وزیراعظم عمران خان نے مکران کوسٹل ہائی وے پر دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکام سے واقعے پر رپورٹ طلب کر لی     No IMG     افغانستان اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑتے دکھائی دے رہے ہیں     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کا افتتاح کردیا     No IMG     ایران کے وزیر خارجہ کی ترک صدر اردوغان کے ساتھ ملاقات     No IMG     عمان کے وزیر خارجہ نے اپنے ایک بیان میں شام کی عرب لیگ میں واپسی پر تاکیدکی     No IMG     سعودی عرب کی ایک کمپنی نے ترکی میں 100 ملین ڈالر کا سرمایہ لگانے کا اعلان     No IMG     روس کی سرحد پربرطانوی فوجی ہیلی کاپٹروں کی تعیناتی پر شدید رد عمل     No IMG     چین ,نے سی پیک پر بھارت کے اعتراضات کو مسترد کردیا     No IMG     چلی میں چھوٹا طیارہ ایک گھر پر گر کر تباہ ہوگیا، جس کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک     No IMG     فیصل آباد میں جعلی اکاﺅنٹ پکڑے گئے‘بنکوں کا عملہ بھی ملوث نکلا     No IMG     حمزہ شہبازعبوری ضمانت میں توسیع کے لیے ہائی کورٹ پہنچ گئے     No IMG     عوامی مقامات پر غیر مناسب لباس ممنوع، 5 ہزار ریال جرمانہ     No IMG     عالمی بینک نے پاکستان سے جوہری پروگرام، جے ایف 17 تھنڈر، بحری آبدوزوں اور سی پیک قرضوں کی تفصیلات فراہم کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     امریکی شہری پاکستان کا غیر ضروری سفر کرنے سے گریز کریں, امریکی محکمہ خارجہ     No IMG     ملک بھر میں شدید طوفان آنے کا خدشہ     No IMG    

وزیراعظم عمران خان نے 15 ارکان اسمبلی کو پارلیمانی سیکریٹری بنانے کی منظوری دیدی
تاریخ :   27-09-2018

اسلام آباد( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) وزیراعظم عمران خان نے 15 ارکان اسمبلی کو پارلیمانی سیکریٹری بنانے کی منظوری دے دی ہے۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے مختلف وزارتوں کے پارلیمانی سیکریٹری تعینات کرنے کی منظوری دیدی ہے۔ وزارت کابینہ ڈویژن نے اس کا نوٹیفکیشن بھی جاری

کردیا ہے۔وزیراعظم کی جانب سے 15 پارلیمانی سیکریٹری بنانے کی منظوری میں پی ٹی آئی اور اتحادی جماعتوں کے ارکان کے نام شامل ہیں۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے بیٹے زین قریشی کو پارلیمانی سیکریٹری خزانہ، عندلیب عباس کو پارلیمانی سیکریٹری خارجہ، عالیہ حمزہ کو پارلیمانی سیکرٹری ٹیکسٹائل اور لال چن کو انسانی حقوق کا پارلیمانی سیکرٹری مقرر کیا گیا ہے۔اتحادی جماعتوں کے لوگوں کو پارلیمانی سیکریٹری کا عہدہ دیا گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ وہ نوجوانوں کو حکومت میں لے کر آئیں گے تاکہ ان کے ویژن سے عوام کو فائدہ حاصل ہوسکے۔اس سے قبل وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں ملک میں امن و امان کی صورتحال سمیت معاشی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ جبکہ وزیراعظم نے دورہ سعودی عرب کے بارے میں کابینہ کو آگاہ کیا۔وزیرخزانہ اسد عمر نے آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے مذاکرات کے حوالے سے کابینہ کو اعتماد میں لیا۔وفاقی کابینہ کے گذشتہ اجلاس میں کابینہ نے بیرون ملک سرمایہ اور اثاثہ جات کی واپسی کیلئے ریکوری یونٹ کے قیام کی منظوری دی تھی۔ اجلاس میں 9 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیاتھا۔وفاقی کابینہ نے کیڈ ڈویژن کو ختم کرنے کی منظوری دی جبکہ وفاق میں صحت سے متعلقہ امور وزارت نیشنل ہیلتھ سروسز کے ماتحت کرنے اور ملکی اداروں میں ریگولیٹری نظام کی کارکردگی بڑھانے کیلئے ٹاسک فورس قائم کرنے کی بھی منظوری دی تھی۔وفاقی کابینہ نے اورنج ٹرین سمیت گذشتہ حکومت کے تمام ماس ٹرانزٹ منصوبوں کا خصوصی آڈٹ کرانے کی منظوری دی جس کے تحت راولپنڈی، لاہور، ملتان اور پشاور میٹرو بس منصوبوں کا عالمی معیار کی آڈٹ فرم سے خصوصی آڈٹ کرایا جائے گا۔کابینہ نے بیرون ملک سرمایہ اور اثاثہ جات کی واپسی کیلئے ریکوری یونٹ کے قیام کی بھی منظوری دے دی ہے۔ ریکوری یونٹ احتساب کے حوالے سے ٹاسک فورس کی معاونت کرے گا۔وفاقی کابینہ نے پاکستان نیوی ایکٹ 1961ء میں ترمیم اور سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں انکم ٹیکس ترمیمی آرڈنینس میں ترمیم کی بھی منظوری دی ۔دوسری جانب حکومت نے فنانس ایکٹ 2018ء کے انکم ٹیکس آرڈیننس میں بعض ترامیم کردیں جس کے مطابق تنخواہ دارطبقے کیلئے دی گئی رعایت کم کردی گئی ہے۔حکومت کی جانب سے کی جانے والی ترامیم کا اثر تنخواہ دار طبقے پر پڑے گا۔ ترامیم سے تنخواہ دارطبقے کیلئے دی گئی رعایت کم کردی گئی ہیں۔ حکومتی ترامیم کے مطابق چار لاکھ روپے تک سالانہ آمدن پر کوئی ٹیکس نہیں ہوگا۔چار لاکھ سے 8 لاکھ روپے سالانہ آمدن پر ایک ہزار روپے ٹیکس ہوگا۔ جبکہ 8 سے 12 لاکھ روپے سالانہ آمدن پر 2 ہزار روپے ٹیکس ہوگا۔اسی طرح 12 لاکھ روپے سے 24 لاکھ روپے تک سالانہ آمدن پر 5 فیصد انکم ٹیکس ہوگا۔ 24 لاکھ سے زیادہ اور 48 لاکھ روپے سے کم رقم پر 10 فیصد اضافی ٹیکس دینا ہوگا۔اسی طرح ایسے افراد جن کی آمدن 48 لاکھ روپے سے زیادہ ہے انہیں سالانہ آمدن پر 3 لاکھ فکسڈ ٹیکس اور اضافی 15 فیصد دینا ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے مزید 2 کشمیریوں کو شہید
صوبہ بلوچستان کے ضلع قلات میں سیکیورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران 4 دہشت گرد ہلاک جب کہ فائرنگ کے تبادلے میں 2 جوان شہید اور 2 زخمی
Translate News »