مارشل احمر شہزاد نے کہا ہے کہ یہ جہاز ‘پی اے سی’ کے ہیڈکواٹر کامرہ میں بنائے جائیں گے جو ملکی ضروریات کے علاوہ بین الاقوامی مارکیٹ میں بھی فروخت کے لیے پیش کیے جائیں گے۔

احمر شہزاد نے کہا کہ “جیسے ہی چین پاکستان اقتصادی راہدری منصوبے (سی پیک) کی وجہ سے ملک میں اقتصادی سرگرمیوں میں تیزی آئے گی ہمیں ملکی ضروریات کے لیے ملک کے اندر بہتر اور تیز فضائی آمدورفت کے ذرائع کی ضرورت ہو گی۔ اس کے ساتھ ساتھ ہمیں بین الاقوامی سطح پر (یہ طیارے فروخت کرنے کے لیے) خاص طور پر مشرقِ وسطیٰ اور وسطی ایشیا کی ضروریات کو بھی مدِ نظر رکھیں گے۔”

احمر شہزاد نے دبئی میں ایئر شو 2017ء کے موقع پر ‘خلیج ٹائمز’ سے ایک انٹرویو میں کہا کہ یہ مسافر جہاز 10 سے 30 سیٹوں پر مشتمل ہوں گے۔ تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ یہ منصوبہ باقاعد طور پر کب شروع ہو گا۔

پاکستان کی طرف سے کمرشل جہاز بنانا ایک غیر معمولی منصوبہ ہو گا کیونکہ اس سے قبل پاکستان میں مقامی طور پر کبھی بھی مسافر جہاز تیار نہیں کیے گئے۔

اگرچہ پاکستان چین کے اشتراک کے ساتھ لڑاکا طیارے جے ایف- 17تھنڈر اور تربیتی طیارے سپر مشاق بنا رہا ہے جو اس وقت پاکستان فضائیہ کے زیرِ استعمال ہیں تاہم پاکستان کو کمرشل جہاز بنانے میں کس حد تک کامیابی ہو گی یہ مستقبل ہی میں واضح ہو گا۔

پاکستان فضائیہ کے سابق ایئر مارشل شاہد لطیف نے وائس آف امریکہ سے گفتگو میں کہا ہے کہ جے ایف تھنڈر کے طرح پاکستان کمرشل جہاز بھی کامیابی سے بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

انہوں نے کہا، “ہم نے جے ایف-17 کو (چین کے ساتھ) مشترکہ طور پر بنانے کے لیے جو کمپلیکس بنایا وہاں جے ایف تھنڈر بنانے کے علاوہ اسے کمرشل جہاز بنانے میں بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔”

انہوں نے کہا کہ “لڑاکا طیارے کے مقابلے میں کمرشل جہاز بنانا نسبتاً آسان کام ہے۔ اس لیے یہ ایک اچھا فیصلہ ہے کہ ہم کمرشل جہاز بنانے کا کام کریں۔ اگر ہم جے ایف 17 لڑاکا جہاز کامیابی سے بنا سکتے ہیں تو میں نہیں سمجھتا کہ ہم اس منصوبے میں ناکام ہوں۔”

ایئر مارشل احمر شہزاد نے ‘خلیج ٹائمز’ کو بتایا کہ دنیا کے کئی ممالک نے سپر مشاق طیارے خریدنے میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے جو تریبتی مقاصد کے لیے بھی استعمال کیے جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان نہ صرف ملک کی فضائیہ کی دفاعی ضروریات کے لیے یہ طیارے بنا رہا ہے بلکہ انہیں دیگر ملکوں کو فروخت کرنے کی بھی کوشش کر رہا ہے۔

جے ایف-17 تھنڈر کو پہلی بار 2009ء میں پاکستان فضائیہ کی بیڑے میں شامل کیا گیا تھا۔

پاکستان اور چین کے اشتراک سے جے ایف-17 تھنڈر طیاروں کی تیار ی کا منصوبہ 1990 ء کی دہائی میں چین میں شروع کیا گیا تھا تاہم بعد ازاں دونوں ملکوں کے تعاون سے ان لڑاکا طیاروں کی تیاری پاکستان میں بھی شروع کردی گئی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
امریکی وزارت خزانہ خامنہ ای اور 80 ایرانیوں کے مالی اثاثے معلوم کرے
اسرائیل، فیس بک اور گوگل جیسی بڑی بین الاقوامی کمپنیوں پر ٹیکس لگانے کی تیاری

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »