امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔     No IMG     افریقی ملک مراکش کی عدالت نے ایک بچی کی اجتماعی عصمت ریزی کے گھناؤنے واقعے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع     No IMG     دوست کو چاقو کے وارسے قتل کرنے والی حسینا کو سزائے موت     No IMG     بہاولپور جلسے میں کم تعداد پر عمران خان برہم لیکن پارٹی عہدیداران نے ایسی بات بتادی کہ کپتان کیساتھ جہانگیر ترین بھی حیران پریشان     No IMG     اکرام گنڈا پور کے قافلے پر خود کش حملہ، ڈرائیور شہید، تحریک انصاف کے امیدوار اور 2 پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد زخمی     No IMG     پاکستان اچھا کھیلاہم بہت براکھیلے،زمبابوین کھلاڑی کا اعتراف     No IMG     پاکستان سمیت دنیا بھر میں28 جولائی کو مکمل چاند گرہن ہوگا     No IMG     حنیف عباسی کا فیصلہ انصاف کے اصولوں پر مبنی نہیں , شہباز شریف     No IMG     سعودی عرب غیر ملکی ٹرک ڈرائیوروں پر پابندی سے ماہانہ 200ملین ریال کا نقصان ہوگا     No IMG     امریکہ میں کال سینٹر اسکینڈل میں ملوث 21 بھارتی شہریوں کو20 سال تک کی سزا     No IMG     اسرائیی حکومت نے القدس میں سرنگ کی مزید کھدائی کی منظوری دے دی     No IMG     ویتنام کے شمالی علاقوں میں سمندری طوفان سے 20 افراد ہلاک اور14 زخمی ہوگئے     No IMG     شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا ملنے سے اب این اے 60 راولپنڈی کا الیکشن یکطرفہ ہو جائے گا     No IMG     حنیف عباسی نے انسداد منشیات عدالت کی جانب سے دی گئی عمرقید کو ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان     No IMG     اسرائیل کے مجرمانہ حملوں میں 4 فلسطینی شہری شہید     No IMG    

ایران:کے بڑے شہروں میں وسیع پیمانے مظاہروں کا چوتھا دِن، روحانی کا عوامی بے چینی کا اقرار
تاریخ :   01-01-2018

ایرانی (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ عوام کو حکومت کے خلاف احتجاج اور تنقید کا حق حاصل ہے۔ اُنھوں نے یہ بات ملک بھر میں اسٹیبلشمنٹ کے خلاف احتجاجی مظاہروں کے چوتھے روز پہلے عام بیان میں کہی ہے۔

ایرانی سرکاری ذرائع ابلاغ نے کہا ہے کہ روحانی نے یہ مفاہمتی بیان اتوار کے روز احتجاج کے معاملے پر اپنی کابینہ سے گفتگو کے دوران دیا ہے۔ لیکن، اُنھوں نے روحانی کے حوالے سے یہ بات کہی ہے کہ مظاہرین کو چاہیئے کہ وہ ملک کے مسائل اور عوام کی زندگی میں بہتری کے معاملات پر توجہ مرکوز رکھیں۔

اپنے ٹوئٹر اکائونٹ پر فارسی زبان میں شائع بیان میں، اُنھوں نے کہا ہے کہ سماجی بے چینی پھیلانا اور لوگوں کی ملکیت تباہ کرنا نا قابلِ قبول ہے۔

سال 2009کے صدارتی انتخابات کے بعد اب تک یہ ایران میں ہونے والے سب سے بڑے اور تسلسل سے ہونے والا حکومت مخالف احتجاج ہے، جو اتوار کے روز بھی جاری رہا، جس میں ملک کے مختلف حصوں میں سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں نے سڑکوں پر ریلیاں نکالیں، جن کی اطلاع اِن مقامات کے مکینوں نے ‘وائس آف امریکہ’ کی فارسی سروس کو وڈیو کلپیں روانہ کرکے دی ہے۔

وی او اے کی فارسی سروس کو بھیجے گئے ایک وڈیو میں بتایا گیا ہے کہ مظاہرین نے تہران کی مرکزی شاہراہ، ولی اثر پر ایرانی پولیس کی وین کو الٹا دیا۔

دیگر وڈیو کلپوں میں دکھایا گیا ہے کہ ایران کے مغربی صوبہ آذربائیجان کے شمال مغرب میں واقع ارمیا شہر میں لوگ ”مرگ بَر مطلق العنان” کے نعرے مارے؛ جب کہ ایران کے مغربی صوبہ خوزستان کے شوشتر نامی شہر میں دیگر مظاہرین ”خوف زدہ نہ ہو، ہم سب اکٹھے ہیں” کے نعرے لگائے۔

سرکاری میڈیا کی جانب سے جاری کردہ بیان میں ایرانی صدر روحابی نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ پر بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اُنھیں ایران کے عوام کے ساتھ اپنی ہمدردی جتانے کا ”کوئی حق نہیں”، چونکہ کئی ماہ قبل، ٹرمپ نے ایران کو ”دہشت گرد” قوم قرار دیا ہے۔

ٹرمپ نے کہا تھا کہ اُن کی انتظامیہ ”اس بات پر قریب سے نظر رکھے گی” آیا احتجاجی مظاہرین کے خلاف ایرانی حکام کا رد عمل انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے زمرے میں تو نہیں آتا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*