مسلم لیگ ق نے کا تحریک انصاف کے رویے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کو تحفظات سے آگاہ کرنے کا فیصلہ     No IMG     تحریک انصاف نے سابق صدرآصف علی زرداری کی نااہلی کے لیے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے سانحہ ساہیوال پر بغیر تحقیقات کے بیانات دینے پر وزرا اور پنجاب پولیس پر سخت اظہار برہمی     No IMG     وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کی جسٹس ثاقب نثارپرتنقید، موجود چیف جسٹس کی تعریف     No IMG     برطانیہ میں بھی برف باری سے شدید سردی     No IMG     برطانیہ کے سابق وزیراعظم کے جان میجر نے موجودہ وزیرِاعظم تھریسا مے سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ یورپ سے علیحدگی (بریگزٹ) پر ریڈ لائن سے پیچھے ہٹ جائیں     No IMG     میکسیکو میں پیٹرول کی پائپ لائن میں دھماکے اور آگ لگنے کے حادثے میں ہلاکتوں کی تعداد 73 ہوگئی     No IMG     امریکی سینیٹر لنزے گراہم کی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات     No IMG     سی ٹی ڈی کے مطابق ذیشان کا تعلق داعش سے تھا ,صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت     No IMG     وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو معلوم ہی نہیں پھولوں کا گلدستہ کہاں پیش کرنا ہے کہاں نہیں؟     No IMG     لاہورمیں شہریوں نے پولیس کی دھلائی کر ڈالی، بھاگ کر جان بچائی     No IMG     وزارتِ تجارت نےکاروں کی درآمد پر لگائی جانی والی پابندیوں پر نظر ثانی کرتے ہوئے انہیں مزید سخت کردیا     No IMG     خواتین کے مساوی حقوق اور تشدد کے خاتمے کے لیے امریکہ، برطانیہ سمیت مختلف ممالک میں خواتین کی جانب سے ریلیاں نکالی گئیں۔     No IMG     فرانس میں صدر میکروں کی حکومت کے خلاف پیلی جیکٹ والوں کا احتجاج اس ہفتے بھی جاری رہا، کئی مقامات پر پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں     No IMG     وزیراعلیٰ پنجاب نے اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کرلیا     No IMG    

پاکستان اب ‘کمرشل جہاز بھی بنائے گا منصوبے پر کام شروع
تاریخ :   16-11-2017

پاکستان (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) میں لڑاکا اور دیگر تربیتی جہاز بنانے والے سرکاری ادارے کے ایک عہدیدار نے کہا ہے کہ پاکستان بہت جلد کمرشل جہاز بنانے کے منصوبے پر کام شروع کر دے گا۔

پاکستان ایئرو ناٹیکل کمپلیکس ‘پی اے سی’ کے سربراہ ایئر مارشل احمر شہزاد نے کہا ہے کہ یہ جہاز ‘پی اے سی’ کے ہیڈکواٹر کامرہ میں بنائے جائیں گے جو ملکی ضروریات کے علاوہ بین الاقوامی مارکیٹ میں بھی فروخت کے لیے پیش کیے جائیں گے۔

احمر شہزاد نے کہا کہ “جیسے ہی چین پاکستان اقتصادی راہدری منصوبے (سی پیک) کی وجہ سے ملک میں اقتصادی سرگرمیوں میں تیزی آئے گی ہمیں ملکی ضروریات کے لیے ملک کے اندر بہتر اور تیز فضائی آمدورفت کے ذرائع کی ضرورت ہو گی۔ اس کے ساتھ ساتھ ہمیں بین الاقوامی سطح پر (یہ طیارے فروخت کرنے کے لیے) خاص طور پر مشرقِ وسطیٰ اور وسطی ایشیا کی ضروریات کو بھی مدِ نظر رکھیں گے۔”

احمر شہزاد نے دبئی میں ایئر شو 2017ء کے موقع پر ‘خلیج ٹائمز’ سے ایک انٹرویو میں کہا کہ یہ مسافر جہاز 10 سے 30 سیٹوں پر مشتمل ہوں گے۔ تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ یہ منصوبہ باقاعد طور پر کب شروع ہو گا۔

پاکستان کی طرف سے کمرشل جہاز بنانا ایک غیر معمولی منصوبہ ہو گا کیونکہ اس سے قبل پاکستان میں مقامی طور پر کبھی بھی مسافر جہاز تیار نہیں کیے گئے۔

اگرچہ پاکستان چین کے اشتراک کے ساتھ لڑاکا طیارے جے ایف- 17تھنڈر اور تربیتی طیارے سپر مشاق بنا رہا ہے جو اس وقت پاکستان فضائیہ کے زیرِ استعمال ہیں تاہم پاکستان کو کمرشل جہاز بنانے میں کس حد تک کامیابی ہو گی یہ مستقبل ہی میں واضح ہو گا۔

پاکستان فضائیہ کے سابق ایئر مارشل شاہد لطیف نے وائس آف امریکہ سے گفتگو میں کہا ہے کہ جے ایف تھنڈر کے طرح پاکستان کمرشل جہاز بھی کامیابی سے بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

انہوں نے کہا، “ہم نے جے ایف-17 کو (چین کے ساتھ) مشترکہ طور پر بنانے کے لیے جو کمپلیکس بنایا وہاں جے ایف تھنڈر بنانے کے علاوہ اسے کمرشل جہاز بنانے میں بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔”

انہوں نے کہا کہ “لڑاکا طیارے کے مقابلے میں کمرشل جہاز بنانا نسبتاً آسان کام ہے۔ اس لیے یہ ایک اچھا فیصلہ ہے کہ ہم کمرشل جہاز بنانے کا کام کریں۔ اگر ہم جے ایف 17 لڑاکا جہاز کامیابی سے بنا سکتے ہیں تو میں نہیں سمجھتا کہ ہم اس منصوبے میں ناکام ہوں۔”

ایئر مارشل احمر شہزاد نے ‘خلیج ٹائمز’ کو بتایا کہ دنیا کے کئی ممالک نے سپر مشاق طیارے خریدنے میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے جو تریبتی مقاصد کے لیے بھی استعمال کیے جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان نہ صرف ملک کی فضائیہ کی دفاعی ضروریات کے لیے یہ طیارے بنا رہا ہے بلکہ انہیں دیگر ملکوں کو فروخت کرنے کی بھی کوشش کر رہا ہے۔

جے ایف-17 تھنڈر کو پہلی بار 2009ء میں پاکستان فضائیہ کی بیڑے میں شامل کیا گیا تھا۔

پاکستان اور چین کے اشتراک سے جے ایف-17 تھنڈر طیاروں کی تیار ی کا منصوبہ 1990 ء کی دہائی میں چین میں شروع کیا گیا تھا تاہم بعد ازاں دونوں ملکوں کے تعاون سے ان لڑاکا طیاروں کی تیاری پاکستان میں بھی شروع کردی گئی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
امریکی وزارت خزانہ خامنہ ای اور 80 ایرانیوں کے مالی اثاثے معلوم کرے
اسرائیل، فیس بک اور گوگل جیسی بڑی بین الاقوامی کمپنیوں پر ٹیکس لگانے کی تیاری

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »