محکمہ موسمیات کی پیش گوئی 19سے 26فروری تک ملک بھر میں بارشوں کی نیا سلسلہ شروع ہونے والا ہے     No IMG     وزیراعظم عمران خان کا سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کیلئے بڑا مطالبہ     No IMG     حکمرانوں کے تمام حلقے کشمیر کے معاملے پر خاموش ہیں, مولانا فضل الرحمان     No IMG     پاکستان, میں 20ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کا پہلا مرحلہ مکمل ہوگیا: سعودی ولی عہد     No IMG     لاہور قلندرز 78 رنز پر ڈھیر     No IMG     ابو ظہبی میں ہتھیاروں کے بین الاقوامی میلے کا آغاز     No IMG     برطانوی ہوائی کمپنی (Flybmi) دیوالیہ، سینکڑوں مسافروں کو پریشانی     No IMG     یورپ میں قانونی طریقے سے داخل ہونے والے افراد کی طرف سے سیاسی پناہ کی درخواستیں دیے جانے کا رجحان بڑھ رہا ہے     No IMG     ٹرین کے ٹائلٹ میں پستول، سینکڑوں مسافر اتار لیے گئے     No IMG     یورپی یونین ,کے پاسپورٹوں کا کاروبار ’ایک خطرناک پیش رفت     No IMG     بھارت نے کشمیری حریت رہنماؤں کو دی گئی سیکیورٹی اورتمام سرکاری سہولتیں واپس لے لی     No IMG     پی ایس ایل کے چھٹے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو 7وکٹوں سے شکست دےدی     No IMG     وزیرخارجہ کا ایرانی ہم منصب کو ٹیلیفون     No IMG     سعودی ولی عہد کا پاکستان میں تاریخی اور پُرتپاک استقبال     No IMG     پاکستان ,کو زاہدان کے دہشتگردانہ حملے کا جواب دینا ہوگا، ایران     No IMG    

متعدد جرمن پائلٹ پناہ گزینوں کو ملک بدر کی جانے والی خصوصی پروازوں کے سلسلے میں اپنی خدمات انجام نہیں دینا چاہتے۔ جرمن میڈیا
تاریخ :   05-12-2017

جرمن (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو)حکومت نے بتایا ہے کہ ’پناہ گزینوں کو افغانستان واپس بھیجنے کی متنازعہ پروازوں کو اڑانے کے لیے متعدد پائلٹوں نے انکار کر دیا ہے۔‘ بعد ازاں جرمن میڈیا کے مطابق حکومتی اہلکاروں کا کہنا ہے کہ افغان پناہ گزین کی واپسی کے لیے پائلٹوں کے انکار کے بعد 222  پروازوں کو  منسوخ کرنا پڑا تھا۔ واضح رہے ماضی میں جرمن حکومت کی جانب سے افغانستان کو ایک محفوظ ملک قرار دیا جا چکا ہے۔

رواں سال  جرمنی کی مرکزی ایئرلائن لفتھانسا اور یورو ونگز کے تقریبا 85 پائلٹوں نے جنوری سے ستمبر کے مہینوں کے دوران ملک بدری کی پروازوں کو اڑانے سے انکار کیا تھا۔ جرمن شہر ڈسلڈورف کے ہوائی اڈے سے روانہ ہونے والی 40 متنازعہ پروازوں کو بھی شدید احتجاج کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ تاہم منسوخ کی جانے والی دیگر 140 پروازیں جرمنی کے مصروف ترین ہوائی اڈے فرینکفرٹ سے روانہ ہونا تھیں۔

یورپی یونین کے 27 ممالک میں جرمنی نے سب سے زیادہ پناہ گزین کی درخواستوں کا فیصلہ سنایا ہے۔  جرمنی کے ادارہ برائے مہاجرین کے اعداد و شمار کے مطابق رواں سال 2017 کے ابتدائی چھ ماہ میں 388,201 پناہ کی درخواستوں کا فیصلہ سنایا گیا ہے۔ تاہم  جرمنی میں ملک بدری کے سلسلے میں تیزی کے باعث مہاجرین کی جانب سے مسترد شدہ درخواستوں کے خلاف اپیل میں بھی اضافہ سامنے آیا ہے۔ جرمنی کے ادارہ برائے مہاجرین کی جانب سے کیے گئے ہر تیسرے فیصلے کو عدالت میں چیلنج کیا گیا ہے۔

گزشتہ سال کے مقابلے میں رواں سال ایسی اپیلوں کی تعداد دگنی دیکھنے میں آئی ہے۔ شمالی جرمنی کے براڈکاسٹر ’این ڈی آر‘ کے مطابق رواں سال مسترد درخواستوں کے خلاف اپیل کی وجہ سے صرف برلن صوبے کو19 ملین یورو کا اضافی خرچ اٹھانا پڑا ہے، جو کہ گزشتہ سال سے نسبت 7.8 ملین یورو زیادہ ہے۔ بعد ازاں مسترد درخواستوں کے خلاف اپیل کی تعداد کو کم کرنے کے لیے ملک بدری میں تیزی کی جارہی ہے۔ جس کی ایک مثال جرمن حکومت کی جانب حال ہی میں متعارف کروایا جانے والا وہ منصوبہ ہے، جس کے مطابق اگلے سال فروری تک رضاکارانہ طور پر  وطن واپس جانے والے مہاجرین کو 3000 یورو تک کا انعام دیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
روس نے خبروں کے نو امریکی اداروں کو ’غیر ملکی ایجنٹ‘ قرار دے دیا ہے
جو ملک میں اندھریے پیدا کرتے ہیں وہ عیش کررہےہیں ,سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شرف لندن

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »