پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

روس طالبان کو ہتھیار اور مالی امداد فراہم کررہا ہے,امریکی جنرل کا دعویٰ
تاریخ :   24-03-2018

افغانستان ( ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو ) میں بین الاقوامی افواج کے سربراہ نے روس پر افغان طالبان کو اسلحہ فراہم کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔
برطانوی نشریاتی ادارے ‘بی بی سی’ کو دیے گئے ایک انٹرویو میں امریکی جنرل جان نکولسن کا کہنا تھا کہ انھوں نے “روسیوں کی طرف سے عدم استحکام کی سرگرمیاں دیکھی ہیں”، اور ان کے بقول مبینہ طور پر تاجکستان کی سرحد سے طالبان کو روسی ہتھیار

اسمگل کیے گئے۔
“ہم نے یہاں (افغانستان میں) داعش کے جنگجوؤں کو بڑھا چڑھا کر پیش کرنے کا بیانیہ دیکھا پھر اس بیانیے کو طالبان کی کارروائیوں کو روس کی طرف سے جائز قرار دیے جانے اور کسی حد تک طالبان کو مدد فراہم کرنے کے لیے استعمال کیا گیا۔”
جنرل نکولسن نے کہا کہ انھوں نے ذرائع ابلاغ میں طالبان کی طرف سے شائع ہونے والی کہانیاں بھی دیکھیں جس میں وہ کہتے ہیں کہ “دشمن نے ہماری مدد کی۔ افغان راہنماؤں کی طرف سے ہمیں وہ اسلحہ بھی لا کر دکھایا گیا جو ان کے بقول روسیوں نے طالبان کو دیا۔۔۔ہمیں معلوم ہے کہ اس میں روسی ملوث ہیں۔”
امریکی جنرل کے خیال میں روس کا طالبان کے ساتھ اس طرح ملوث ہونا قدرے نیا ہے۔ ان کے بقول روس نے افغان سرحد کے قریب تاجکستان میں کئی فوجی مشقیں کیں۔
“انسداد دہشت گردی کی مشقیں کی گئیں، لیکن ہم نے روس کا یہ رویہ پہلے بھی دیکھا کہ وہ بھاری مقدار میں سازو سامان لاتا ہے اور پھر اسے اپنے پیچھے چھوڑ جاتا ہے۔”
خیال کیا جاتا ہے کہ یہ اسلحہ اور آلات پھر سرحد پار اسمگل کر کے طالبان کو فراہم کر دیا جاتا ہے۔
امریکی جنرل جان نکولسن کا کہنا تھا کہ اس طرح کے اسلحے کی مقدار کے بارے میں کچھ وثوق سے نہیں کہہ سکتے، لیکن برطانوی نشریاتی ادارے کو افغان پولیس اور فوجی عہدیداران یہ بتا چکے ہیں کہ ان میں رات کو دیکھنے والے خصوصی آلات، درمیانی اور بھاری مشین گنز اور دیگر چھوٹا اسلحہ شامل ہے۔
روس طالبان کو ہتھیار اور مالی امداد فراہم کرنے کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہتا ہے کہ وہ اس شدت پسند گروپ کے ساتھ مذاکرات سے متعلق امور پر رابطے میں ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
موسمیاتی تبدیلياں پاکستان کے زرعی شعبے کو بری طرح متاثر کر رہی ہيں۔
تاجکستان کی حکومت نے خواتین کو کیا پہننا چاہیےسرکاری فیشن کی کتاب جاری

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »