چیف جسٹس کے اعزاز میں فُل کورٹ ریفرنس کاایک جج نے بائیکاٹ کردیا، جانتے ہیں وہ معزز جج کون ہیں ؟     No IMG     الیکشن کمیشن آف پاکستان نے گوشوارے جمع نہ کروانے پر 322 ارکان کی رکنیت معطل     No IMG     حکومت کا غیر قانونی موبائل فونز ضبط کرنے کا فیصلہ     No IMG     امریکہ نے پریس ٹی وی کی اینکر پرسن کو بغیر کسی جرم کے گرفتار کرلیا     No IMG     سندھ میں آئینی تبدیلی لائیں گے، فواد چودھری     No IMG     کسی کی خواہش پرسابق آصف زرداری کو گرفتار نہیں کرسکتے، نیب     No IMG     نئے پاکستان میں تبدیلی آگئی تبدیلی آگئی، اب لاہور ایئرپورٹ پر شراب دستیاب ہوگی     No IMG     برطانوی وزیراعظم ٹریزامےکیخلاف تحریکِ عدم اعتماد ناکام ہوگئی     No IMG     وزیراعظم کی رہائش گاہ پر وفاقی کابینہ کا ہنگامی اجلاس طلب     No IMG     گاڑیوں کی درآمد پر ٹیکس اب غیر ملکی کرنسی میں ادا کرنا ہوگا, وزیر خزانہ     No IMG     تائيوان, کے معاملے ميں مداخلت برداشت نہيں کی جائے گی, چين     No IMG     امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ترکی کی معیشت کو تباہ کرنے کے بیان سے یوٹرن لیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان معاشی ترقی کے وسیع مواقع ہی     No IMG     وزیراعظم سے سابق امریکی سفیر کیمرون منٹر کی ملاقات     No IMG     آپ لوگ کام نہیں کر سکتے چیف جسٹس نے اسد عمرکو دو ٹوک الفاظ میں کیا کہہ ڈالا     No IMG     شادی والے گھر میں آگ لگنے سے دلہن سمیت 4 خواتین جاں بحق     No IMG    

اگر ہم چاہیں تووفاقی حکومت کو گرا سکتے ہیں, قمر زمان کائرہ
تاریخ :   02-01-2019

لاہور ( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے صدر قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ اگر ہم چاہیں تووفاقی حکومت کو گرا سکتے ہیں لیکن ہماری کل یہ خواہش تھی اور نہ آج ہے،اگر حکومت کی یہی پالیسیاں جاری رہیں تو اس صورتحال میں اپوزیشن انہیں رائے راست پر

لانے کیلئے جائز حق کو استعمال کرے گی، جے آئی ٹی کا مقصد جعلی اکاؤنٹس کو پکڑنا نہیں بلکہ آصف علی زرداری کا گھیراؤ کرنا تھا،بلاول بھٹو پانچ جنوری کو لاہور آئیں گے اور ہائیکورٹ بار میں خطاب کریں گے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے پنجاب ایگزیکٹو کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔اس موقع پر جنرل سیکرٹری چوہدری منظور، سینئر نائب صدر اسلم گل سمیت دیگر بھی موجود تھے۔ قمر زمان کائرہ نے کہا کہ تحریک انصاف کے وزراء نہ کسی ادارے اور نہ ہی کسی قانون کو مانتے ہیں، میڈیا کیوں نہ پوچھے کہ ایک وزیر کی کمپنی کو ٹھیکہ کیوں دیا گیا، کیا یہ مفادات کا ٹکراؤ نہیں۔ آج لوگوں کے گھر گرائے جارہے ہیں، روزگار چھینا جارہا ہے، معیشت او ربرآمدات کا کیا حال ہے اور یہ سیاسی مخالفین پر ڈونگرے برسا رہے ہیں۔کہتے تھے کہ قرضے نہیں لیں گے اور آج آٹھ فیصد شرح سود پر فارن کرنسی میں قرضے لینے جارہے ہیں، حکومت نے ابھی تک کیا کچھ نہیں لیکن اربوں روپے کا قرض چڑھا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ ایک طرف کی ہے اس میں ہمارا موقف نہیں لیا گیا جو ابھی آنا ہے۔کہا جارہاہے کہ سندھ حکومت گرا دیں گے، گورنر راج لگانے کی باتیں ہو رہی ہیں، آپ کی حیثیت ہے سندھ حکومت گرانے کی۔ ہم نے ضرور کہا ہم وفاقی حکومت گرا سکتے ہیں لیکن ہم اسے گرانا نہیں چاہتے، ہمارا شرو ع دن سے موقف ہے کہ انہیں قوم کے سامنے ایکسپوز ہونے دیں اور عوام کو پتہ چلے کہ ان کے عزائم کیا ہیں۔ جب ساری اپوزیشن جماعتیں کہہ رہی تھیں کہ بائیکاٹ کیا جائے اگر پیپلز پارٹی اس کا حصہ بن جاتی تو یہ حکومت پیدا ہی نہیں ہو سکتی تھی لیکن ہم نے واضح کہا کہ ہم عدم استحکام پیدا نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی کے رویے اور اس کی رپورٹ کی مذمت کرتا ہوں۔جے آئی ٹی میں جو چارٹ دکھایا گیا ہے اس میں آصف زرداری کا نام لکھ کر سرخ دائر ہ لگایا گیا ہے۔ حیرانگی ہے کہ یہ کرنا کیا چاہتے ہیں۔ جے آئی ٹی کا مقصد جعلی اکاؤنٹس پکڑنا نہیں بلکہ آصف زرداری کا گھیراؤ کرنا ہے، لیکن نہ ہم کل ڈرے تھے اور نہ آج ڈریں گے۔ ہم عدالت میں جواب دیں گے اور سر خرو ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ عدالت کے واضح حکم کے بعد ای سی ایل سے نام نکالنے پر ریو کمیٹی بنانے کا سنا ہے لیکن ہم حکومت سے گزارش نہیں کررہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے بڑا تماشہ کیا کرنا چاہتے ہو کہ کسی جے آئی ٹی اور فورم پر وزیر اعلیٰ سندھ کو نہیں بلایا گیا لیکن ان کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت گورننس کی دھجیاں اڑا رہی ہے اس وقت پنجاب میں پولیس اور دیگر محکموں میں جتنی منفی سیاسی مداخلت ہو رہی ہے اس سے پہلے کبھی نہیں ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو پانچ جنوری کو لاہور آئیں گے اور ہائیکورٹ بار کے ممبران اورکارکنوں سے خطاب کریں گے۔ قمر زمان کائرہ نے کہا کہ حکومت نے خارجہ پالیسی میں بھی تماشہ لگایا ہوا ہے۔ ہم حکومت کو گرانا نہیں چاہتے تاکہ یہ کل یہ دہائی نہ دیں کہ ہمیں چلنے نہیں دیا گیا ورنہ ہم عوام کیلئے آسمان سے تارے توڑ لاتے۔ لیکن اگر یہی پالیسیاں جاری رہیں تو اپو زیشن انہیں رائے راست پر لانے کیلئے اپنا جائز حق استعمال کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم پانامہ جے آئی ٹی کے حق میں بھی نہیں تھے،خاص طو رپر اس جے آئی ٹی جس میں انٹیلی جنس کے لوگ شامل ہوں۔ انہوں نے کہا کہ اصغر خان کا فیصلہ 2012ء کے آخر میں آیا تھا اور اس وقت ہماری حکومت ختم ہو رہی تھی لیکن ہمارے دور میں اس کے خلاف کچھ نہیں کہا گیا، مسلم لیگ (ن) کے دور میں اس پر عمل نہیں ہوا لیکن کچھ کہا بھی نہیں گیا لیکن پی ٹی آئی جو اس پر بڑا زور شور کرتی تھی اس کے دور میں تو ایف آئی اے نے فائل کو ہی بند کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کسی ادارے کے خلاف نہیں ہم نے ہمیشہ اداروں کے آئینی کردار کی بات کی ہے اور اس کی ہم نے قیمت ادا بھی کی ہے اور کر بھی رہے ہیں۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اگر ہم چاہیں تو حکومت گرانے کیلئے نمبر بآسانی پورے کر سکتے ہیں لیکن ہماری کل یہ خواہش تھی او رنہ آج ہے۔ چوہدری منظور نے کہا کہ سندھ میں اٹھارہ اٹھا رہ گھنٹے بجلی بند رکھی گئی،پانی کم کیا گیا، گیس بند کی گئی اب قابل تقسیم محاصل سے 94ارب کم جاری کیا گیا ہے جس سے ترقیاتی منصوبے رکے ہوئے ہیں۔ وزیر اعلیٰ سندھ کا نام ای سی ایل میں ڈال کر بحران پیدا کرنے کی کوشش کی گئی۔ پی ٹی آئی نے مینڈیٹ چوری کیا ہوا ہے اس لئے انہیں سندھ کا مینڈیٹ ہضم نہیں ہو رہا اور اس پر ڈاکہ ڈالنے چلے تھے۔ پی ٹی آئی کی حکومتیں مکڑی کے تار سے بندھی ہوئی ہیں، بلوچستان میں انکی حکومت دو، وفاق میں چھ ووٹ ووٹوں پر کھڑی ہے جبکہ سینیٹ میں اقلیت ہیں،پنجاب میں ان کی اکثریت جیسے ہے سب جانتے ہیں، وفاق چار پلرز پر کھڑا ہوتا ہے اگر اس میں ایک پلر بھی گرا تو ساری عمارت زمین بوس ہو جائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email
عراق کے صدر برہم صالح غیر اعلانیہ دورے پر ترکی کے دارالحکومت انقرہ پہنچ گئے
بھارتی وزير اعظم مودی کا پاکستان کو سدھارنے کا عزم
Translate News »