اسرائیلی فوج ’فوری طور پر حملے بند, کرے، ترکی     No IMG     یورپی فوج‘ تشکیل دی جائے ,چانسلر انگیلا میرکل     No IMG     ترکی میں مہاجرین کی کشتی ڈوبنے سے 3 بچوں سمیت 5 افراد ہلاک     No IMG     آرمی چیف کی زیر صدارت کمانڈرز کانفرنس     No IMG     ٹریفک کےمختلف حادثات میں 7 افراد جاں بحق     No IMG     اسٹاک مارکیٹ میں کاروباری سرگرمیوں کے آغاز کے ساتھ ہی مندی کا رحجان     No IMG     ایف بی آرنے وفاقی وزیرسائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے خلاف تحقیقات کیلئے قائم کردہ جے آئی ٹی کو معلومات فراہم کرنے سے انکار کردیا     No IMG     نیب ادارہ ختم کر دیا جا ئے ، اہم ترین اعلان     No IMG     آصف علی زرداری، فریال تالپور اور دیگر ملزمان کی عبوری ضمانت میں 10 دسمبر تک کی توسیع     No IMG     ہولناک ٹریفک حادثہ، ڈرائیور ہلاک، 7 افراد زخمی     No IMG     فلسطینیوں نے مقبوضہ علاقوں پر 200 راکٹ فائر کئے ہیں جن کے نتیجے میں 19 صہیونی زخمی     No IMG     بالی ووڈ اداکارہ راکھی ساونت کوغیر ملکی خاتون ریسلر سے پنگا مہنگا پڑگیا‘ اداکارہ ہسپتال پہنچ گئی     No IMG     موجودہ حکومت کے پاس نہ تو اہلیت ہے نہ ہی صلاحیت اور نہ ہی منصوبہ بندی,چیف جسٹس آف پاکستان     No IMG     چیئرمین نیب نے تمام افسران کے میڈیا کو انٹرویوز پر پابندی عائد کردی     No IMG     افریقی ملک یوگنڈا میں ایک اسکول میں آگ لگنے کے سبب 9 بچے ہلاک 40 زخمی     No IMG    

حوثیوں کے پاس ایرانی میزائل ہیں: اقوام متحدہ
تاریخ :   01-12-2017

اقوام متحدہ(ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) میں پابندیوں کی نگرانی کرنے والے مبصرین کی جانب سے تیار کی جانے والی ایک خفیہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یمن میں حوثی ملیشیا کی جانب سے سعودی عرب کی سمت داغے گئے چار بیلسٹک میزائلوں کی باقیات سے یہ ایران کے تیار کردہ نظر آتے ہیں۔

اقوام متحدہ کے مبصرین کی مؤرخہ 24 نومبر کی رپورٹ کو ایک غیر ملکی نیوز ایجنسی کی طرف سے جمعرات کے روز منظر عام پر لایا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ابھی تک ان میزائلوں کو فراہم کرنے والے فریق کی شناخت کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے تاہم غالب گمان یہ ہے کہ میزائلوں کو اُس پابندی کی خلاف ورزی کے طور پر بھیجا گیا جو اقوام متحدہ کی جانب سے اپریل 2015 میں ہتھیاروں پر عائد کی گئی تھی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مبصرین نے سعودی عرب کے دو عسکری اڈوں کا دورہ کیا اور وہاں اُن میزائلوں کی باقیات کو دیکھا جو مملکت نے 19 مئی ، 22 جون ، 26 جولائی اور 4 نومبر کے حملوں کے بعد اکٹھا کی تھیں۔

یاد رہے کہ یمن میں آئینی حکومت کی سپورٹ کرنے والا عرب اتحاد بارہا یہ اعلان کر چکا ہے کہ ایران کی جانب سے حوثیوں کو ہتھیاروں اور میزائلوں کی شکل میں سپورٹ دی جا رہی ہے۔ اس حوالے سے پانچ نومبر کو عرب عسکری اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی تصویری ثبوت بھی پیش کر چکے ہیں۔ المالکی کے مطابق ایران اور حزب اللہ یمنی باغیوں یعنی حوثیوں کو ماہرین اور ٹکنالوجی بھی پیش کر رہے ہیں۔ المالکی نے حوثیوں کی جانب سے سعودی عرب کے خلاف استعمال ہونے والے اسلحے اور میزائلوں کی تصاویر دکھائیں۔

اتحاد کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ایرانی نظام کی سپورٹ کے بغیر حوثیوں کا ریاض کو نشانہ بنانا ممکن نہ تھا۔ المالکی کے مطابق حوثیوں کے پاس جو میزائل ہیں وہ جنگ سے قبل یمنی فوج کے اسلحے خانے میں موجود نہیں تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
رواں مالی سال کیلئے اقتصادی ترقی کی شرح کا ہدف 6 فیصد مقرر کیا ہے
ملکوال , عید میلاد النبی صلی اللہ علیہ وسلم پر دیکھیں ایک ننا عشق رسول

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »