وینزویلا سے تعلق رکھنے والی 25 سالہ نوجوان لڑکی نے ملکہ حسن کا ٹائٹل جیت لیا     No IMG     حزب اللہ کی ايک اور سرنگ دريافت ,اسرائیلی فوج کا دعوی     No IMG     عوام اپنے مسائل کے حل کیلیے وزیر اعظم کمپلینٹ پورٹل کا استعمال کریں،وزیراعظم     No IMG     سابق صدر آصف زرداری نے پنجاب کی بجلی بند کرنے کی دھمکی دے دی     No IMG     رشوت کا سب سے بڑا ناسور پٹواری ہیں, چیف جسٹس     No IMG     فرانسیسی پولیس نے پیلے رنگ جیکٹس والے مظاہرین پر شدید تشدد     No IMG     اسلام آباد تھانہ سہالہ میں شدید فائرنگ, بدنام زمانہ شیرپنجاب جاں بحق     No IMG     اگر گرفتار ہوا تو کیا ہوگا کیونکہ جیل تو میرا دوسرا گھر ہے, آصف علی زرداری     No IMG     امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کا نیا وزیر داخلہ مقرر کرنے کا اعلان     No IMG     اٹلی میں ہزاروں مظاہرین نے مہاجر مخالف قوانین کے خلاف مظاہرہ     No IMG     پاکستانیوں کے دل پر آرمی پبلک سکول (اے پی ایس ) پشاور میں لگنے والے زخم کو چار سال مکمل ہوگئے     No IMG     رائے ونڈ, چینی انجنئیر، جیا جینیفر پر دل ہار بیٹھا     No IMG     سپین میں یہ بیٹا ایک سال تک ماں کی لاش کے ساتھ کیوں رہا ؟     No IMG     سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان نے صحافی جمال خاشقجی کے قاتل سعود القحطانی کو معاف کردیا     No IMG     سری لنکن صدر نے برطرف وزیر اعظم کو دوبارہ وزیر اعظم منتخب کرلیا     No IMG    

فواد حسن فواد کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر قومی احتساب بیورو (نیب) کے حوالے کردیا
تاریخ :   06-07-2018

لاہورر(ورلڑ فاسٹ نیوز فار یو) احتساب عدالت نے آشیانہ ہاﺅسنگ اسکینڈل میں گرفتار سابق وزراءاعظم نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کے پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر قومی احتساب بیورو (نیب) کے حوالے کردیا۔۔لاہور کی احتساب عدالت کے جج سید نجم الحسن نے نیب

کی جانب سے فواد حسن فواد کے جسمانی ریمانڈ سے متعلق درخواست پر سماعت کی۔دوران سماعت نیب نے موقف اختیار کیا کہ ملزم فواد حسن فواد نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے سیکرٹری کی حیثیت سے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا۔انہوں نے بتایا کہ ملزم نے پنجاب لینڈ ڈویلپمنٹ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو طاہر خورشید کو آشیانہ اقبال پراجیکٹ کا ٹھیکہ معطل کرنے کے غیر قانونی احکامات جاری کیے۔

نیب کی جانب سے کہا گیا کہ ملزم کی جانب سے جاری کردہ احکامات کے مطابق سرکاری طور پر ٹھیکہ حاصل کرنے والے چوہدری لطیف اینڈ سنز کا ٹھیکہ معطل کروایا گیا۔

نیب کا کہنا تھا کہ فواد حسن فواد نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا جبکہ سابق وزیر اعلی بھی اس معاملے میں شامل تفتیش ہیں۔اس پر فواد حسن فواد نےعدالت کو بتایا کہ میرا کام صرف وزیر اعلیٰ کے حکم پر عملدرآمد کروانا تھا، میں نے کسی کے ٹھیکے کو معطل کرنے کا حکم نہیں دیا۔فواد حسن فواد نے کہا کہ 30 مارچ 2013 کے بعد ایک دن بھی پنجاب حکومت کے لیے کام نہیں کیا، اس کے بعد میرا وفاق میں تبادلہ کر دیا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ جنہوں نے بے ضابطگیاں کیں، ان کے الزامات پر مجھے گرفتار کر لیا گیا، اس دوران فواد حسن فواد اپنے اوپر لگائے گے الزامات کا جواب دیتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے۔۔سماعت کے دوران فواد حسن فواد کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ گزشتہ روز دوپہر 2 بجے فواد حسن فواد کو گرفتار کیا گیا، ابھی تک کیا تفتیش کی گئی، ان کے موکل کے خلاف نیب کی کارروائی نہیں بنتی۔انہوں نے کہا کہ فواد حسن فواد کی طبیعت خراب ہے، عدالت میڈیکل کرانے کا حکم دے،19 گھنٹوں میں ایک بھی ثبوت ریکارڈ نہیں کیا گیا۔۔عدالت میں نیب کی جانب سے مزید بتایا گیا کہ تحیقیقاتی کمیٹی کی تفتیش کے مطابق چوہدری لطیف اینڈ سنز کو دیا گیا ٹھیکہ قانونی اور پپرا رولز کے مطابق تھا، ملزم کی جانب سے آشیانہ اقبال پراجیکٹ کا کنٹریکٹ دینے کے 8 ماہ بعد معطل کروایا گیا۔عدالت میں نیب نے مزید بتایا کہ نیب لاہور کی جانب سے ملزم کو متعدد مرتبہ طلب کیا گیا جبکہ ملزم صرف 2 مرتبہ نیب حکام کے روبرو پیش ہوئے۔انہوں نے کہا کہ ملزم پر بطور سیکرٹری صحت پنجاب مہنگے داموں 6 موبائل ہیلتھ یونٹس خریدنے کا الزام ہے، ملزم نے 2010 میں 6 موبائل ہیلتھ یونٹس خریدے جبکہ 1 یونٹ کی مالیت ساڑے 5 کروڑ روپے تھی، ملزم کے ان اقدامات سے ملکی خزانے کو مجموعی طور پر اربوں روپے کا نقصان پہنچا۔احتساب عدالت میں سماعت کے دوران نیب کی جانب سے کہا گیا کہ ملزم غیر قانونی طور پر بینک الفلاح میں ستمبر 2005 تا جولائی 2006 تک کام کرتا رہا، تاہم سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے ان کی تعیناتی کی درخواست کو رد کر دیا گیا۔بعد ازاں عدالت نے دلائل مکمل ہونے کے بعد فواد حسن فواد کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرتے ہوئے انہیں 19 جولائی کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔واضح رہے کہ گزشتہ روز نیب لاہور نے آشیانہ ہاﺅسنگ اسکیم اسکینڈل میں سابق وزیرِاعظم کے سابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کو گرفتار کیا تھا۔نیب کی جانب سے آشیانہ ہاﺅسنگ اسکینڈل میں ملوث ہونے کے ٹھوس شواہد موجود ہونے کی بنیاد پر فواد حسن فواد کو گرفتار کیا گیا تھا جبکہ یہ بھی موقف اختیار کیا گیا تھا کہ انہیں کئی مرتبہ نیب کے روبرو پیش ہونے کا موقع دیا گیا لیکن انہوں نے ہمیشہ ذاتی مصروفیات کی وجہ سے حاضری سے معذرت کی۔یاد رہے کہ 21 فروری کو نیب نے آشیانہ اقبال ہاﺅسنگ سوسائٹی اسکینڈل میں مبینہ طور پر ملوث ہونے پر ایل ڈی اے کے سابق سربراہ احد خان چیمہ کو پوچھ گچھ کے لیے گرفتار کیا تھا۔اس کے علاوہ پیراگون سٹی کی ذیلی کمپنی بسم اللہ انجینئرنگ کے مالک شاہد شفیق کو جعلی دستاویزات کی بنیاد پر آشیانہ ہاﺅسنگ اسکیم کا ٹھیکہ لینے کے الزام میں 24 فروری کو نیب نے گرفتار کیا تھا۔مذکورہ گرفتاریوں کے بعد مسلم لیگ (ن) کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے حلقوں میں ہلچل مچ گئی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
امریکہ کی بھارت کو وارننگ ایران سے تیل کی درآمد فوری بند کی جائے
پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر محمد شہبازشریف 4بجے پریس کانفرنس کریں گے
Translate News »