چیف جسٹس کے اعزاز میں فُل کورٹ ریفرنس کاایک جج نے بائیکاٹ کردیا، جانتے ہیں وہ معزز جج کون ہیں ؟     No IMG     الیکشن کمیشن آف پاکستان نے گوشوارے جمع نہ کروانے پر 322 ارکان کی رکنیت معطل     No IMG     حکومت کا غیر قانونی موبائل فونز ضبط کرنے کا فیصلہ     No IMG     امریکہ نے پریس ٹی وی کی اینکر پرسن کو بغیر کسی جرم کے گرفتار کرلیا     No IMG     سندھ میں آئینی تبدیلی لائیں گے، فواد چودھری     No IMG     کسی کی خواہش پرسابق آصف زرداری کو گرفتار نہیں کرسکتے، نیب     No IMG     نئے پاکستان میں تبدیلی آگئی تبدیلی آگئی، اب لاہور ایئرپورٹ پر شراب دستیاب ہوگی     No IMG     برطانوی وزیراعظم ٹریزامےکیخلاف تحریکِ عدم اعتماد ناکام ہوگئی     No IMG     وزیراعظم کی رہائش گاہ پر وفاقی کابینہ کا ہنگامی اجلاس طلب     No IMG     گاڑیوں کی درآمد پر ٹیکس اب غیر ملکی کرنسی میں ادا کرنا ہوگا, وزیر خزانہ     No IMG     تائيوان, کے معاملے ميں مداخلت برداشت نہيں کی جائے گی, چين     No IMG     امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ترکی کی معیشت کو تباہ کرنے کے بیان سے یوٹرن لیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان معاشی ترقی کے وسیع مواقع ہی     No IMG     وزیراعظم سے سابق امریکی سفیر کیمرون منٹر کی ملاقات     No IMG     آپ لوگ کام نہیں کر سکتے چیف جسٹس نے اسد عمرکو دو ٹوک الفاظ میں کیا کہہ ڈالا     No IMG     شادی والے گھر میں آگ لگنے سے دلہن سمیت 4 خواتین جاں بحق     No IMG    

سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ نیب نے پوری سندھ حکومت کو عدالتوں میں بٹھایا ہوا ہ
تاریخ :   01-11-2017

کراچی(ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ نیب نے پوری سندھ حکومت کو عدالتوں میں بٹھایا ہوا ہے۔ہم احتساب کے مخالف نہیں ہیں ، احتساب کریں لیکن کسی کو سیاسی اور انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایا جائے گا اور سب کے لیے الگ الگ قانون بنائے جائیں تو ہم احتجاج کریں گے۔ مقدمات سے نہیں ڈرتے ۔ میرے خلاف جو مقدمات بنانا ہیں ، بنا لیں ۔نیب کوئی عدالت نہیں ہے ، جس کے خلاف کوئی بات نہ کی جا سکے ۔ یہ ایک ایسا ادارہ ہے ، جسے ڈکٹیٹر نے قائم کیا تھا ۔ میں بڑے احترام سے سندھ ہائیکورٹ سے استدعا کرتا ہوں کہ وہ شرجیل میمن کی عدالت کے احاطے سے گرفتاری کا نوٹس لے اور اسی طرح کارروائی کرے ، جس طرح ذولفقار مرزا کے گارڈز کی گرفتاری پر کی گئی تھی ۔ وہ بدھ کو سندھ اسمبلی میں پیپلز پارٹی کے رکن خورشید جونیجو کی نیب کے خلاف پیش کردہ قرار داد پر پالیسی بیان دے رہے تھے ۔وزیر اعلیٰ سندھ نے کہاکہ ہم اسمبلی میں نیب کے امتیازی اور متعصبانہ سلوک کے خلاف قرار داد لائے ہیں ۔ نیب کے متعصبانہ اور امتیازی سلوک کا ذکر سپریم کورٹ کے ایک فیصلے میں بھی ہے ۔ نیب کے اس رویہ پر بات کرنے کا مطلب عدالتوں پر تنقید نہیں ہے ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہاکہ شرجیل میمن نے عدالتوں میں اپنے آپ کو پیش کیا ۔ وہ کہیں بھاگے نہیں ۔نیب نے کس طرح انہیں ہائیکورٹ کے احاطے سے گرفتار کیا ۔ نیب نے یہ کارروائی کرکے سندھ ہائیکورٹ کی تذلیل کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر کوئی کام غلط کرے گا تو ہم تنقید کر سکتے ہیں ۔ سندھ حکومت کو سندھ کے لوگوں نے منتخب کیا ہے ، اس پر تنقید ہو سکتی ہے تو نیب پر کیوں نہیں ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے اپوزیشن ارکان کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ اسمبلی کے اندر عدالتیں نہ لگائی جائیں اور بغیر ثبوت کے کسی کو کرپٹ نہ کہا جائے ۔یہ رویہ درست نہیں ہے ۔ انہوں نے کہاکہ جس کے اوپر الزام ہے ، اس پر مقدمہ چلنا چاہئے لیکن جس پر مقدمہ چل رہا ہو ، اس پر یہاں بیٹھ کر فیصلہ نہیں کیا جا سکتا ۔ انہوں نے کہاکہ اپوزیشن ارکان سے کہاکہ آپ لوگ ڈرتے ہیں ۔ اس لیے غلط کو غلط نہیں کہتے ۔ ہم نہیں ڈرتے ہیں ، ہم نتائج کا مقابلہ کریں گے اور غلط کو غلط کہیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ نیب کا دہرا معیار ہے اور امتیازی سلوک ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہم عدالتوں کا احترام کرتے ہیں ۔ ہم وہ نہیں ہیں ، جو عدالتوں میں نہ جائیں ۔ ہم وہ نہیں ہیں ، جو معافی نامے لکھ کر دیں ۔ قرار داد منظور کرنے کا مطلب یہ بھی نہیں ہے کہ شرجیل میمن کے مقدمات ختم کر دیئے جائیں ۔ ہم نیب کے غیر قانونی اقدام کے خلاف قرار داد منظور کر رہے ہیں ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہاکہ ہم وفاق سے کہیں گے کہ نیب اپنا رویہ درست کرے ۔نیب نے پوری سندھ حکومت کو عدالتوں میں بٹھایا ہوا ہے ۔ ہم احتساب کے مخالف نہیں ہیں ، احتساب کریں لیکن کسی کو سیاسی اور انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایا جائے گا اور سب کے لیے الگ الگ قانون بنائے جائیں تو ہم احتجاج کریں گے ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ سندھ کے عوام سب سے بڑے منصف ہیں ، جو ہمارے بارے میں کارکردگی کی بنیاد پر اگلے عام انتخابات میں فیصلہ کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ سندھ اسمبلی کوئی عدالت نہیں کہ کچھ لوگ یہ کہہ رہے ہیں کہ یہاں قرآن شریف لا کر یہ کہہ دیا جائے کہ ہم نے کوئی کرپشن نہیں کی ۔ انہوں نے خرم شیر زمان کا نام لیے بغیر کہا کہ اب میں کچھ لوگوں کے ٹھیکوں کے بارے میں تحقیقات کروں گا اور اب ٹھیکے لینے والوں کو نہیں چھوڑوں گا ۔ انہوں نے قائد حزب اختلاف خواجہ اظہار الحسن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے یہاں شرجیل انعام میمن کے خلاف مقدمہ واپس لینے کی کوئی بات نہیں کی ۔اسے عدالت میں چلنا ہے ۔ ہم ہر قسم کے نتائج بھگتنے کے لیے تیار ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایک صاحب روزانہ رات 8 بجے ایک ٹی وی چینل پر آکر مضحکہ خیز دعوے کرتے ہیں ۔ ان کا کہنا ہے کہ میں وعدہ معاف گواہ بن گیا ہوں ۔ اب مجھے ایسی باتوں پر غصہ آنے کے بجائے ہنسی آتی ہے کیونکہ بعض ٹی وی چینلز کے ٹاک شو اب انٹرٹینمنٹ شو بن چکے ہیں ۔

Print Friendly, PDF & Email
نصرت سحرعباسی نے کرپشن میں خاتمے کی انوکھی دعا کرائی
چوہدری شجاعت حسین اور پرویز الٰہی کے خلاف نیب مقدمات دوبارہ کھل گئےنوٹس جاری کر دیے گئے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »