پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

فوجی عدالتوں میں توسیع وزیراعظم نےوزیر دفاع اوروزیرخارجہ کورابطوں کی ذمے داری دے دی
تاریخ :   12-01-2019

اسلام آباد( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) حکومت نے فوجی عدالتوں میں توسیع کے معاملے پر اپوزیشن کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کر لیا۔ وزیراعظم نےپرویزخٹک اورشاہ محمودقریشی کورابطوں کی ذمے داری سونپ دی۔ تفصیلات کے مطابق سانحہ آرمی پبلک سکول کو بیتے 4

سال ہو چکے ہیں ،گزشتہ ماہ سانحہ اے پی ایس کی چوتھی برسی منائی گئی،اس سانحے کے بعد وفاقی حکومت نے فوجی عداتیں قائم کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔
ابتدا میں فوجی عدالتیں 2 سال تک قائم کی گئی تھیں لیکن بعد میں ایکٹ آف پارلیمنٹ کے تحت ان کے قیام میں توسیع کر دی گئی تھی۔16 دسمبر کو آئی ایس پی آر نے فوجی عدالتوں سے متعلق اہم تفصیلات جاری کر دی تھیں۔آئی ایس پی آر کے مطابق وفاقی حکومت نے 717 کیسسز فوجی عدالتوں میں بھیجے جن میں سے 546 نمٹائے جا چکے ہیں۔
546 میں سے 310 دہشتگردوں کو موت کی سزا سنائی گئی۔
سزا موت پانے والوں میں سے 56 افراد کو تختہ دار پر لٹکایا جا چکا ہے جبکہ 254 دہشتگردوں کی سزائے موت قانونی عمل کےباعث زیرالتوا ہے۔جن دہشتگردوں کو سزائے موت سنائی گئی ان میں امجد صابری میریٹ ہوٹل، بنوں جیل حملے،ایس ایس پی چوہدری اسلم حملہ،نانگا پربت میں غیر ملکیوں پر حملہ کرنے والے دہشتگرد شامل ہیں۔ اس کے علاوہ مستونگ میں فرقہ واریت پھیلانے والے مجرمان کو بھی انہی فوجی عدالتوں نے موت کی سزا سنائی ہے۔
234 مخلتف مجرموں کو مختلف دورانیے کی سزا سنائی جن میں کم سے کم مدت 5 سال ہے۔فوجی عدالتوں نے 2 ملزمان کو بری بھی کیا ہے۔ فوجی عدالتوں کی مدت جنوری میں ختم ہونے جارہی ہے ۔جس پر حکومت نے فوجی عدالتوں کی مدت میں دوسری بار توسیع کا فیصلہ کر لیا ہے۔ فوجی عدالتوں کی مدت میں مزید 2 سال کی توسیع کی جائےگی۔ وزارت قانون نے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کامسودہ تیارکر لیا ہے جسے آئندہ ہفتے ایوان میں پیش کیا جائے گا ۔
جبکہ حکومت نے اس معاملے پر اپوزیشن کو بھی اعتماد میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالے سے تازہ ترین خبر کے مطابق اس معاملے پر اپوزیشن سے مذاکرات کے لیے 2 رکنی کمیٹی قائم کردی۔وزیراعظم نے کمیٹی قائم کردی ہے۔دو رکنی کمیٹی فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع پراپوزیشن سےرابطہ کریگی۔وزیراعظم نےپرویزخٹک اورشاہ محمودقریشی کورابطوں کی ذمے داری سونپ دی۔حکومتی کمیٹی اپوزیشن سے رابطوں سے وزیراعظم کو آگاہ رکھے گی۔ن لیگ،پیپلزپارٹی سےرابطوں میں وزارت قانون ،داخلہ کےتیارکردہ مسودے پیش کریگی۔حکومتی کمیٹی مذاکراتی عمل پر اپنی رپورٹ وزیراعظم عمران خان کو پیش کرےگی۔

Print Friendly, PDF & Email
پاکستان پوسٹ نے بیرون ملک سامان بھجوانے کے لیے ایکسپورٹ پارسل سروس کا آغاز کر دیا
سابق وزیراعظم کا میڈیکل ٹیسٹ کیلئے اسپتال منتقل ہونے سے انکار
Translate News »