آرمی چیف سے بحرین نیشنل گارڈ کے کمانڈر کی ملاقات     No IMG     اسرائیل کی جیل میں آگ بھڑک اٹھی، کئی کمرے جھلس گئے     No IMG     اسرائیلی فوج کی گھر گھر تلاشی15 فلسطینی شہری گرفتار     No IMG     وزیر ریلوے شیخ رشید کی نا اہلی کے لیے الیکشن کمیشن میں درخواست دائر     No IMG     فضائی حدود کی بندش، ائیرانڈیا کو کروڑوں کا نقصان     No IMG     دہشت گردی کا کوئی دین اور نسل نہیں ہوتی ,سعودی وزیر خارجہ     No IMG     ایران، عراق اور شامی افواج کے خون نے تینوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید مضبوط بنایا, بشار الاسد     No IMG     آصف زرداری اور فریال تالپور کی 10 دن کے لیے حفاظتی ضمانت منظور     No IMG     سابق وزیراعلی شہباز شریف کے خلاف ایک اور انکوائری شروع     No IMG     کینیڈین وزیر اعظم جسٹس ٹروڈو نے نیوزی لینڈ میں دہشت گردی کے واقعہ کی مذمت     No IMG     روسی صدر پوتن نے کہا ہے کہ وہ روس میں کرائسٹ چرچ جیسا دہشت گرد حملہ نہیں ہونے دیں گے     No IMG     برطانوی حکام نے نیوزی لینڈ کی مسجدوں میں ہوئی دہشت گردی کی طرز پر برطانیہ میں بھی واقعات پیش آنے کا خدشہ     No IMG     نیوزی لینڈ کی پارلیمنٹ کے پہلے اجلاس کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا     No IMG     نیوزی لینڈ مساجد پر دہشت گرد حملے سے متعلق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنے بیان پر میڈیا کی تنقید سے برہم     No IMG     نیوزی لینڈ کی قومی فٹسل ٹیم کے گول کیپر عطا الیان بھی کرائسٹ چرچ واقعے میں شہید     No IMG    

فواد حسن فواد کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر قومی احتساب بیورو (نیب) کے حوالے کردیا
تاریخ :   06-07-2018

لاہورر(ورلڑ فاسٹ نیوز فار یو) احتساب عدالت نے آشیانہ ہاﺅسنگ اسکینڈل میں گرفتار سابق وزراءاعظم نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کے پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر قومی احتساب بیورو (نیب) کے حوالے کردیا۔۔لاہور کی احتساب عدالت کے جج سید نجم الحسن نے نیب

کی جانب سے فواد حسن فواد کے جسمانی ریمانڈ سے متعلق درخواست پر سماعت کی۔دوران سماعت نیب نے موقف اختیار کیا کہ ملزم فواد حسن فواد نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے سیکرٹری کی حیثیت سے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا۔انہوں نے بتایا کہ ملزم نے پنجاب لینڈ ڈویلپمنٹ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو طاہر خورشید کو آشیانہ اقبال پراجیکٹ کا ٹھیکہ معطل کرنے کے غیر قانونی احکامات جاری کیے۔

نیب کی جانب سے کہا گیا کہ ملزم کی جانب سے جاری کردہ احکامات کے مطابق سرکاری طور پر ٹھیکہ حاصل کرنے والے چوہدری لطیف اینڈ سنز کا ٹھیکہ معطل کروایا گیا۔

نیب کا کہنا تھا کہ فواد حسن فواد نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا جبکہ سابق وزیر اعلی بھی اس معاملے میں شامل تفتیش ہیں۔اس پر فواد حسن فواد نےعدالت کو بتایا کہ میرا کام صرف وزیر اعلیٰ کے حکم پر عملدرآمد کروانا تھا، میں نے کسی کے ٹھیکے کو معطل کرنے کا حکم نہیں دیا۔فواد حسن فواد نے کہا کہ 30 مارچ 2013 کے بعد ایک دن بھی پنجاب حکومت کے لیے کام نہیں کیا، اس کے بعد میرا وفاق میں تبادلہ کر دیا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ جنہوں نے بے ضابطگیاں کیں، ان کے الزامات پر مجھے گرفتار کر لیا گیا، اس دوران فواد حسن فواد اپنے اوپر لگائے گے الزامات کا جواب دیتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے۔۔سماعت کے دوران فواد حسن فواد کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ گزشتہ روز دوپہر 2 بجے فواد حسن فواد کو گرفتار کیا گیا، ابھی تک کیا تفتیش کی گئی، ان کے موکل کے خلاف نیب کی کارروائی نہیں بنتی۔انہوں نے کہا کہ فواد حسن فواد کی طبیعت خراب ہے، عدالت میڈیکل کرانے کا حکم دے،19 گھنٹوں میں ایک بھی ثبوت ریکارڈ نہیں کیا گیا۔۔عدالت میں نیب کی جانب سے مزید بتایا گیا کہ تحیقیقاتی کمیٹی کی تفتیش کے مطابق چوہدری لطیف اینڈ سنز کو دیا گیا ٹھیکہ قانونی اور پپرا رولز کے مطابق تھا، ملزم کی جانب سے آشیانہ اقبال پراجیکٹ کا کنٹریکٹ دینے کے 8 ماہ بعد معطل کروایا گیا۔عدالت میں نیب نے مزید بتایا کہ نیب لاہور کی جانب سے ملزم کو متعدد مرتبہ طلب کیا گیا جبکہ ملزم صرف 2 مرتبہ نیب حکام کے روبرو پیش ہوئے۔انہوں نے کہا کہ ملزم پر بطور سیکرٹری صحت پنجاب مہنگے داموں 6 موبائل ہیلتھ یونٹس خریدنے کا الزام ہے، ملزم نے 2010 میں 6 موبائل ہیلتھ یونٹس خریدے جبکہ 1 یونٹ کی مالیت ساڑے 5 کروڑ روپے تھی، ملزم کے ان اقدامات سے ملکی خزانے کو مجموعی طور پر اربوں روپے کا نقصان پہنچا۔احتساب عدالت میں سماعت کے دوران نیب کی جانب سے کہا گیا کہ ملزم غیر قانونی طور پر بینک الفلاح میں ستمبر 2005 تا جولائی 2006 تک کام کرتا رہا، تاہم سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے ان کی تعیناتی کی درخواست کو رد کر دیا گیا۔بعد ازاں عدالت نے دلائل مکمل ہونے کے بعد فواد حسن فواد کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرتے ہوئے انہیں 19 جولائی کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔واضح رہے کہ گزشتہ روز نیب لاہور نے آشیانہ ہاﺅسنگ اسکیم اسکینڈل میں سابق وزیرِاعظم کے سابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کو گرفتار کیا تھا۔نیب کی جانب سے آشیانہ ہاﺅسنگ اسکینڈل میں ملوث ہونے کے ٹھوس شواہد موجود ہونے کی بنیاد پر فواد حسن فواد کو گرفتار کیا گیا تھا جبکہ یہ بھی موقف اختیار کیا گیا تھا کہ انہیں کئی مرتبہ نیب کے روبرو پیش ہونے کا موقع دیا گیا لیکن انہوں نے ہمیشہ ذاتی مصروفیات کی وجہ سے حاضری سے معذرت کی۔یاد رہے کہ 21 فروری کو نیب نے آشیانہ اقبال ہاﺅسنگ سوسائٹی اسکینڈل میں مبینہ طور پر ملوث ہونے پر ایل ڈی اے کے سابق سربراہ احد خان چیمہ کو پوچھ گچھ کے لیے گرفتار کیا تھا۔اس کے علاوہ پیراگون سٹی کی ذیلی کمپنی بسم اللہ انجینئرنگ کے مالک شاہد شفیق کو جعلی دستاویزات کی بنیاد پر آشیانہ ہاﺅسنگ اسکیم کا ٹھیکہ لینے کے الزام میں 24 فروری کو نیب نے گرفتار کیا تھا۔مذکورہ گرفتاریوں کے بعد مسلم لیگ (ن) کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے حلقوں میں ہلچل مچ گئی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
امریکہ کی بھارت کو وارننگ ایران سے تیل کی درآمد فوری بند کی جائے
پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر محمد شہبازشریف 4بجے پریس کانفرنس کریں گے
Translate News »