پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

میڈیا ضمنی الیکشن کے نتائج شام 6 بجے سے پہلے نہ چلائے, الیکشن کمیشن آف پاکستان
تاریخ :   13-10-2018

( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخابات کے حوالے سے واضح کیا ہے کہ الیکٹرانک میڈیا موصول ہونے والے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج شام چھ بجے سے پہلے نہ چلائے۔تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخابات دوہزار اٹھارہ کی کوریج

پرمیڈیا کے لیے ہدایت نامہ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکٹرانک میڈیا موصول ہونے والے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج شام چھ بجے سے پہلے نہ چلائے، غیر حتمی اور سرکاری نتائج شام 6 بجے کے بعد میڈیا پر چلائے جا سکتے ہیں، غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کا احترام کیا جائے۔واضح رہے کہ قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی مجموعی طور پر پینتیس نشستوں پر ضمنی انتخابات کل ہو رہے ہیں، جن میں قومی اسمبلی کے گیارہ اور صوبائی اسمبلیوں کے چوبیس حلقے شامل ہیںقومی اسمبلی کے لیے اسلام آباد سے 1، پنجاب سے 8، سندھ سے 1 اور خیبر پختونخوا سے 1 نشست پر انتخاب ہوگا,اسی طرح صوبائی اسمبلیوں کے لیے پنجاب کے 11، سندھ کے 2، خیبر پختونخوا کے 9 اور بلوچستان کے 2 حلقوں میں بھی ضمنی الیکشن ہوگا۔الیکشن کمیشن کی تیاریاںالیکشن کمیشن آف پاکستان کے مطابق ضمنی انتخابات کے لیے سات ہزار چار سو نواسی پولنگ اسٹیشنز بنائے گئے ہیں، جن میں سے ایک ہزار سات سو ستائیس پولنگ اسٹیشنز کو حساس قرار دیا گیا ہے۔بلوچستان میں 134، سندھ میں 201، خیبرپختونخواہ میں 544، پنجاب اور اسلام آباد میں 848 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی حساس قرار دیا گیا ہے، پولنگ اسٹیشنز پر امن و امان کی ذمہ داری فوج نے سنبھال رکھی ہے، فوجی اہلکار 15 اکتوبر تک سیکیورٹی کی ذمہ داریاں انجام دیں گے۔ترجمان الیکشن کمیشن کے مطابق پینتیس حلقوں کے لئے پچانوے لاکھ بیلٹ پیپرزچھاپے گئے،بلوچستان اورسندھ کیلئے 11 لاکھ، پنجاب،اسلام آبادکیلئے 67 لاکھ بیلٹ پیپرزکی چھپائی کی گئی ہے اور اسی طرح خیبرپختونخواکیلئے 17 لاکھ بیلٹ پیپرزچھاپے گئے ہیں۔دوسری جانب الیکشن کمیشن نے چودہ اکتوبر کو ہونے والے ضمنی انتخابات میں فوج کو مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات دئیے چاچکے ہیں، سیکیورٹی اہلکار پولنگ اسٹیشنز کے اندر اور باہر تعینات رہیں گے۔کے مطابق مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات پاک فوج کے افسر انچارج کو حاصل ہوں گے،ضمنی الیکشن کے دوران آفیسر انچارج کسی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کیلئے موقع پر کارروائی کر سکے گا۔انتخابی امیدوارں کی تعدادضمنی انتخابات میں حصہ لینے کے لیے کُل چھ سو اکسٹھ امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کروائے، جن میں سولہ امیدواروں کے کاغذات مسترد ہوئے اور چھ سو پینتالیس کے منظور کئے گئے جو کل انتخاب لڑیں گے۔الیکشن کمیشن کے مطابق پینتیس حلقوں میں 92 لاکھ، 83 ہزار 74 ووٹرز حق رائے دہی استعمال کرسکیں گے جبکہ 51 ہزار 235 انتخابی عملہ خدمات سر انجام دے گا۔ضمنی الیکشن کے بڑے مقابلے اسلام آباد کے حلقے این اے ترپن میں ایک بار پھر اصل مقابلہ پاکستان تحریک انصاف اور نون لیگ کے درمیان ہے،یہاں سے تحریک انصاف کے علی نواز اعوان اور مسلم لیگ (ن) کے راجہ وقار ممتاز امیدوار ہیں، یہ حلقہ وزیراعظم عمران خان کے نشست چھوڑنے پر خالی ہوا تھا، حلقے میں ووٹرز کی تعداد 3 لاکھ 13 ہزار سے زائد ہے۔لاہور کے حلقہ این اے 131 میں مسلم لیگ (ن) کے خواجہ سعد رفیق اور تحریک انصاف کے ہمایوں اختر میں مقابلہ ہے،وزیراعظم عمران خان کی خالی کردہ نشست این اے 131 میں ووٹرز کی کل تعداد 3 لاکھ 65 ہزار 677 ہے۔دوسری جانب سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی این اے 124 لاہور سے پی ٹی آئی کے غلام محی الدین کا مقابلہ کریں گے،مذکورہ حلقہ لاہور کا سب سے زیادہ ووٹرز والا حلقہ ہے، جہاں کی ووٹرز کی تعداد 5 لاکھ 35 ہزار 172 ہے۔ یہ نشست حمزہ شہباز کے پنجاب اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر بننے کے باعث خالی ہوئی تھی۔این اے 60 راولپنڈی میں ووٹرز کی کل تعداد 3 لاکھ 57 ہزار سے زائد ہے، یہ حلقہ شیخ رشید کے نشست چھوڑنے پر خالی ہوا، شیخ رشید کے بھتیجے شیخ راشد شفیق تحریک انصاف کے ٹکٹ پر میدان میں ہیں جبکہ ان کا مقابلہ نون لیگ کے سجاد خان سے ہوگا، مجموعی طور پر حلقے میں امیدواروں کی کل تعداد نو ہے۔این اے 63 ٹیکسلا میں ووٹرز کی مجموعی تعداد 3 لاکھ 71 ہزار سے زائد ہے جبکہ یہاں 5 امیدوار قومی اسمبلی کی نشست کے لیے مد مقابل ہیں۔ یہاں تحریک انصاف کے منصور حیات خان اور ن لیگ کے عقیل ملک کے درمیان مقابلہ ہو گا۔ یہ نشست وفاقی وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان نے دو نشستیں جیتنے کے بعد چھوڑی تھی۔ انہوں نے چوہدری نثار علی خان کو شکست دی تھی۔سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کی خالی کردہ صوبائی اسمبلی کی دو نشستیں پی پی 164 میں کل ووٹرز کی تعداد ایک لاکھ 37 ہزار 906 جبکہ پی پی 165 میں ووٹرز کی تعداد ایک لاکھ 37 ہزار 77 ہے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق لاہور میں ضمنی الیکشن کے لیے کل 881 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے جائیں گے، جن میں 632 پولنگ اسٹیشنز 632 جبکہ 150 پولنگ اسٹیشنز انتہائی حساس قرار دیے گئے۔صوبائی اسمبلی کی نشست پی پی 164 میں پی ٹی آئی کے عمر یوسف کا مقابلہ ن لیگ کے سہیل شوکت بٹ جبکہ پی پی 165 میں ن لیگ کے سیف الملوک کھوکھر کا مقابلہ تحریک انصاف کے میاں منشاء سندھو سے ہوگا۔کراچی کے حلقہ این اے 243 میں تحریک انصاف اور متحدہ قومی موومنٹ کے امیدواروں کے درمیان کانٹے کے مقابلے کی توقع ہے،متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی جانب سے عامر معین چشتی کو نامزد کیا گیا ہے، جبکہ پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے معروف سماجی کارکن عالمگیر خان کو ٹکٹ دیا گیا ہے، اس نشست پر عام انتخابات دوہزار اٹھارہ میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین نے کامیابی حاصل کی تھی۔اوورسیز پاکستانی کے لئے خوشخبری ضمنی الیکشن میں پہلی بار اوورسیز پاکستانی بھی اپنا ووٹ کاسٹ کرسکے ہیں، اس سلسلے میں الیکشن کمیشن نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ووٹ ڈالنے کیلئے پاس کوڈ جاری کردیئے ہیں۔

ترجمان الیکشن کمیشن ندیم قاسم کاکہناہے کہ سمندر پار پاکستانی نادرا کی ہیلپ لائن سے مددبھی لے سکتے ہیں۔اوورسیزووٹرپاکستانی وقت کے مطابق صبح آٹھ سے شام پانچ بجے تک ووٹ کاسٹ کرسکیں گے۔ترجمان الیکشن کمیشن ندیم قاسم کے مطابق ضمنی انتخابات کے لیے 7 ہزار364 رجسٹرڈ آئی ووٹرزکوپاس کوڈجار کردیئے گئے ہیں۔ندیم قاسم نے کہا کہ ویب سائٹ پرجاری ویڈیو کے ذریعہ کمیشن نےووٹرز کو رجسٹریشن اور ووٹ کاسٹ کرنے کے طریقہ کارسے آگاہ کیاہے۔

Print Friendly, PDF & Email
دوسرے ٹیسٹ میں آسٹریلیا زیادہ خطرناک ہو گی ,قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر
قطر کی فلسطین کے لیے 1.5 ڈالر کی امداد
Translate News »