شمالی کوریا کا ایٹمی طاقت کے مظاہرے کا عزم     No IMG     عراق کے دارالحکومت بغداد میں خودکش حملے کے نتیجے میں 19 افراد جاں بحق     No IMG     جرمنی کے وزير خارجہ نے اعلان کیا ہے کہ یورپی یونین کے رکن ممالک مشترکہ ایٹمی معاہدے کی حمایت پر متحد اور متفق ہیں۔     No IMG     ایران کو شام میں فوجی بیس بنانے کی اجازت نہیں دیں گے,اسرائیل کے وزير اعظم     No IMG     مقبوضہ کشمیر، یاسین ملک کی مسلسل غیر قانونی نظر بندی کی سخت مذمت کرتے ہوئے عالمی ریڈ کراس کمیٹی سے اپیل     No IMG     سابق وزیراعظم نواز شریف نے چئیرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو توہین آمیز پریس ریلیز جاری کرنے پر قانونی نوٹس بھجوا دیا۔     No IMG     قونصل جنرل عائشہ فاروقی نے جیل میں ڈاکٹرعافیہ صدیقی سےملاقات     No IMG     پی ٹی آئی چئیرمین نے بڑا فیصلہ کر لیا ، اب پی ٹی آئی میں شمولت اختیار کرنا آسان نہ ہو گا     No IMG     پاکستان میں تھری اور فور جی صارفین کی تعداد 5 کروڑ46 لاکھ ہو گئی،     No IMG     سابق وزیراعظم نواز شریف نے احتساب عدالت میں اپنے نکالنے کی 4 بڑی وجوہات بتادیں     No IMG     حافظ آباد میں کپڑے کی فیکٹری میں آگ لگ گئی     No IMG     پی ٹی آئی کے اعلیٰ عہدے داروں کی پریم کہانی شروع ہو گئی     No IMG     امريکا نے 5 ايرانی اہلکاروں پر پابندی عائد کر دی     No IMG     موجودہ حکومت نے دہشت گردی ، عسکریت پسندی اور توانائی بحران کو حل کیا ، ملکی معیشت کو مستحکم کردیا, لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقیوم     No IMG     پی ٹی آئی گزشتہ 5 سالوں میں خیبرپختونخوا میں ڈلیور کرنے میں بری طرح ناکام ہوئی، مائزہ حمید     No IMG    

مسلم لیگ ن کے صدر اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی زیر صدارت پارلیمانی پارٹی کا اجلاس
تاریخ :   17-05-2018

اسلام آباد ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو ) ::مسلم لیگ ن کے صدر اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی زیر صدارتمسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق اجلاس میں لیگی رہنماؤں نے پارٹی قائد نواز شریف کے بیانیے اور ان کی پالیسی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے شہباز شریف سے مداخلت کی درخواست کی۔ شہباز شریف کی زیر صدارت پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں مسلم لیگ ن کو درپیش مشکلات اور سیاسی حکمت عملی پر غور کیا گیا۔اجلاس میں پارٹی اراکین نے شہباز شریف کو درپیش مشکلات سے آگاہ کیا۔ اراکین نے اجلاس میں کہا کہ نواز شریف کے بیان کے بعد ہمارے لیے ماحول سازگار نظر نہیں آرہا ،ارکان نے اپنے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایسی صورتحال میں ہمیں الیکشن مہم میں بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔ اجلاس میں پارلیمانی پارٹی کے اراکین نے شہباز شریف سے رہنمائی طلب کرتے ہوئے کہا کہ آپ ہی بتائیں ہم کیا کریں۔اجلاس میں شریک ارکان کی رائے تھی کہ محاذ آرائی کے بغیر ہی الیکشن لڑنا اور جیتنا چاہئیے، نواز شریف کے بیان کے بعد ماحول کافی ناسازگار ہو گیا ہے ، ہمیں محاذ آرائی سے اجتناب کرنا چاہئیے، لیگی اراکین نے کہا کہ جس نے بھی متنازعہ صحافی کو نواز شریف سے ملوایا وہ غدار ہے۔ جو بیانیہ شہباز شریف کا ہے وہی نواز شریف کا بھی ہونا چاہئیے۔ارکان نے اس معاملے میں شہباز شریف سے مداخلت کی درخواست بھی کی اور کہاکہ نواز شریف کو دیرینہ ساتھیوں سے صلاح کرنے کا مشورہ بھی دیں، نواز شریف کو آپ کو پہلے ہی پارٹی صدر بنا دینا چاہئیے تھا۔پارلیمانی اراکین نے چودھری نثار علی خان کو واپس لانے کا مطالبہ بھی کیا ۔اراکین نے پارٹی صدر سے اپیل کی کہ ہمین اس بھنور سے نکالیں۔ شہباز شریف نے پارٹی اراکین کو یقین دہانی کروائی کہ میں آپ کے تحفظات اور تجاویز کو نواز شریف تک پہنچاؤں گا۔یاد رہے کہمسلم لیگ ن کے کئی رہنما نواز شریف کے ملک مخالف بیانیے پر پارٹی کو خیر باد کہہ چکے ہیں، پانامہ لیکس کیس میں پی ٹی آئی کو بڑی کامیابی حاصل ہونے کے بعد سے ہی پی ٹی آئی کی سیاسی فتوحات میں دن بدن اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔پانامہ لیکس کیس میں نا اہل ہونے پر مسلم لیگ ن کے رہنما نواز شریف کو نہ صرف وزارت عظمیٰ سے مستعفی ہونا پڑا بلکہ انہیں پارٹی صدارت کے عہدے سے بھی ہاتھ دھونا پڑے۔ یہی وجہ ہے کہ نواز شریف نے سپریم کورٹ سے نا اہلی کے بعد عدلیہ مخالف بیانات دینا شروع کر دئے جن کی ان کے اپنے پارٹی رہنماؤں نے بھی مخالفت کی۔ نواز شریف کی عدلیہ اور ریاستی اداروں کے مخالف پالیسی کو مسترد کرتے ہوئے کئی رہنما حکومتی جماعت سے علیحدگی اختیار کر چکے ہیں تاہم اب نواز شریف کے ممبئی حملوں سے متعلق متنازعہ بیان کی وجہ سے بچے کُھچے پارٹی رہنماؤں نے بھی پارٹی چھوڑنے پر غور شروع کر دیا ہے۔سیاسی تجزیہ کاروں کے مطابق نواز شریف کے اس بیان سے ان کی پارٹی اور آئندہ الیکشن میں ان کے ووٹ بنک کو بھاری نقصان پہنچے گا ، جبکہ کچھ اطلاعات کے مطابق نواز شریف کے اس بیان کو لے کر پارٹی میں دھڑے بندی کا آغاز بھی ہو چکا ہے۔ لیکن نواز شریفاپنے بیان پر قائم ہیں اور ان کا کہناہے کہ میں سچ کہوں گا چاہے اس کے لیے مجھے کچھ بھی سہنا پڑے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*