چودھری پرویزالٰہی سے فردوس عاشق اعوان کی ملاقات     No IMG     یوکرین کے مزاحیہ اداکار ملک کے صدر منتخب     No IMG     وزیروں کو نکالنے سے سلیکٹڈ وزیراعظم کی نااہلی نہیں چھپے گی, بلاول بھٹو زرداری     No IMG     ایران کے صدر حسن روحانی نے تہران میں سعد آباد محل میں پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا باقاعدہ اور سرکاری طور پر استقبال     No IMG     بھارت اور چین کے مابین پیر کے روز بیجنگ میں باہمی فیصلہ کن مذاکرات کا آغاز     No IMG     بھارتی وزیر اعظم,ہمارا پائلٹ واپس نہ کیا جاتا تو اگلی رات خون خرابے کی ہوتی     No IMG     ملکی سیاسی پارٹیاں ووٹ تو غریبوں ،محنت کشوں کے نام پر لیتی ہیں مگر تحفظ جاگیرداروں اور مافیاز کو دیتی ہیں ,جواد احمد     No IMG     افغان سپریم کورٹ نے صدر کے انتخاب تک صدر اشرف غنی کی مدت صدارت میں توسیع کردی     No IMG     آزاد کشمیر میں منڈا بانڈی کے مقام پر ایک جیپ کھائی میں گرنے سے 5 افراد ہلاک     No IMG     مصرمیں صدرکےاختیارات میں اضافے کےلیے ہونےوالے تین روزہ ریفرنڈم میں ووٹ ڈالنےکا سلسلہ جاری ہے     No IMG     لاہور میں 3 منزلہ خستہ حال گھر زمین بوس ہونے کے نتیجے میں خاتون سمیت 6 افراد جاں بحق جبکہ 4 افراد زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان ایران کے پہلے سرکاری دورے پر تہران پہنچ گئے     No IMG     سری لنکا میں کل ہونے والے آٹھ بم دھماکوں کے نتیجے میں 300 افراد ہلاک اور 500 زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے مکران کوسٹل ہائی وے پر دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکام سے واقعے پر رپورٹ طلب کر لی     No IMG     افغانستان اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑتے دکھائی دے رہے ہیں     No IMG    

جرمنی میں ملازمتیں حاصل کرنے والوں میں مسلسل تیسرے برس امریکا، چین اور بھارت سے تعلق رکھنے والے افراد کی تعداد میں اضافہ
تاریخ :   15-04-2019

ہے۔ اس رپورٹ کے مطابق جرمنی میں ورک پرمٹ حاصل کرنے والے غیر یورپی افراد کی تعداد سن 2017ء میں دو لاکھ سترہ ہزار تھی جو سن 2018ء میں دو لاکھ چھیاسٹھ ہزار ہو گئی۔

رپورٹ کے مطابق سن 2018 غیر یورپی افراد کی جرمنی میں ملازمت میں اضافے کا تیسرا مسلسل برس تھا۔ اس رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہےکہ ان غیر یورپی افراد میں سے اکثریت کا تعلق بھارت سے ہے، جو اس تعداد کا 12 فیصد بنتا ہے۔ اس کے بعد چین کا نمبر آتا ہے، جہاں کے شہری جرمن ورک پرمٹ کے حامل مجموعی افراد کا نو فیصد ہیں ۔

رپورٹ کے مطابق جرمنی میں آنے اور کام کرنے والے غیریورپی افراد کی اوسط عمر 35 برس ہے، جب کہ ان کی دو تہائی افراد مردوں پر مشتمل ہے۔ وفاقی دفتر شماریات کے اعداد و شمار میں بھی بتایا گیا ہے کہ ان میں سے 80 فیصد سے زائد کے پاس جرمنی کا عارضی ورک پرمٹ ہے جب کہ صرف 17 فیصد افراد ایسے ہیں، جو جرمنی میں غیرمعینہ مدت کے لیے رہ اور کام کر سکتے ہیں۔
اعداد و شمار کے مطابق البانیہ، مونٹینیگرو، کوسووو، مقدونیہ، سربیا اور بوسنیا ہرزیگووینا کی ریاستوں سے تعلق رکھنے والے افراد جرمنی میں کام کرنے والے یورپی یونین کی غیر رکن ریاستوں کے ملازمین کا 25 فیصد ہیں، جب کہ یہ تعداد 2015 میں فقط نو فیصد تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
مستونگ علاقہ میں مسافروین اورٹرک میں تصادم کے نتیجے میں 11 افراد ہلاک جب کہ 7 زخمی ہوگئے
امریکی کانگریس میں بھارت کو نیٹو اتحادی ممالک کے برابر درجہ دینے کے لیے بل پیش کر دیا گیا
Translate News »