پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

جرمنی کے مغربی شہر میونسٹر میں ایک وین راہگیروں پر چڑھا دیے جانے کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک یا زخمی
تاریخ :   07-04-2018

جرمنی( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) کے مغربی شہر میونسٹر میں ایک وین راہگیروں پر چڑھا دیے جانے کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک یا زخمی ہو گئے۔ پولیس کے مطابق یہ بظاہر ایک حملہ تھا اور وین ڈرائیور نے خود کو گولی مار کر موقع پر ہی خود کشی کر لی۔

وفاقی جرمن دارالحکومت برلن اور جرمنی کے سب سے زیادہ آبادی والے صوبے نارتھ رائن ویسٹ فیلیا کے شہر میونسٹر سے ہفتہ سات اپریل کی شام ملنے والی نیوز ایجنسی روئٹرز کی رپورٹوں کے مطابق یہ حملہ آج سہ پہر کیا گیا اور اس واقعے میں ایک شخص نے اپنی مال بردار گاڑی شہر کے وسط میں راہ

گیروں کے ایک ہجوم پر چڑھا دی۔

صوبائی پولیس کے ابتدائی بیانات کے مطابق اس واقعے میں متعدد افراد ہلاک یا زخمی ہو گئے۔ میونسٹر کی پولیس نے آخری خبریں آنے تک زخمیوں کی تعداد 50 تک بتائی ہے۔ ہلاکتوں کی اصل تعداد کے بارے میں فی الحال کچھ نہیں بتایا گیا۔

ایک سکیورٹی اہلکار نے بتایا کہ شواہد سے معلوم ہوتا ہے کہ اس واقعے میں دانستہ حملے یا ممکنہ دہشت گردی کو خارج از امکان قرار نہیں دیا جا سکتا۔ دیگر رپورٹوں کے بطابق مرنے والوں میں اس حملے میں استعمال ہونے والی وین کا ڈرائیور بھی شامل ہے، جس نے مبینہ طور پر اپنی گاڑی عام راہ گیروں پر چڑھانے کے بعد خود کو گولی مار کر خود کشی کر لی۔

جرمنی کے کثیر الاشاعت روزنامے ’بِلڈ‘ نے لکھا ہے کہ اس ’حملے میں تین افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہو گئی ہے اور پولیس نے میونسٹر شہر کے اندرونی حصے کی مکمل ناکہ بندی کر رکھی ہے۔‘‘

روئٹرز کے مطابق میونسٹر میں جو نارتھ رائن ویسٹ فلیا اور صوبے لوئر سیکسنی کی سرحد پر واقع ایک شہر ہے، اس تازہ حملے نے دسمبر 2016ء میں جرمن دارالحکومت برلن میں کیے گئے اس حملے کی یاد ایک بار پھر تازہ کر دی ہے، جب ایک پناہ گزین کے طور پر جرمنی میں داخل ہونے والے تیونس کے ایک شہری نے ایک ٹرک ایک کرسمس مارکیٹ کے شرکاء پر چڑھا دیا تھا۔

اس حملے میں تب 12 افراد مارے گئے تھے۔ اس حملے کے ملزم انیس عامری نے کرسمس مارکیٹ پر حملے کے لیے یہ ٹرک 19 دسمبر 2106ء کو اس کے ڈرائیور کو قتل کرنے کے بعد اپنے قبضے میں لے لیا تھا اور پھر اسے برلن میں ایک کرسمس مارکیٹ میں موجود سینکڑوں افراد پر حملے کے لیے استعمال کیا تھا۔

نیوز ایجنسی اے ایف پی نے میونسٹر سے اپنی رپورٹوں میں لکھا ہے کہ آج کے اس حملے میں زخمی ہونے والوں میں سے کم از کم چھ افراد شدید زخمی ہیں، جن کی حالت نازک بتائی جا رہی ہے۔ پولیس کے مطابق اس واقعے کے فوری بعد اس کے محرکات اور موقع سے دستیاب ابتدائی شواہد کی روشنی میں صورت حال قطعی غیر واضح ہے اور فی الحال ’حملہ آور‘ کی شناخت کے بارے میں بھی کچھ نہیں کہا جا سکتا۔

 

Print Friendly, PDF & Email
سپین جمہوریت اور بین الاقوامی معاہدوں کا احترام کرے، کاتلان سابق صدر
گجرات میں سرکاری سکول بنیادی سہولیات سے محروم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »