محکمہ موسمیات کی پیش گوئی 19سے 26فروری تک ملک بھر میں بارشوں کی نیا سلسلہ شروع ہونے والا ہے     No IMG     وزیراعظم عمران خان کا سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کیلئے بڑا مطالبہ     No IMG     حکمرانوں کے تمام حلقے کشمیر کے معاملے پر خاموش ہیں, مولانا فضل الرحمان     No IMG     پاکستان, میں 20ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کا پہلا مرحلہ مکمل ہوگیا: سعودی ولی عہد     No IMG     لاہور قلندرز 78 رنز پر ڈھیر     No IMG     ابو ظہبی میں ہتھیاروں کے بین الاقوامی میلے کا آغاز     No IMG     برطانوی ہوائی کمپنی (Flybmi) دیوالیہ، سینکڑوں مسافروں کو پریشانی     No IMG     یورپ میں قانونی طریقے سے داخل ہونے والے افراد کی طرف سے سیاسی پناہ کی درخواستیں دیے جانے کا رجحان بڑھ رہا ہے     No IMG     ٹرین کے ٹائلٹ میں پستول، سینکڑوں مسافر اتار لیے گئے     No IMG     یورپی یونین ,کے پاسپورٹوں کا کاروبار ’ایک خطرناک پیش رفت     No IMG     بھارت نے کشمیری حریت رہنماؤں کو دی گئی سیکیورٹی اورتمام سرکاری سہولتیں واپس لے لی     No IMG     پی ایس ایل کے چھٹے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو 7وکٹوں سے شکست دےدی     No IMG     وزیرخارجہ کا ایرانی ہم منصب کو ٹیلیفون     No IMG     سعودی ولی عہد کا پاکستان میں تاریخی اور پُرتپاک استقبال     No IMG     پاکستان ,کو زاہدان کے دہشتگردانہ حملے کا جواب دینا ہوگا، ایران     No IMG    

حکومت کا سب سے بڑا مسئلہ مالی خسارہ تھا جو ہمیں ورثہ میں ملا
تاریخ :   30-10-2018

اسلام آباد ( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت کا سب سے بڑا مسئلہ مالی خسارہ تھا جو ہمیں ورثہ میں ملا، ہم نے پوری کوشش کی کہ آئی ایم ایف کے پاس سب سے آخر میں جائیں تاکہ معیشت پر کم سے کم بوجھ پڑے، چین کے دورہ کے دوران ٹیکنالوجی کے حصول پر زور دیا

جائے گا جو ملکی خود کفالت کو یقینی بنائے گی اور مستقبل میں کسی دوست ملک کی مالی معاونت کی ضرورت نہیں پڑے گی، ہماری سب سے بڑی طاقت نوجوان ہیں، اگر ہم اپنے نوجوانوں کو مواقع فراہم کریں تو پاکستان بہت جلد ترقی کی منازل طے کر سکتا ہے، وفاقی اور صوبائی وزراء کی کارکر دگی کا جائزہ لیا جائے گا، حکومت میں بھی سزا اور جزا کا نظام ہوگا، جو وزیر کام نہیں کرے گا اس کو تبدیل کر دیا جائے گا۔
انہوں نے یہ بات منگل کو لاہور کے ایک روزہ دورے کے دوران پنجاب کے اراکین اسمبلی اور پارلیمانی پارٹی کے اراکین سے ملاقات میں کہی۔ اس موقع پر سو روزہ پلان پر پیشرفت کا جائزہ بھی لیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت کا سب سے بڑا مسئلہ مالی خسارہ تھا جو ہمیں ورثہ میں ملا، ہم نے پوری کوشش کی کہ آئی ایم ایف کے پاس سب سے آخر میں جائیں تاکہ معیشت پر کم سے کم بوجھ پڑے، اس سے پہلے ہم نے دوست ممالک سے رجوع کیا اور سعودی عرب نے بغیر کسی شرط کے مالی معاونت فراہم کی۔
انہوں نے کہا کہ دنیا کو پتہ ہے کہ پاکستان خطہ کا سب سے اہم ملک ہے اور اس وقت صرف طرز حکومت کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہماری سب سے بڑی طاقت ہمارے نوجوان ہیں، اگر ہم اپنے نوجوانوں کو مواقع فراہم کریں تو پاکستان بہت جلد ترقی کی منازل طے کر لے گا۔ انہوں نے کہا کہ چین ہمارا اہم ترین دوست ملک ہے، چین کے دورہ کے دوران ٹیکنالوجی کے حصول پر زور دیا جائے گا تاکہ پاکستان اپنے پاؤں پر کھڑا ہو سکے تاکہ مستقبل میں کسی دوست ملک کی مالی معاونت کی ضرورت نہ پڑے۔
انہوں نے کہا کہ وفاقی اور صوبائی وزراء کی کارکر دگی کا جائزہ لیا جائے گا اور حکومت میں بھی سزا اور جزا کا نظام ہوگا، جو وزیر کام نہیں کرے گا اس کو تبدیل کر دیا جائے گا۔ عمران خان نے کہا کہ پاکستان اب بدل چکا ہے، پاکستان تحریک انصاف نے ملک سے دو پارٹی سیاست کے کلچر کو ختم کر دیا ہے، ہماری جدوجہد سے اب قوم باشعور ہو چکی ہے۔ انہوں نے صوبائی وزراء و اراکین اسمبلی پر زور دیا کہ وہ اپنی کارکردگی کو مزید بہتر بنائیں۔
انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں ہمیں ماضی کی روایات سے ہٹ کر دوبارہ اس لئے موقع دیا گیا کہ ہم وہاں عوامی فلاح و بہبود کی بہتری میں کامیاب ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ جس آدمی پر کرپشن کے کیس ہوں وہ پبلک اکائونٹس کمیٹی کا چیئرمین کیسے بن سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اب مشکل ترین دور سے نکل چکا ہے اور انشاء اللہ اب بہت جلد بہتری آئے گی۔
وزیراعظم نے کہا کہ نیپرا نے بجلی کے نرخ 3 روپے سے زیادہ بڑھانے کی تجویز دی تھی مگر ہم نے صرف اوسطاً 1.27 روپے فی یونٹ اضافہ کی منظوری دی اور غریب پر پھر بھی بوجھ نہیں ڈالا جبکہ کسان کیلئے ٹیوب ویل کی بجلی کے نرخ بھی کم کر دیئے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت بجلی کے ترسیلی نظام میں بہتری لا رہی ہے اور بجلی چوروں سے سختی سے نمٹا جائے گا، ہماری ترجیح نظام حکومت کو بہتر بنانا ہے، بڑے چوروں کو پکڑنا ہے، غریب آدمی کو تنگ نہیں کیا جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ ہماری جنگ بڑے بڑے ما فیاز کے خلاف ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ آپ نے ہر فیصلہ میرٹ پر کرنا ہے، آپ کی ساری توجہ عام آدمی کی زندگی میں بہتری لانے پر ہونی چاہئے، اگر آپ کی نیت ٹھیک ہو تو الله آپ کی مدد کرے گا، ہر مہذب معاشرہ غریب کی فلاح کے بارے میں سوچتا ہے اور اب پاکستان میں بھی یہی ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا مقصد پاکستان کو ایک فلاحی ریاست بنانا ہے اور صحت و تعلیم ہماری اولین ترجیحات ہیں اور یہی وہ شعبے ہیں جو غریب کی زندگی میں بہتری لا سکتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان سٹیزنز پورٹل کا آغاز ہو چکا ہے، اب عوام ہمیں براہ راست ذمہ دار ٹھہرا سکتے ہیں جس سے کرپشن پر چیک ہو گا، اس لئے اب آپ کو زیادہ محنت سے کام کرنا ہو گا۔ اس موقع پر صوبائی اسمبلی اراکین نے وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی سردار عثمان بزدار کی قیادت پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیا۔ اراکین نے وزیراعظم کو مختلف شعبوں میں طرز حکومت میں مزید بہتری لانے کیلئے تجاویز بھی پیش کیں۔

Print Friendly, PDF & Email
دارالحکومت نئی دہلی میں پبلک ٹرانسپورٹ بند کرنے کا امکان
تحریک انصاف کے ناراض اراکین پنجاب اسمبلی نے مایوس ہو کر مسلم لیگ نے رابطے کرنا شروع کردئیے
Translate News »