چیف جسٹس کے اعزاز میں فُل کورٹ ریفرنس کاایک جج نے بائیکاٹ کردیا، جانتے ہیں وہ معزز جج کون ہیں ؟     No IMG     الیکشن کمیشن آف پاکستان نے گوشوارے جمع نہ کروانے پر 322 ارکان کی رکنیت معطل     No IMG     حکومت کا غیر قانونی موبائل فونز ضبط کرنے کا فیصلہ     No IMG     امریکہ نے پریس ٹی وی کی اینکر پرسن کو بغیر کسی جرم کے گرفتار کرلیا     No IMG     سندھ میں آئینی تبدیلی لائیں گے، فواد چودھری     No IMG     کسی کی خواہش پرسابق آصف زرداری کو گرفتار نہیں کرسکتے، نیب     No IMG     نئے پاکستان میں تبدیلی آگئی تبدیلی آگئی، اب لاہور ایئرپورٹ پر شراب دستیاب ہوگی     No IMG     برطانوی وزیراعظم ٹریزامےکیخلاف تحریکِ عدم اعتماد ناکام ہوگئی     No IMG     وزیراعظم کی رہائش گاہ پر وفاقی کابینہ کا ہنگامی اجلاس طلب     No IMG     گاڑیوں کی درآمد پر ٹیکس اب غیر ملکی کرنسی میں ادا کرنا ہوگا, وزیر خزانہ     No IMG     تائيوان, کے معاملے ميں مداخلت برداشت نہيں کی جائے گی, چين     No IMG     امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ترکی کی معیشت کو تباہ کرنے کے بیان سے یوٹرن لیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان معاشی ترقی کے وسیع مواقع ہی     No IMG     وزیراعظم سے سابق امریکی سفیر کیمرون منٹر کی ملاقات     No IMG     آپ لوگ کام نہیں کر سکتے چیف جسٹس نے اسد عمرکو دو ٹوک الفاظ میں کیا کہہ ڈالا     No IMG     شادی والے گھر میں آگ لگنے سے دلہن سمیت 4 خواتین جاں بحق     No IMG    

فوجی عدالتوں میں توسیع وزیراعظم نےوزیر دفاع اوروزیرخارجہ کورابطوں کی ذمے داری دے دی
تاریخ :   12-01-2019

اسلام آباد( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) حکومت نے فوجی عدالتوں میں توسیع کے معاملے پر اپوزیشن کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کر لیا۔ وزیراعظم نےپرویزخٹک اورشاہ محمودقریشی کورابطوں کی ذمے داری سونپ دی۔ تفصیلات کے مطابق سانحہ آرمی پبلک سکول کو بیتے 4

سال ہو چکے ہیں ،گزشتہ ماہ سانحہ اے پی ایس کی چوتھی برسی منائی گئی،اس سانحے کے بعد وفاقی حکومت نے فوجی عداتیں قائم کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔
ابتدا میں فوجی عدالتیں 2 سال تک قائم کی گئی تھیں لیکن بعد میں ایکٹ آف پارلیمنٹ کے تحت ان کے قیام میں توسیع کر دی گئی تھی۔16 دسمبر کو آئی ایس پی آر نے فوجی عدالتوں سے متعلق اہم تفصیلات جاری کر دی تھیں۔آئی ایس پی آر کے مطابق وفاقی حکومت نے 717 کیسسز فوجی عدالتوں میں بھیجے جن میں سے 546 نمٹائے جا چکے ہیں۔
546 میں سے 310 دہشتگردوں کو موت کی سزا سنائی گئی۔
سزا موت پانے والوں میں سے 56 افراد کو تختہ دار پر لٹکایا جا چکا ہے جبکہ 254 دہشتگردوں کی سزائے موت قانونی عمل کےباعث زیرالتوا ہے۔جن دہشتگردوں کو سزائے موت سنائی گئی ان میں امجد صابری میریٹ ہوٹل، بنوں جیل حملے،ایس ایس پی چوہدری اسلم حملہ،نانگا پربت میں غیر ملکیوں پر حملہ کرنے والے دہشتگرد شامل ہیں۔ اس کے علاوہ مستونگ میں فرقہ واریت پھیلانے والے مجرمان کو بھی انہی فوجی عدالتوں نے موت کی سزا سنائی ہے۔
234 مخلتف مجرموں کو مختلف دورانیے کی سزا سنائی جن میں کم سے کم مدت 5 سال ہے۔فوجی عدالتوں نے 2 ملزمان کو بری بھی کیا ہے۔ فوجی عدالتوں کی مدت جنوری میں ختم ہونے جارہی ہے ۔جس پر حکومت نے فوجی عدالتوں کی مدت میں دوسری بار توسیع کا فیصلہ کر لیا ہے۔ فوجی عدالتوں کی مدت میں مزید 2 سال کی توسیع کی جائےگی۔ وزارت قانون نے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کامسودہ تیارکر لیا ہے جسے آئندہ ہفتے ایوان میں پیش کیا جائے گا ۔
جبکہ حکومت نے اس معاملے پر اپوزیشن کو بھی اعتماد میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالے سے تازہ ترین خبر کے مطابق اس معاملے پر اپوزیشن سے مذاکرات کے لیے 2 رکنی کمیٹی قائم کردی۔وزیراعظم نے کمیٹی قائم کردی ہے۔دو رکنی کمیٹی فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع پراپوزیشن سےرابطہ کریگی۔وزیراعظم نےپرویزخٹک اورشاہ محمودقریشی کورابطوں کی ذمے داری سونپ دی۔حکومتی کمیٹی اپوزیشن سے رابطوں سے وزیراعظم کو آگاہ رکھے گی۔ن لیگ،پیپلزپارٹی سےرابطوں میں وزارت قانون ،داخلہ کےتیارکردہ مسودے پیش کریگی۔حکومتی کمیٹی مذاکراتی عمل پر اپنی رپورٹ وزیراعظم عمران خان کو پیش کرےگی۔

Print Friendly, PDF & Email
پاکستان پوسٹ نے بیرون ملک سامان بھجوانے کے لیے ایکسپورٹ پارسل سروس کا آغاز کر دیا
سابق وزیراعظم کا میڈیکل ٹیسٹ کیلئے اسپتال منتقل ہونے سے انکار
Translate News »