چودھری پرویزالٰہی سے فردوس عاشق اعوان کی ملاقات     No IMG     یوکرین کے مزاحیہ اداکار ملک کے صدر منتخب     No IMG     وزیروں کو نکالنے سے سلیکٹڈ وزیراعظم کی نااہلی نہیں چھپے گی, بلاول بھٹو زرداری     No IMG     ایران کے صدر حسن روحانی نے تہران میں سعد آباد محل میں پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا باقاعدہ اور سرکاری طور پر استقبال     No IMG     بھارت اور چین کے مابین پیر کے روز بیجنگ میں باہمی فیصلہ کن مذاکرات کا آغاز     No IMG     بھارتی وزیر اعظم,ہمارا پائلٹ واپس نہ کیا جاتا تو اگلی رات خون خرابے کی ہوتی     No IMG     ملکی سیاسی پارٹیاں ووٹ تو غریبوں ،محنت کشوں کے نام پر لیتی ہیں مگر تحفظ جاگیرداروں اور مافیاز کو دیتی ہیں ,جواد احمد     No IMG     افغان سپریم کورٹ نے صدر کے انتخاب تک صدر اشرف غنی کی مدت صدارت میں توسیع کردی     No IMG     آزاد کشمیر میں منڈا بانڈی کے مقام پر ایک جیپ کھائی میں گرنے سے 5 افراد ہلاک     No IMG     مصرمیں صدرکےاختیارات میں اضافے کےلیے ہونےوالے تین روزہ ریفرنڈم میں ووٹ ڈالنےکا سلسلہ جاری ہے     No IMG     لاہور میں 3 منزلہ خستہ حال گھر زمین بوس ہونے کے نتیجے میں خاتون سمیت 6 افراد جاں بحق جبکہ 4 افراد زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان ایران کے پہلے سرکاری دورے پر تہران پہنچ گئے     No IMG     سری لنکا میں کل ہونے والے آٹھ بم دھماکوں کے نتیجے میں 300 افراد ہلاک اور 500 زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے مکران کوسٹل ہائی وے پر دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکام سے واقعے پر رپورٹ طلب کر لی     No IMG     افغانستان اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑتے دکھائی دے رہے ہیں     No IMG    

قطر کے ساتھ تنازعہ، عالمی عدالت کا عرب امارات کے خلاف فیصلہ
تاریخ :   24-07-2018

قطر( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) کے ساتھ تنازعہ، عالمی عدالت برائے انصاف نے اپنے ایک عبوری مگر نافذ العمل فیصلے میں متحدہ عرب امارات سے کہا ہے کہ وہ قطری شہریوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنائے۔ قطر نے اس فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے۔
پیر کے روز بین الاقوامی عدالت برائے انصاف میں جیوری کے سات کے مقابلے میں آٹھ ججوں نے قطری شہریوں کے حقوق کے حق میں فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ ابوظہبی حکومت ایسے خاندانوں کو ملنے دے، جن کے کچھ افراد قطری شہری ہیں۔ اسی طرح اس عدالتی فیصلے میں متحدہ عرب امارات سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ قطری طلبہ کو متحدہ عرب امارات میں تعلیم مکمل کرنے کا موقع فراہم کیا جائے۔
گزشتہ برس جون میں سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور متعدد دیگر خلیجی ممالک نے قطر کے ساتھ تمام تر سفارتی اور سفری تعلقات ختم کر دیے تھے۔ ان ممالک کا الزام ہے کہ قطری حکومت دہشت گردوں کی معاونت میں ملوث ہے، تاہم دوحہ حکومت ان الزامات کو مسترد کرتی ہے۔

بین الاقوامی عدالت برائے انصاف کے اس فیصلے میں متحدہ عرب امارات کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ قطری شہریوں کے حامل خاندانوں کو ملنے اور ساتھ رہنے کی اجازت دی جانا چاہیے اور متحدہ عرب امارات میں تعلیم حاصل کرنے والے ایسے قطری طلبہ، جن کی تعلیم اس تنازعے کی وجہ سے مشکلات کا شکار ہے، انہیں اپنی تعلیم مکمل کرنے کا موقع فراہم کیا جائے۔ گزشتہ برس جون میں اس تنازعے کے بعد سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے تمام قطری شہریوں کو 14 روز کے اندر ملک سے چلے جانے کی ہدایات دی تھیں اور اس تناظر میں متعدد خاندان متاثر ہوئے تھے جب کہ متحدہ عرب امارات میں زیرتعلیم قطری طلبہ کی تعلیم کا سلسلہ بھی منقطع ہو گیا تھا۔

عالمی عدالت برائے انصاف نے پیر کے روز اپنے فیصلے میں کہا کہ ابوظہبی حکومت کے متعدد اقدامات قطری شہریوں کے لیے ’ناقابل تلافی‘ نقصان کا سبب بن رہے ہیں اور سلسلے میں ایک مربوط منصوبہ بنایا جائے، تاکہ جدا ہو جانے والے خاندان دوبارہ مل سکیں۔
قطر نے اس عدالتی فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ عرب امارات کے ساتھ جاری تنازعے کو ہوا نہیں دینا چاہتا۔ قطری وزارت خارجہ کے ترجمان احمد بن سعید الرمیحی نے اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں کہا، ’’ہم امارات کے ساتھ تنازعے میں مزید شدت نہیں چاہتے مگر ہم اپنے شہریوں کے خلاف تفریق کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔‘‘

متحدہ عرب امارات کا عدالت میں موقف تھا کہ یہ معاملہ عالمی عدالت کے دائرہ اختیار میں نہیں آتا۔ اس فیصلے کے بعد ابوظہبی حکومت کی جانب سے کہا گیا ہے کہ عدالت نے اس معاملے میں فقط ’عبوری اقدامات‘ کا حکم سنایا ہے اور ان میں سے متعدد پر متحدہ عرب امارات پہلے ہی سے عمل کر رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
نواز شریف کی والدہ نے بیٹے کو جیل سے نکالنے کے لیے مقتدر قوتوں سے رابطے شروع کر دئیے
اسرائیل نے ایک شامی جنگی طیارہ مار گرایا
Translate News »