گجرانوالہ میں یوم پاکستان کی تقریب میں سکول کی دیوار گرنے سے 6 افراد جاں بحق     No IMG     79 واں یوم پاکستان: وفاقی دارالحکومت میں مسلح افواج کی شاندار پریڈ     No IMG     پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG    

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ پر لعن طعن کر نے والوں کو قوم سے معافی مانگنی چاہیے
تاریخ :   19-01-2018

اسلام آباد(ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ پر لعن طعن کر نے والوں کو قوم سے معافی مانگنی چاہیے ،ْمعاملہ پارلیمنٹ کی استحققاق کمیٹی کو ضرور جانا چاہیے ،ْطاہر القادری کا نام ای سی ایل میں نہیں ڈالا جا رہا ،ْکوئی غیر ملکی پاکستان میں آ کر جرم کرتا ہے تو تعزیرات پاکستان کے تحت اس کے خلاف ایکشن لیا جا سکتا ہے ،ْپنجاب حکومت قصور واقعہ میں ملوث ملزمان کو پکڑنے کیلئے بھرپور طریقے سے کام کر رہی ہے ،ْامید ہے دستیاب شواہد پر قصور واقعہ کا ملزم جلد پکڑا جائیگا ،ْقصور میں احتجاج کے دوران فائرنگ نہیں ہونی چاہیے تھی ،ْمعاملے پر تحقیقات ہورہی ہیں۔جمعہ کو نجی ٹی وی کو دیئے گئے انٹرویومیںوزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پنجاب حکومت قصور واقعہ میں ملوث ملزمان کو پکڑنے کیلئے بھرپور طریقے سے کام کر رہی ہے اور مجھے اس واقعے میں ان کی کوئی کوتاہی نظر نہیں آتی۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہم صوبائی حکومت کو وسائل مہیا کر سکتے ہیں، سی سی ٹی وی ویڈیو موجود ہے لیکن پھر بھی ملزم کو پکڑنے میں مشکلات کا سامنا ہے، امید ہے کہ دستیاب شواہد پر قصور واقعے کا ملزم جلد پکڑا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ پوری کوشش ہے کہ بچوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات میں ملوث ملزمان گرفتار ہوں اور قصور میں اعلی پولیس کے اعلی افسران زورانہ وہاں موجود ہوتے ہیں۔وزیر اعظم نے کہاکہ قصور میں احتجاج کے دوران فائرنگ نہیں ہونی چاہیے تھی اور اس معاملے کی تحقیقات ہو رہی ہیں۔عمران خان اور شیخ رشید کی جانب سے پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے سے متعلق پوچھے گئے سوال پر وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ اگر کوئی پارلیمنٹ کا ممبر ہو تو اسے سوچ سمجھ کر بات کرنی چاہیے، جس نے بھی پارلیمنٹ پر لعن طعن کی اسے اپنے رویے پر قوم سے معافی مانگنی چاہیے۔انہوںنے کہاکہ اگر کوئی رکن قومی اسمبلی پارلیمنٹ پر لعن تعن کرتا ہے تو دراصل وہ خود پر لعن طعن کر رہا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ معاملہ پارلیمنٹ کی استحققاق کمیٹی کو ضرور جانا چاہیے۔طاہر القادری کا نام ای سی ایل میں ڈالے جانے کے حوالے سے وزیراعظم نے کہاکہ طاہر القادری کا نام ای سی ایل میں ڈالے جانے کا معاملہ گزشتہ روز کچھ میڈیا چینلز نے اٹھایا تھا لیکن حکومت کی جانب سے اس قسم کا کوئی اقدام نہیں اٹھایا جا رہا۔وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ طاہر القادری ایک غیر ملکی شہری ہیں اور انہیں عدالت نے احتجاج کی اجازت دی تھی، اگر عدالت نے ان کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دیا تو پھر اس معاملے کو دیکھیں گے کہ آیا کسی غیر ملکی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالا جا سکتا ہے یا نہیں۔انہوںنے کہاکہ اگر کوئی غیر ملکی پاکستان میں آ کر جرم کرتا ہے تو تعزیرات پاکستان کے تحت اس کے خلاف ایکشن لیا جا سکتا ہے لیکن حکومت کو اس معاملے کو ضرور دیکھنا چاہیے کہ کیا ایک غیر ملکی پاکستان میں آکر حکومت گرانے کی باتیں یا حکومت مخالف احتجاج کر سکتا ہے۔ایک سوال پر وزیر اعظم نے کہاکہ نوازشریف نے اپنی رائے کا اظہار کیا ہے کہ شہباز شریف آئندہ وزیر اعظم کے امیدوار ہوسکتے ہیں تاہم ابھی تک پارلیمانی پارٹی نے فیصلہ نہیں کیا انہوںنے کہاکہ جب پارٹی الیکشن جیت جاتی ہے اس کے بعد پارلیمانی پارٹی کااجلاس ہوتا ہے جس میں وزارت عظمیٰ کے امیدوار کااعلان کیا جاتا ہے ۔وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ انشاء اللہ آئندہ الیکشن میں مسلم لیگ (ن)کامیابی حاصل کریگی جس کے بعد آئندہ کے وزیر اعظم کا فیصلہ کیا جائیگا ۔ایگزیکٹ کے جعلی ڈگری اسکینڈل کے حوالے سے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ وائٹ کالر کرائم اور سائبر کرائم کو ثابت کرنا دنیا بھر میں ایک مشکل ہوتا ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ یہ کوئی نیا معاملہ نہیں بلکہ بہت پرانا مسئلہ ہے لیکن اس حوالے سے ہمارے قوانین بہت کمزور ہیں جس کی وجہ سے اس قسم کے مقدمات میں مشکلات درپیش ہوتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر ایک شخص کراچی میں بیٹھ کر امریکا میں ڈگری فروخت کر رہا ہے تو اس معاملے کی تفتیش بہت پیچیدہ معاملہ ہوتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
وزیر مملکت اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت اظہار رائے کی آزادی پر مکمل یقین رکھتی ہے
ولانا صوفی محمد نے اپنے داما اور کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ ملا فضل اللہ کو خوارج سے بھی بدتر قرار دے دیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »