سری لنکا کے وزیراعظم مہندا راجاپاکسے مستعفی ہوگئے     No IMG     سپریم کورٹ نے افضل کھوکھر اور سیف الملوک کھوکھر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دے دیا     No IMG     بھارتی ارب پتی مکیشن امبانی کی شادی پر خزانوں کے منہ کھُل گئے     No IMG     ایرانی وزیر خارجہ کی قطر کے وزير اعظم سے ملاقات     No IMG     وزیر اعظم کا دہشت گردوں کا آخری حد تک پیچھا کرنے کا عزم     No IMG     فرانسیسی پولیس کا معذور افراد پر بھی ظلم و ستم     No IMG     چین کینیڈین شہریوں کو رہا کرے، امریکی وزیر خارجہ     No IMG     بھارتی ریاست کرناٹک میں زہریلی خوراک کھانے سے تقریباً ایک درجن یاتریوں کی ہلاکت     No IMG     یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرتے ہیں، آسٹریلیا     No IMG     برطانوی وزیراعظم ٹیریزا مے کے پاس اب فقط چار آپشنز موجود ہیں۔     No IMG     سپریم کورٹ کا دہری شہریت والے ملازمین کے خلاف کارروائی کا حکم     No IMG     باردوی سرنگ کے دھماکے میں 6 سکیورٹی اہلکار ہلاک     No IMG     آئی ایم ایف سے پیکج صرف پاکستان کے مفاد کو مد نظر رکھ کر لیا جائے گا۔ وزیر خزانہ اسد عمر     No IMG     ہنگری میں غلام ایکٹ کے خلاف مظاہرے     No IMG     امریکی ایوان نمائندگان نے روہنگیا مسلمانوں پر بربریت کونسل کشی قرار دینے کی قرارداد بھاری اکثریت سے منظور     No IMG    

دو مہینے کے ریمانڈ کے بعد بھی شہباز شریف پر کوئی الزام ثابت نہ ہوسکا
تاریخ :   06-12-2018

اسلام آباد ( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ 60 دن کے ریمانڈ کے بعد بھی شہباز شریف پر کوئی الزام ثابت نہ ہوسکا، حکومت سازشوں کو ایک جانب ڈال کرعوام کے لیےکام کرے کیونکہ ان سے عوامی امیدیں وابستہ ہیں،حکومت سو دن

میں کوئی کارکردگی نہ دیکھا سکی،یہ حقیقت ہے کہ حکومت چل ہی نہیں رہی،حکومت صرف منہ بند رکھتی تو حالات آج بہت بہتر ہوتے،حکومت سازشوں کو ایک طرف رکھ کر صرف کام کرے ۔
نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ اتنی تیزی اور جلدی میں آج تک کوئی حکومت غیر مقبول نہیں ہوئی اور اس کی پاپولرٹی نیچے کی طرف نہیں آئی جتنی تحریک انصاف کی حکومت غیر مقبول ہوئی ہے ،تحریک انصاف کا دفاع کرنے والا کوئی شخص نظر نہیں آئے گا ،اب بلیم گیم سے کام نہیں چلتا ،کام کرنا پڑتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ فافن کی جانب سے جاری رپورٹ میں انتخابات میں فارم 45 پر دستخط نہ ہونے کی بات سامنے آئی ہے،انتخابات ہی متنازع تھے۔ انہوں نے کہا کہ یوٹرن تو ہر کوئی لے سکتا ہے لیکن نواز شریف اور پاکستان مسلم لیگ کا ایک ہی موقف ہے کہ ملک میں آئین کی حکمرانی ہو، ہم تو چاہتے ہیں کہ ملک میں حکومت اپنی آیئنی مدت پوری کرے لیکن یہاں تو اقتدار میں موجود جماعت خود اقتدار میں نہیں رہنا چاہتی۔انہوں نے کہا کہ 60 دن کے ریمانڈ کے بعد بھی شہباز شریف پر کوئی الزام ثابت نہیں ہوسکا، کیا بابرعوان کا کیس چلایا گیا؟ سب کے لیے ایک معیار ہونا چاہیئے لیکن ایسا نہیں ہے ، نواز شریف اور دوسروں میں فرق کیا جارہا ہے،آرڈننیس کی کیا ضرورت قانون موجود ہے الزامات عائد کرکے ثابت کریں۔انہوں نے کہا کہ جب وزیراعظم خود کہہ دے کہ قبل از وقت الیکشن کی ضرورت ہے تو اس کا کیا تاثر پڑے گا؟۔ایک سوال کے جواب میں شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ اب بات صرف جنوبی پنجاب میں ہی صوبہ کی نہیں بلکہ ملک میں دیگرصوبوں کی بھی ضرورت ہے کیونکہ اگر جنوبی پنجاب کی بات ہوگی تو دیگر علاقے بھی آواز اٹھائیں گے، اسی لیے اس معاملے پر بحث ہونی چاہیئے تاکہ کوئی دوسرا علاقہ اعتراض نہ کرے۔

Print Friendly, PDF & Email
حکومت نے ایک نہ سنی، صنعتکاروں کے2 سو ستر ارب روپے پھنس گئے
یاسر شاہ کی دو سو وکٹیں، 82 برس پرانا ریکارڈ توڑ دیا
Translate News »