سری لنکا کے وزیراعظم مہندا راجاپاکسے مستعفی ہوگئے     No IMG     سپریم کورٹ نے افضل کھوکھر اور سیف الملوک کھوکھر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دے دیا     No IMG     بھارتی ارب پتی مکیشن امبانی کی شادی پر خزانوں کے منہ کھُل گئے     No IMG     ایرانی وزیر خارجہ کی قطر کے وزير اعظم سے ملاقات     No IMG     وزیر اعظم کا دہشت گردوں کا آخری حد تک پیچھا کرنے کا عزم     No IMG     فرانسیسی پولیس کا معذور افراد پر بھی ظلم و ستم     No IMG     چین کینیڈین شہریوں کو رہا کرے، امریکی وزیر خارجہ     No IMG     بھارتی ریاست کرناٹک میں زہریلی خوراک کھانے سے تقریباً ایک درجن یاتریوں کی ہلاکت     No IMG     یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرتے ہیں، آسٹریلیا     No IMG     برطانوی وزیراعظم ٹیریزا مے کے پاس اب فقط چار آپشنز موجود ہیں۔     No IMG     سپریم کورٹ کا دہری شہریت والے ملازمین کے خلاف کارروائی کا حکم     No IMG     باردوی سرنگ کے دھماکے میں 6 سکیورٹی اہلکار ہلاک     No IMG     آئی ایم ایف سے پیکج صرف پاکستان کے مفاد کو مد نظر رکھ کر لیا جائے گا۔ وزیر خزانہ اسد عمر     No IMG     ہنگری میں غلام ایکٹ کے خلاف مظاہرے     No IMG     امریکی ایوان نمائندگان نے روہنگیا مسلمانوں پر بربریت کونسل کشی قرار دینے کی قرارداد بھاری اکثریت سے منظور     No IMG    

مسلم لیگ ن نے چودھری نثار علی خان کو ٹکٹ دینے کا اعلان کر دیا
تاریخ :   23-06-2018

لاہور (ورڈ فاسٹ نیوز فار یو) : سابق حکومتی جماعت مسلم لیگ ن نے چودھری نثار علی خان کو ٹکٹ دینے کا اعلان کر دیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق چودھری نثار علی خان کو این اے 59 اور این اے 63 سے ٹکٹ جاری کیا گیا۔چودھری نثار علی خان لاہور کے دو حلقوں سے الیکشن میں حصہ لیں گے۔ واضح رہے کہ چودھری نثار علی خان نے مسلم لیگ ن کو ٹکٹ کے لیے درخواست دینے سے انکار کیا تھا۔جس کے بعد انہوں نے آزاد حیثیت میں نہ صرف الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تھا بلکہ اپنی انتخابی مہم کا بھی آغاز کر دیا تھا۔ دوسری جانبمسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف نے چودھری نثار علی خان کے مقابلے میں کوئی اُمیدوار کھڑا نہ کرنے پر بھی غور شروع کر دیا ہے۔ میڈیا ذرائع کے مطابق چودھری نثار علی خان کے مقابلے میں اُمیدوار کھڑا نہ کرنے کا آپشن چودھری نثار علی خان کو پارٹی میں واپس لانے کے لیے کیا گیا۔نواز شریف چودھری نثار علی خان کے لیے آپشن کھُلا رکھنے کی حتمی منظوری دیں گے۔ چودھری نثار علی خان کے لیے راستہ کھُلے رکھنے کی تجویز مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف اور پارٹی کے سینئیر رہنماؤں نے پیش کی۔ لیکن چودھری نثار علی خان کو درخواست نہ دینے پر پارٹی ٹکٹ جاری نہیں ہو گا۔ نواز شریف اس معاملے پر حتمی فیصلے سے قبل پرویز رشید کو بھی اعتماد میں لیں گے۔یہی نہیں بلکہ سینئیر رہنما چودھری نثار علی خان نے بھی مسلم لیگ ن کی قیادت پر براہ راست تنقید نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔  واضح رہےکہ عام انتخابات 2018ء کی آمد آمد ہے اور سیاسی جماعتیں اپنے اپنے اُمیدواروں کو ٹکٹس جاری کرنے اور ہر حلقے میں تگڑا اُمیدوار کھڑا کرنے پر زور رہی ہیں، مسلم لیگ ن اور چودھری نثار علی خان کے مابین چھڑی ہوئی لفاظی جنگ کسی سے چھُپی ہوئی نہیں ہے۔عام انتخابات کا وقت قریب آتے ہی پی ٹی آئی کی سیاسی فتوحات میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے اور دوسری جانب پی ٹی آئی کی سیاسی حریف اپنے انتخابی اُمیدواروں نے ہاتھ دھوتے جا رہے ہیں۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان مسلم لیگ ن کی قیادت اور ان کے نئے بیانیے سے غیر متفق نظر آتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ سیاسی حلقوں میں خیال کیا جا رہا ہے کہ ممکنہ طور پر چودھری نثار علی خان پارٹی چھوڑ کر کسی اور جماعت میں شامل ہو جائیں گے، چودھری نثار علی خان کی جانب سے پارٹی قیادت اور نواز شریف پر تنقید ایک طرف لیکن انہوں نے پارٹی چھوڑنے کی خبروں کی بارہا تردید کی ۔اپنے ایک بیان میں وہ صاف کہہ چکے ہیں کہ میں پارٹی ٹکٹ کے لیے درخواست بھی نہیں کروں گا۔ یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے سابق وزیر داخلہ اور مسلم لیگ (ن) کے سینئر لیکن ناراض رہنما چودھری نثار علی خان نے آزاد حیثیت میں انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان کردیا۔ راولپنڈی کے اڈیالہ روڈ پر کارنر میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے چودھری نثار علی خان نے کہا کہ پارٹی نے ٹکٹ سیاسی یتیموں کو دے دیئے ہیں اس لیے اب آزاد حیثیت میں الیکشن لڑوں گا اور اب زیادہ محنت کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی میں 10 جبکہ (ن) لیگ میں 100 سے بھی زائد خامیاں ہیں، عورت راج کے مخالف نے آج اپنی بیٹی پارٹی پر مسلط کر دی، مجھے 34 سال کی رفاقت کا خیال آجاتا ہے ورنہ میں نے منہ کھولا تو یہ شریف برادران کہیں منہ دکھانے کے قابل نہیں رہیں گے۔ لیکن گذشتہ روز ہونے والی پریس کانفرنس میں چودھری نثار علی خان نے نہ تو نواز شریف پر تنقید کی نہ ہی الزامات کی بوچھاڑ کی۔ سیاسی مبصرین کے مطابق چودھری نثار علی خان کو ٹکٹ دینے کا مسلم لیگ ن کا فیصلہ ان کے رویے میں نرمی کی وجہ سے کیا گیا ہے۔ تاہم اب دیکھنا یہ ہے کہ چودھری نثار علی خان مسلم لیگ ن کی جانب سے دئے جانے والے ٹکٹس کو قبول کریں گے یا اپنے آزادانہ حیثیت میں الیکشن لڑنے کے فیصلے میں کوئی تبدیلی نہیں لائیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
مظفرآباد میں بدھ منگل کے روز مردہ جانوروں کے گوشت فروخت کا انکشاف
خواجہ آصف کے این اے 73 سیالکوٹ سے کاغذات نامزدگی منظور،
Translate News »