وزیراعظم عمران خان نے مکران کوسٹل ہائی وے پر دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکام سے واقعے پر رپورٹ طلب کر لی     No IMG     افغانستان اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑتے دکھائی دے رہے ہیں     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کا افتتاح کردیا     No IMG     ایران کے وزیر خارجہ کی ترک صدر اردوغان کے ساتھ ملاقات     No IMG     عمان کے وزیر خارجہ نے اپنے ایک بیان میں شام کی عرب لیگ میں واپسی پر تاکیدکی     No IMG     سعودی عرب کی ایک کمپنی نے ترکی میں 100 ملین ڈالر کا سرمایہ لگانے کا اعلان     No IMG     روس کی سرحد پربرطانوی فوجی ہیلی کاپٹروں کی تعیناتی پر شدید رد عمل     No IMG     چین ,نے سی پیک پر بھارت کے اعتراضات کو مسترد کردیا     No IMG     چلی میں چھوٹا طیارہ ایک گھر پر گر کر تباہ ہوگیا، جس کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک     No IMG     فیصل آباد میں جعلی اکاﺅنٹ پکڑے گئے‘بنکوں کا عملہ بھی ملوث نکلا     No IMG     حمزہ شہبازعبوری ضمانت میں توسیع کے لیے ہائی کورٹ پہنچ گئے     No IMG     عوامی مقامات پر غیر مناسب لباس ممنوع، 5 ہزار ریال جرمانہ     No IMG     عالمی بینک نے پاکستان سے جوہری پروگرام، جے ایف 17 تھنڈر، بحری آبدوزوں اور سی پیک قرضوں کی تفصیلات فراہم کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     امریکی شہری پاکستان کا غیر ضروری سفر کرنے سے گریز کریں, امریکی محکمہ خارجہ     No IMG     ملک بھر میں شدید طوفان آنے کا خدشہ     No IMG    

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات ميں سروسز و مصنوعات پر پانچ فيصد ٹيکس
تاریخ :   27-12-2017

پاکستان، بنگلہ ديش، بھارت اور خطےکے ديگر ملکوں کے لاکھوں شہريوں ليے بغير ٹيکس کے آمدنی اور اشياء خليجی ممالک ميں ملازمت کی ايک اہم وجہ رہی ہے۔ تاہم اب يہ تبديل ہونے کو ہے۔

سعودی عرب متحدہ عرب امارات ٹيکس ميں چھوٹ دينے کے سبب ايک عرصے سے غير ملکی ملازمين کی توجہ کا مرکز بنے رہے ہيں ليکن اب يہ سلسلہ ختم ہونے کو ہے۔ دونوں ممالک آئندہ برس سے سامان و سروسز پر پانچ فيصد ٹيکس لگانے والے ہيں۔ يہ قدم عالمی منڈی ميں تيل کی قيمتوں ميں کمی کی وجہ سے ملکی آمدنی گھٹنے کے سبب اٹھايا گيا ہے اور اس کا مقصد کچھ اضافی منافع حاصل کرنا ہے۔ ’ويليو ايڈڈ ٹيکس‘ يا VAT کھانے پينے کی اشياء، کپڑے، اليکٹرونک مصنوعات، گيسولين، فون، پانی، بجلی اور ہوٹل کی قيمتوں پر لاگو ہو گا۔ مکانات کے کرائے، پراپرٹی، چند ادويات، ہوائی جہاز کے ٹکٹس اور اسکولوں کی ٹيوشن فيس جيسے اخراجات کو فی الحال ٹيکس سے استثنیٰ حاصل ہے۔ متحدہ عرب امارات ميں البتہ تعليم کے شعبے ميں بھی ٹيکس متعارف کرايا جا رہا ہے۔

دونوں ملکوں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات ميں سروسز و مصنوعات پر پانچ فيصد ٹيکس کا اطلاق يکم جنوری سن 2018 سے شروع ہو رہا ہے۔ اطلاع ہے کہ ديگر خليجی ممالک بھی آئندہ برسوں ميں اپنی اپنی ٹيکس اسکيموں کا اعلان کرنے والے ہيں۔ واضح رہے کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات ميں متعارف کرائے جانے والے ٹيکس کا اگر يورپی رياستوں سے موازنہ کيا جائے، تو يہ شرح کافی کم ہے۔ بيشتر يورپی ملکوں ميں VAT بيس فيصد ليا جاتا ہے۔

اس بارے ميں ابو ظہبی کے ايک اخبار نيشنل نيوز پيپر ميں شائع ہونے والی ايک رپورٹ کے مطابق اس پيش رفت کے بعد متحدہ عرب امارات ميں زندگی گزارنے کے اخراجات ميں اوسطاً ڈھائی فيصد کا اضافہ ہو گا۔ تنخواہيں البتہ وہی رہيں گی۔ در اصل حکومت تيل کی کم قيمتوں کی وجہ سے ملکی آمدنی ميں کمی کو پورا کرنے کے ليے يہ قدم اٹھا رہی ہے۔ ٹيکس سے متحدہ عرب امارات کی حکومت بارہ بلين درہم يعنی لگ بھگ 3.3 بلين ڈالر اکھٹے کرنا چاہتی ہے۔

دريں اثناء رياض حکومت نے حال ہی ميں اپنی تاريخ کے سب سے بڑے بجٹ کا اعلان کيا۔ حکومت آئندہ برس 978 بلين ريال يا 261 بلين ڈالر خرچ کرنا چاہتی ہے اور اس ميں ٹيکس سے حاصل کردہ اضافی آمدنی بھی شامل ہو گی۔

عالمی منڈيوں ميں تيل کی قيمتوں ميں کمی کے تناظر ميں عالمی مالياتی فنڈ نے تيل برآمد کرنے والے ممالک کو يہ تجويز دی تھی کہ وہ تيل سے حاصل ہونے والی آمدنی ميں کمی کو پورا کرنے کے ليے ’ويليو ايڈڈ ٹيکس‘ متعارف کرائيں۔ آئی ايم ايف کے مشرق وسطیٰ کے ليے ڈائريکٹر جہاد آزور کے مطابق ٹيکس متعارف کرانے سے طويل املدتی بنيادوں پر ان ممالک کا تيل کی آمدنی پر انحصار کم ہو گا۔

Print Friendly, PDF & Email
برطانیہ میں: غیرملکی طالبعلم دوران تعلیم ورک ویزا حاصل کرسکیں گے
بھارتی سزا یافتہ جاسوس‘ کلبھوشن یادیو سے پاکستان میں ملاقات: بھارت میں اب داخلی سیاست گرم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »