گجرانوالہ میں یوم پاکستان کی تقریب میں سکول کی دیوار گرنے سے 6 افراد جاں بحق     No IMG     79 واں یوم پاکستان: وفاقی دارالحکومت میں مسلح افواج کی شاندار پریڈ     No IMG     پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG    

جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے کہا ہےصرف پیرس معاہدہ ہی کافی نہیں
تاریخ :   16-11-2017

جرمن (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو)چانسلر انگیلا میرکل نے کہا ہے کہ زمین کے درجہ حرارت میں اضافے کو روکنے کے لیے پیرس میں طے پانے والا صرف عالمی ماحولیاتی معاہدہ ہی کافی نہیں ہو گا۔ بون میں جاری عالمی ماحولیاتی کانفرنس 17 نومبر کو اختتام پذیر
ہو گی۔

 

جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے کہا کہ یہ معاہدہ صرف آغاز ہے اور مزید کئی اقدامات کی ضرورت ہو گی۔ جرمن شہر بون میں جاری عالمی ماحولیاتی کانفرنس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے میرکل نے بدھ کی شام کہا کہ مقررہ ماحولیاتی اہداف صرف پیرس معاہدے ہی سے حاصل نہیں کیے جا سکتے۔ اس کانفرنس میں دنیا کے قریب دو سو ممالک کے وزراء اور اعلیٰ مندوبین سے خطاب کرتے ہوئے فرانسیسی صدر امانوئل ماکروں نے کہا کہ امریکا کے پیرس معاہدے سے نکل جانے کے بعد اقوام متحدہ کے ماحولیاتی سائنس پینل کے بجٹ کا امریکا کے لیے مختص کردہ حصہ اب یورپ کو ادا کرنا چاہیے۔

جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق ان دونوں رہنماؤں کی اس عالمی کانفرنس میں شرکت اس امر کی یقین دہانی ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے واشنگٹن کے پیرس کے عالمی معاہدے سے الگ ہو جانے کے فیصلے کے باوجود عالمی درجہ حرارت میں اضافے کے مسئلے سے نمٹنے کی کوششیں رائیگاں نہیں جائیں گی۔

اس کانفرنس سے فرانسیسی صدر ایمانوئل ماکروں اور جرمن چانسلر انگیلا میرکل کا خطاب دراصل وزارتی سطح کے مذاکرات کے سلسلے کا آغاز ہے۔ اس بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد کا مقصد 2015ء میں طے پانے والے ماحولیاتی تحفظ سے متعلق پیرس معاہدے اور ضرر رساں گیسوں کے اخراج کے حوالے سے طے پانے والے اہداف پر عملدرآمد کا جائزہ لینا ہے۔

پیرس معاہدے کے مطابق 2020ء تک کاربن ڈائی آکسائیڈ کے اخراج میں 40 فیصد تک کمی لائی جانا ہے۔ میرکل اور ماکروں کے علاوہ جرمن صدر فرانک والٹر اشٹائن مائر اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انٹونیو گوٹیرش نے بھی اس کانفرنس سے خطاب کیا۔ دو ہفتوں تک جاری رہنے والے ان مذاکرات میں دنیا کی 197 اقوام کے نمائندے شریک ہیں۔

امریکی ریاست کیلیفورنیا کے گورنر جیری براؤن اور ان کے پیش رو اور عالمی شہرت یافتہ ہالی وُڈ اسٹار آرنلڈ شوارزنیگر بھی بون ماحولیاتی کانفرنس میں شرکت کرنے والے 23 ہزار مندوبین میں شامل ہیں۔

شوارزنیگر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے رواں برس جون میں پیرس معاہدے سے امریکی اخراج کے اعلان کے بعد اس صدارتی فیصلے کے سب سے بڑے ناقد بن کر سامنے آئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
افغانستان میں افیون کی پیداوار میں ریکارڈ حد تک اضافہ
احتساب کو کہیں اور سے کنٹرول کیا جارہا ہے، ہمیں سزا دی نہیں بلکہ دلوائی جارہی ہے ,سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »