بھارت اور چین کے مابین پیر کے روز بیجنگ میں باہمی فیصلہ کن مذاکرات کا آغاز     No IMG     بھارتی وزیر اعظم,ہمارا پائلٹ واپس نہ کیا جاتا تو اگلی رات خون خرابے کی ہوتی     No IMG     ملکی سیاسی پارٹیاں ووٹ تو غریبوں ،محنت کشوں کے نام پر لیتی ہیں مگر تحفظ جاگیرداروں اور مافیاز کو دیتی ہیں ,جواد احمد     No IMG     افغان سپریم کورٹ نے صدر کے انتخاب تک صدر اشرف غنی کی مدت صدارت میں توسیع کردی     No IMG     آزاد کشمیر میں منڈا بانڈی کے مقام پر ایک جیپ کھائی میں گرنے سے 5 افراد ہلاک     No IMG     مصرمیں صدرکےاختیارات میں اضافے کےلیے ہونےوالے تین روزہ ریفرنڈم میں ووٹ ڈالنےکا سلسلہ جاری ہے     No IMG     لاہور میں 3 منزلہ خستہ حال گھر زمین بوس ہونے کے نتیجے میں خاتون سمیت 6 افراد جاں بحق جبکہ 4 افراد زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان ایران کے پہلے سرکاری دورے پر تہران پہنچ گئے     No IMG     سری لنکا میں کل ہونے والے آٹھ بم دھماکوں کے نتیجے میں 300 افراد ہلاک اور 500 زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے مکران کوسٹل ہائی وے پر دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکام سے واقعے پر رپورٹ طلب کر لی     No IMG     افغانستان اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑتے دکھائی دے رہے ہیں     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کا افتتاح کردیا     No IMG     ایران کے وزیر خارجہ کی ترک صدر اردوغان کے ساتھ ملاقات     No IMG     عمان کے وزیر خارجہ نے اپنے ایک بیان میں شام کی عرب لیگ میں واپسی پر تاکیدکی     No IMG     سعودی عرب کی ایک کمپنی نے ترکی میں 100 ملین ڈالر کا سرمایہ لگانے کا اعلان     No IMG    

اٹلی ورلڈ کپ ٹورنامنٹ سے باہر ہو گیا۔
تاریخ :   14-11-2017

اٹلی  (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) ورلڈ کپ کوالیفائنگ راؤنڈ میں سویڈن کے ہاتھوں ایک صفر سے شکست کے بعد عالمی مقابلے سے باہر ہو گیا۔ اس عالمی مقابلے کی چھ مرتبہ فاتح اطالوی قومی ٹیم گزشتہ ساٹھ برس سے مسلسل فٹبال ورلڈ کپ فائنل مقابلوں کا حصہ رہی۔

ساٹھ برس بعد ورلڈ کپ فائنل مقابلوں تک رسائی حاصل کرنے میں ناکامی کے بعد اطالوی کھلاڑی اور شہری غم زدہ تو دکھائی دیے لیکن دنیا بھر میں چھ مرتبہ ان مقابلوں کی اس فاتح ٹیم کے شائقین میں بھی مایوسی دیکھی گئی۔ یورپی ممالک کے مقامی میڈیا میں بھی یہی خبر سرخیوں کی زینت دکھائی دی۔

جرمنی کے کثیر الاشاعتی اخبار بلڈ نے اپنی ہیڈ لائن میں لکھا، ’’خود پر فخر کرنے والے اطالوی سویڈن کی بہادر ٹیم کے ہاتھوں شکست کھانے کے بعد اچانک بہت چھوٹے دکھائی دیے۔‘

اسی طرح ’زود ڈوئچے سائٹنگ‘ نے لکھا کہ اس رات کا اختتام ’آنسوؤں اور خاموشی‘ کے ساتھ ہوا۔ اس جرمن اخبار نے اپنی شہ سرخی میں یہ بھی لکھا کہ اس اہم میچ سے قبل ’’اطالوی ٹیم میں جیت کا جذبہ نمایاں دکھائی دیا، لیکن صرف جذبے سے فٹبال کا میچ نہیں جیتا جاتا۔‘‘

فائنل مقابلوں تک باآسانی رسائی حاصل کرنے والے ملک اسپین کے میڈیا میں بھی اٹلی کی اس تاریخی ناکامی کا ذکر نمایاں رہا۔ ایک ہسپانوی اخبار نے لکھا، ’’اطالوی ٹیم کو گیم کے بارے میں کچھ معلوم نہیں تھا‘‘۔ جب کہ سپورٹ نامی ایک معروف میگزین نے اسے ’اطالوی حقیقت‘ قرار دیا۔

معروف اطالوی گول کیپر بفون کے بیس سالہ کیریئر کا اختتام بھی اسی میچ کے ساتھ ہوا۔ میچ کے بعد بفون کی آنسوؤں سے لبریز آنکھیں اور جذباتی انداز میں قوم سے معافی مانگنا نہ صرف سوشل میڈیا صارفین میں گفتگو کا محور بنا رہا بلکہ میڈیا نے بھی اسے خاص طور پر نمایاں کیا۔ مارکا نامی ہسپانوی اخبار نے بفون کی تعریف میں لکھا، ’’اٹلی، بفون ایسے فیئر ویل کے مستحق نہیں تھے۔‘‘اٹلی کی طرح ہالینڈ کی ٹیم بھی اس ورلڈ کے لیے کوالیفائی نہیں کر پائی۔ ہالینڈ کے اخبارات میں بھی اٹلی کے ساتھ ہمدردی دکھائی دی۔ ایک اخبار نے لکھا، ’’ہالینڈ کے بعد ایک اور اہم ٹیم ان مقابلوں سے باہر ہو گئی۔‘‘

Print Friendly, PDF & Email
عدالت نے الیکشن ایکٹ 2017ء میں ختم نبوت سے متعلق ختم کی گئی تمام ترامیم کو معطل کرنے کا حکم دیا
نیوکلیئرپروگرام کوتباہ کرنےکی منصوبہ بندی ہورہی ہے،ہماری امداد بند اوربھارت کودی جا رہی ہے،مولانا فضل الرحمن

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »