وینزویلا سے تعلق رکھنے والی 25 سالہ نوجوان لڑکی نے ملکہ حسن کا ٹائٹل جیت لیا     No IMG     حزب اللہ کی ايک اور سرنگ دريافت ,اسرائیلی فوج کا دعوی     No IMG     عوام اپنے مسائل کے حل کیلیے وزیر اعظم کمپلینٹ پورٹل کا استعمال کریں،وزیراعظم     No IMG     سابق صدر آصف زرداری نے پنجاب کی بجلی بند کرنے کی دھمکی دے دی     No IMG     رشوت کا سب سے بڑا ناسور پٹواری ہیں, چیف جسٹس     No IMG     فرانسیسی پولیس نے پیلے رنگ جیکٹس والے مظاہرین پر شدید تشدد     No IMG     اسلام آباد تھانہ سہالہ میں شدید فائرنگ, بدنام زمانہ شیرپنجاب جاں بحق     No IMG     اگر گرفتار ہوا تو کیا ہوگا کیونکہ جیل تو میرا دوسرا گھر ہے, آصف علی زرداری     No IMG     امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کا نیا وزیر داخلہ مقرر کرنے کا اعلان     No IMG     اٹلی میں ہزاروں مظاہرین نے مہاجر مخالف قوانین کے خلاف مظاہرہ     No IMG     پاکستانیوں کے دل پر آرمی پبلک سکول (اے پی ایس ) پشاور میں لگنے والے زخم کو چار سال مکمل ہوگئے     No IMG     رائے ونڈ, چینی انجنئیر، جیا جینیفر پر دل ہار بیٹھا     No IMG     سپین میں یہ بیٹا ایک سال تک ماں کی لاش کے ساتھ کیوں رہا ؟     No IMG     سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان نے صحافی جمال خاشقجی کے قاتل سعود القحطانی کو معاف کردیا     No IMG     سری لنکن صدر نے برطرف وزیر اعظم کو دوبارہ وزیر اعظم منتخب کرلیا     No IMG    

ا360بستروں پر مشتمل ہسپتال اگلے سال مکمل ہو گا، گردوں اور جگر کے غریب مریضوں کا علاج مکمل طور پر مفت ہوگا،وزیراعلیٰ پنجاب
تاریخ :   07-11-2017

لاہور(ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے پاکستان کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ کے منصوبے کا دورہ کیا۔ وزیراعلی نے منصوبے کے تعمیراتی کاموں کا جائزہ لیا-وزیراعلی نے انسٹی ٹیوٹ کے مختلف حصوں میں جاری کام پر پیشرفت پر اطمینان کا اظہار کیا اور متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ منصوبے پر کام کی رفتار کو مزید تیز کیاجائے تاکہ اس منصوبے کا پہلا مرحلہ 25دسمبر تک مکمل ہوسکی-وزیراعلی زیر تعمیر ہسپتال کے مختلف حصوں میں گئے اور انہیں ہسپتال میں جاری تعمیراتی کام کے بارے میں تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی -چیف ایگزیکٹو آفیسر انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ اتھارٹی پنجاب نے وزیراعلی کو منصوبے پر اب تک ہونیوالی پیشرفت کے بارے میں آگاہ کیا-وزیراعلیٰ نے موک روم کا معائنہ کیا اور ہیپاٹائٹس فلٹر کلینک کا بھی دورہ کیا۔وہاں موجود مریضوں اور عملے سے ملاقات کی۔مریضوں نے وزیراعلی سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ ہیپاٹائٹس فلٹر کلینک میں بہترین علاج معالجہ مل رہا ہے اور یہاں تمام طبی سہولتیں موجود ہیں۔وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف نے منصوبے کے دورے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان کڈنی اینڈ لیور ٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ کے منصوبے کے پہلے مرحلے کو 25دسمبر کو مکمل کرنے کی پوری کوشش کی جا رہی ہے او رامید ہے کہ114بستروں پر مشتمل پہلے مرحلے کا افتتاح 25دسمبر کو کیا جائے گا-منصوبہ پر دن رات کام ہورہاہی- 114بستروں پر مشتمل ہسپتال کے پہلے مرحلے میں آئی سی یو ، سی سی یو، ڈائلسز سنٹراور ایمرجنسی شامل ہوں گی-چیلنجز کے باوجود پوری ٹیم شبانہ روز کام کررہی ہے -یہ مرحلہ کٹھن ضرو ر ہے تاہم زندہ قومیں محنت ،امانت اور دیانت سے کام کرتے ہوئے نا ممکن کو ممکن بنا دیتی ہیں-انشاء اللہامید ہے کہ 25دسمبر 2017ء کو منصوبے کا پہلا مرحلہ آپریشنل کردیا جائے گا جبکہ 360بستروں پر مشتمل مکمل ہسپتال اگلے سال پایہ تکمیل کو پہنچے گا اور اس ہسپتال میں گردوں اور جگر کے امراض میں مبتلا غریب مریضوں کا علاج معالجہ مکمل طور پر مفت ہوگا – مریضوں کے علاج اور آپریشن پر آنے والے اخراجات پنجاب حکومت خود برداشت کرے گی تاہم ہسپتال مکمل ہونے کے بعد ایک ٹرسٹ بنایا جائے گا اور ہسپتال کے ساتھ کمرشل سرگرمیاں بھی شروع کی جائیں گی جس سے غریب مریضوں کو مفت علاج کی فراہمی کے حوالے سے آمد ن حاصل ہوگی-ہسپتال میں کمرشل سرگرمیوں کی مدد سے دکھی انسانیت کی خدمت اور ہسپتال کے اخراجات پورے کئے جائیں گی-بہترین علاج معالجہ پنجاب اور پاکستان کے عوام کا حق ہے اور یہ حق ہم انہیں دیں گی- انہوںنے کہاکہ ہسپتال کے لئے امریکہ، یورپ، مشرق وسطی اور دنیا بھر سے باصلاحیت اور بہترین ڈاکٹروں اور نرسوں کی تلاش کا عمل جاری ہی-کچھ سرجنز،سپیشلسٹ اور نرسیں آچکی ہیں -معروف کڈنی سرجن ڈاکٹر سعید اختر جو ایک درد دل رکھنے والے انسان ہیں ان کی سربراہی میں ہسپتال کا مینجمنٹ کا نظام بنایا جا رہا ہی-انہوںنے کہاکہ یہ ہسپتال پنجاب حکومت 100فیصد اپنے وسائل سے بنا رہی ہے اور یہ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کا ایک ماڈل ہے،ہسپتال میں گردے اور جگر کے امراض کے علاج کی جدید سہولتیں میسر ہوں گی اور نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے میں ایسا ہسپتال نہیں ہو گا- ہسپتال میں نہ صرف اعلی معیار کی طبی سہولتیں ہوں گی بلکہ جینٹوریل سروسز بھی عالمی معیار کی ہوںگی -انہوں نے کہاکہ میں اس منصوبے کو آگے بڑھانے اور اس پرکام کرنے وا لے صوبائی وزیر صحت ، سیکرٹری صحت ،پولیس ، انتظامیہ ، کنٹریکٹرز اور سب کا شکریہ ادا کرتا ہوں اور انہیں پیشگی مبارکباد بھی دیتا ہوں-میری ان سے گزارش ہے کہ 25دسمبر کو اس منصوبے کی تکمیل کا جووعدہ کیا گیا ہے اسے پورا کیا جائے -یہ ہسپتال پنجاب کا نہیں بلکہ پورے پاکستان کے عوام کا ہے اور یہاں پاکستان بھر کے غریب عوام کو جگراور گردے کے امراض کے علاج کی سہولتیں مفت حاصل ہوںگی-وزیراعلی محمد شہبازشریف نے میڈیا کے نمائندوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ وقت سے پہلے الیکشن کی باتیں وہ لوگ کر رہے ہیں جنہوں نے خیبر پختونخوا کا بیڑہ غرق کیا، جھوٹ، الزام تراشی، تہمت بازی اور یوٹرن جن کا شیوہ ہی-ان کی لغو باتوں کا جواب دینا میں مناسب نہیں سمجھتا- عدالت میں مقدمہ چل رہاہے ،اس کے باوجود یہ صاحب کہہ رہے ہیں کہ شہبازشریف نے مجھے 10ارب روپے کی لالچ دی اور عدالتو ںمیں پیش ہونے کی بجائے کہہ رہے ہیں مقدمہ کو اسلا م آباد یا کسی اور جگہ شفٹ کر دیا جائی-مقدمہ عدالت میں ہو اوریہ عدالت میں پیش ہونے کی بجائے پھر یہی کہہ رہے ہوں کہ مجھے 10ارب روپے کی پیشکش کی گئی تو ان کی بددیانتی کا اس سے بڑا اور کوئی ثبوت ہو نہیں سکتا-ان کی الزام تراشی اس بات کی دلیل ہے کہ ان کا اخلاقی او رسیاسی لحاظ سے دیوالیہ نکل گیاہے -الزام تراشی کرنا اس بات کی دلالت ہے کہ انہوںنے دھرنے کے ذریعے قوم کا قیمتی وقت ضائع کیا-انہوںنے کہاکہ اگر کے پی کے میں بھی پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت ہوتی تو وہاں بھی ہسپتالوں کے منصوبے مکمل ہو رہے ہوتی-جعلی وغیر معیاری ا دویات کے خاتمے کے لئے اقدامات ہوتے اور ڈینگی کی وباء کا مقابلہ کیا جاتا-نہ کہ ڈینگی سے ڈر کر پہاڑوں پر بیٹھ کرگپیںماری جاتیں- وزیراعلی نے کہاکہ اورنج لائن میٹروٹرین کا کیس عدالت میں ہے -لاہور ہائی کورٹ نے ڈیڑھ برس قبل اس پر حکم امتناعی جاری کیا تھا ہم اس حوالے سے سپریم کورٹ میں گئے ،پی ٹی آئی نے اس عوامی منصوبے کی بھرپور مخالفت کی اور ہم منصوبے میں تاخیر کا ذمہ دار پی ٹی آئی کو سمجھتے ہیں-انہوںنے میٹروبس منصوبے میں بھی کرپشن کے الزامات لگائے لیکن ایک دھیلے کی کرپشن ثابت نہ کر سکی- قبل ازوقت الیکشن کی باتیں وہی لوگ کررہے ہیں جو نہیں چاہتے کہ اورنج لائن میٹروٹرین ،صحت،تعلیم اور عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے منصوبے مکمل ہوں اور عوام کو معیاری ادویات و جدید تشخیصی سہولتیں ملیں-ان لوگوں نے کے پی کے کے عوام کو تو کچھ نہ دیا لیکن یہ پنجاب کے عوام کا بھی حق چھیننا چاہتے ہیں-ایک او رسوال کے جواب میں وزیراعلی نے کہاکہ غریب قوم کے 6ارب روپے لوٹنے والے زرداری صاحب آج ہمیں بھاشن دے رہے ہیں -غریب قوم کی خون پسینے کی کمائی لوٹنے والوں کو حق نہیں پہنچتا کہ وہ کرپشن کے خلاف درس دیں- زرداری صاحب نے اپنی کرپشن چھپانے کے لئے آئین کا سہارا لیتے ہوئے سپریم کورٹ کے حکم پر خط نہیں لکھا-غریب قوم کے حق پر ڈاکہ ڈالنے والے یاد رکھیں کہ غریبوں کی آہیںآسمانوں کو بھی چیر دیتی ہیں- غریب قوم کے 60ملین ڈالر لوٹنے والے شخص کے لئے مناسب نہیں کہ وہ کرپشن کے خلاف لیکچر دیں-انہوںنے کہا کہ زرداری صاحب کی کیا بات کریں وہ آج بھاشن دے رہے ہیں جنہوں نے قوم کے 6ارب روپے ہڑپ کئے ہوئے ہیں-بد قسمتی کی بات ہے کہ کرپشن میں ملوث شخص بھاش دے رہاہے او رآپ اس کا حوصلہ بھی دیکھیں- ایک اور سوال کے جواب میں وزیراعلی نے کہاکہ افسوس کی بات ہے کہ من گھڑت خبروں کو بہت اچھا لا جاتاہے جبکہ قوم کی کی گئی حقیر خدمت کو میڈیا میں جگہ نہیں ملتی ،اس لئے میڈیا بھی قصور وار ہی-جھوٹ ،الزام اور بہتان تراشی سے قوم کا کلچر بدلنے کی جو کوشش کی جا رہی ہے اگر اس کا راستہ نہ روکا گیا توہم سب ذمہ دار ہوں گی-میڈیا کو یہ بات منظر عام پر لانی چاہیے کہ صوبوں کو ملنے والے ترقیاتی وسائل کی لوٹ مار کس نے کی-اخبارات کو کالم لکھنا چاہیے کہ غریب قوم کے 6ارب روپے کس طرح لوٹے گئی- نندی پور پاور پلانٹ میں اس وقت کے وفاقی وزیر بابر اعوان نے لوٹ مار کی-سپریم کورٹ نے فیصلہ دیا کہ ان کے خلاف نیب کارروائی کرے -رینٹل پاور پلانٹس کے منصوبوں میں غریب قوم کے اربوں روپے ہڑپ کئے -این آئی سی ایل جیسے اداروں میں ڈاکے ڈالے گئی-پیراڈائز لیکس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ کس طرح سب سے بڑے خائن نے ملک بھر میں زمینوں پر قبضے کئی-سرکاری زمینیں سستے داموں خریدی گئی ، پیرا ڈائز لیکس نے نیازی صاحب او ردیگر کردار واضح کئے ہیں-یہ وہ چھبتے ہوئے سوالات ہیں جن کے جواب ڈھونڈنا ہیں-ایک سوال کے جواب میں کہا کہ میں الزامات کا قائل نہیں حقائق بتا رہا ہوں- اس وقت( ن) لیگ او رشریف خاندان کٹہرے میں کھڑے ہیں ،احتساب وہ ہوتا ہے جو بلاامتیاز اور سب کا ہواور نظر بھی آئی-ایک اور سوال کے جواب میں وزیراعلی نے کہاکہ سموگ کی کئی وجوہات ہیں جن لوگوں نے اس کے بارے میں آگاہی مہم نہیں چلائی میں نے اس کا نوٹس لیا ہے -عالمی اداروں کے مطابق ہندوستان کے مشرقی پنجاب میں فصلوں کے بھوسے کو جلانے او ردیگر وجوہات کی بنا پر سموگ کی صورتحال پیدا ہوئی ہی-یہ چیلنج ہے ہم اس سے نمٹیں گی-ایک سوال کے جواب میں وزیراعلی نے کہاکہ محمد نوازشریف ہی پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد ہیںاو روہ جو بھی فیصلہ کریں گے اسے من وعن آگے لے کر چلیں گی

Print Friendly, PDF & Email
نئی حلقہ بندیوں کی آئینی ترمیم پر حکومت اور اپوزیشن میں ڈیڈ لاک برقرار, شاہ محمود قریشی
پاکستان آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ایران کے اہم دورے پر، صدر روحانی سے ملاقات

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »