سری لنکا کے وزیراعظم مہندا راجاپاکسے مستعفی ہوگئے     No IMG     سپریم کورٹ نے افضل کھوکھر اور سیف الملوک کھوکھر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دے دیا     No IMG     بھارتی ارب پتی مکیشن امبانی کی شادی پر خزانوں کے منہ کھُل گئے     No IMG     ایرانی وزیر خارجہ کی قطر کے وزير اعظم سے ملاقات     No IMG     وزیر اعظم کا دہشت گردوں کا آخری حد تک پیچھا کرنے کا عزم     No IMG     فرانسیسی پولیس کا معذور افراد پر بھی ظلم و ستم     No IMG     چین کینیڈین شہریوں کو رہا کرے، امریکی وزیر خارجہ     No IMG     بھارتی ریاست کرناٹک میں زہریلی خوراک کھانے سے تقریباً ایک درجن یاتریوں کی ہلاکت     No IMG     یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرتے ہیں، آسٹریلیا     No IMG     برطانوی وزیراعظم ٹیریزا مے کے پاس اب فقط چار آپشنز موجود ہیں۔     No IMG     سپریم کورٹ کا دہری شہریت والے ملازمین کے خلاف کارروائی کا حکم     No IMG     باردوی سرنگ کے دھماکے میں 6 سکیورٹی اہلکار ہلاک     No IMG     آئی ایم ایف سے پیکج صرف پاکستان کے مفاد کو مد نظر رکھ کر لیا جائے گا۔ وزیر خزانہ اسد عمر     No IMG     ہنگری میں غلام ایکٹ کے خلاف مظاہرے     No IMG     امریکی ایوان نمائندگان نے روہنگیا مسلمانوں پر بربریت کونسل کشی قرار دینے کی قرارداد بھاری اکثریت سے منظور     No IMG    

سابق وزیراعظم اور ان کی صاحبزادی کی اتوار کو وطن واپسی کا امکان، دونوں کو اسلام آباد ائیرپورٹ سے گرفتار کرنے کیلئے نیب نے ٹیم تشکیل دے دی
تاریخ :   06-07-2018

اسلام آباد(ورلڈفاسٹ نیوزفاریو)  نیب کا نواز شریف اورمریم نواز کو وطن واپسی کی صورت میں ائیرپورٹ سے ہی گرفتار کرنے کا فیصلہ، سابق وزیراعظم اور ان کی صاحبزادی کی اتوار کو وطن واپسی کا امکان، دونوں کو اسلام آباد ائیرپورٹ سے گرفتار کرنے کیلئے نیب نے ٹیم تشکیل دے دی۔ تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے نواز شریف اور ان کے صاحبزادی مریم نواز کو جیل کی سزا سنائی ہے۔جبکہ شریف خاندان پر ایک ارب روپے سے زائد کا جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو بھی جیل کی سزا سنائی گئی ہے۔ دوسری جانب اب حسن اور حسین نواز کی سزا کی تفصیلات بھی سامنے آگئی ہیں۔ احتساب عدالت کی جانب سے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے دونوں صاحبزادوں کی گرفتاری کیلئے دائمی وارنٹ جاری کر دیے گئے ہیں۔

نواز شریف کے دونوں صاحبزادوں کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

عدالت میں دونوں افراد کا ٹرائل کیا جائے گا اور پھر اس کے بعد ان کی مزید سزا کا تعین کیا جائے گا۔ دوسری جانب نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نوازممکنہ طور پر اتوار کے روز وطن واپس آ جائیں گے۔ اس حوالے سے اب نیب نے بھی ردعمل دیا ہے۔ نیب نے سابق وزیراعظم نواز شریفاور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو وطن واپسی کی صورت میں ائیرپورٹ سے ہی گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔نواز شریف اور مریم نواز کو اسلام آباد ائیرپورٹ سے ہی گرفتار کرنے کیلئے نیب نے ٹیم تشکیل دے دی ہے۔ نواز شریف اور مریم نواز کو پاکستان واپسی پرائیرپورٹ سے ہی گرفتار کرکے جیل منتقل کر دیا جائے گا۔ اس سے قبل احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے پاناما کیس میں ایون فیلڈ ریفرنس کا تفصیلی فیصلہ سنادیا، عدالت نے قرار دیا کہ ،قطری خط جھوٹا اور جعلی تھا،احتساب عدالت نے نوازشریف کی تمام جائیداد ضبط کرنے اورایون فیلڈ اپارٹمنٹس کی قرقی کاحکم دے دیا ہے،احتساب عدالت نے نوازشریف کو10سال قید کی سزا،8ملین پاؤنڈ جرمانہ ، مریم نواز کو7سال قید،2ملین پاؤنڈ کا جرمانہ اور کیپٹن ر صفدر کوایک سال قید کی سزا بھی سنادی ہے،تینوں ملزمان کوان کی عدم موجودگی میں قید کی سزا سنائی گئی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نوازشریف ، ان کی صاحبزادی مریم نوازاور ان کے دامادکیپٹن رصفدر کوایک سال سزا سنائی گئی ہے۔۔مریم نواز کوجعلی دستاویزات تیار کرنے پر دھوکہ دہی ثابت ہوئی ہے جس پرانہیں سات سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔احتساب عدالت نے نوازشریف کو10سال قید کی سزا،8ملین پاؤنڈ جرمانہ ، مریم نواز کو7سال قید،2ملین پاؤنڈ کا جرمانہ اور کیپٹن ر صفدر کوایک سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔بتایا گیا ہے کہ واضح رہے احتساب عدالت نے 3جولائی کوایون فیلڈریفرنس کا فیصلہ محفوظ کیاتھا۔مسلم لیگ ن کے قائدنوازشریف اور بچوں کے خلاف8ستمبر کو احتساب عدالت میں ریفرنسزدائر کیے گئے۔ریفرنس میں نوازشریف،، مریم نواز، حسن اور حسین نواز سمیت کیپٹن رصفدر کو نامزد کیا گیا۔14ستمبر2017ء کوعدالت میں کیس کی پہلی سماعت ہوئی ،ساڑھے نو مہینے کیس کوسنا گیا۔26ستمبر 2017ء کو نوازشریف اور 9اکتوبر کومریم نواز پہلی بار احتساب عدالت میں پیش ہوئے۔3نومبر کونوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن ر صفدر عدالت میں اکٹھے پیش ہوئے۔کیس میں 18گواہان نے اپنے بیانات قلمبند کروائے۔گواہان میں جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیاء بھی شامل تھے۔ تاہم واجد ضیاء نےنوازشریف کوایون فیلڈ ریفرنس میں براہ راست ملوث ہونے کا بیان نہیں دیا۔اسی طرح عدم حاضری پرعدالت نے حسن اور حسین نواز کواشتہاری ملزم قرار دیا۔گیارہ جولائی کونوازشریف کے وکیل خواجہ حارث کیس سے الگ ہوئے پھر 19جولائی کوکیس کے ساتھ لگ گئے۔سابق وزیراعظم نواز شریف اپنی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کے علاج اور ان کی عیادت کیلئے لندن میں موجود ہیں۔۔مریم نواز بھی ان کے ہمراہ لندن میں ہی ہیں۔ نوازشریف کی جانب سے فیصلہ کچھ روز کیلئے مئوخر کرنے کی درخواست کی گئی جس کواحتساب عدالت نے مستردکردیا تاہم آج بھی نوازشریف کی جانب سے فیصلہ 7روز کیلئے مئوخر کرنے کی درخواست ک کی گئی ہے۔درخواست کے ساتھ بیگم کلثوم نواز کی میڈیکل رپورٹ بھی عدالت کوبھجوائی گئی ہے۔تاہم عدالت نے درخواست کومسترد کردیا ہے۔جس میں عدالت سے استدعا کی گئی تھی کہ وہ عدالت میں خود آکر فیصلہ سننا چاہتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
احتساب عدالت کے فیصلے سے (ن) لیگ کو سیاسی فائدہ ہو گا،سا بق صدر آصف زرداری
مسلم لیگ (ن)کے صدر شہباز شریف نے پارٹی قائد نواز شریف کے خلاف عدالتی فیصلے کو مسترد کرنے کا اعلان کر تے ہوئے کہا ہے کہ احتساب عدالت کا فیصلہ سراسر زیادتی اور ناانصافی پر مبنی ہے
Translate News »