وینزویلا سے تعلق رکھنے والی 25 سالہ نوجوان لڑکی نے ملکہ حسن کا ٹائٹل جیت لیا     No IMG     حزب اللہ کی ايک اور سرنگ دريافت ,اسرائیلی فوج کا دعوی     No IMG     عوام اپنے مسائل کے حل کیلیے وزیر اعظم کمپلینٹ پورٹل کا استعمال کریں،وزیراعظم     No IMG     سابق صدر آصف زرداری نے پنجاب کی بجلی بند کرنے کی دھمکی دے دی     No IMG     رشوت کا سب سے بڑا ناسور پٹواری ہیں, چیف جسٹس     No IMG     فرانسیسی پولیس نے پیلے رنگ جیکٹس والے مظاہرین پر شدید تشدد     No IMG     اسلام آباد تھانہ سہالہ میں شدید فائرنگ, بدنام زمانہ شیرپنجاب جاں بحق     No IMG     اگر گرفتار ہوا تو کیا ہوگا کیونکہ جیل تو میرا دوسرا گھر ہے, آصف علی زرداری     No IMG     امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کا نیا وزیر داخلہ مقرر کرنے کا اعلان     No IMG     اٹلی میں ہزاروں مظاہرین نے مہاجر مخالف قوانین کے خلاف مظاہرہ     No IMG     پاکستانیوں کے دل پر آرمی پبلک سکول (اے پی ایس ) پشاور میں لگنے والے زخم کو چار سال مکمل ہوگئے     No IMG     رائے ونڈ, چینی انجنئیر، جیا جینیفر پر دل ہار بیٹھا     No IMG     سپین میں یہ بیٹا ایک سال تک ماں کی لاش کے ساتھ کیوں رہا ؟     No IMG     سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان نے صحافی جمال خاشقجی کے قاتل سعود القحطانی کو معاف کردیا     No IMG     سری لنکن صدر نے برطرف وزیر اعظم کو دوبارہ وزیر اعظم منتخب کرلیا     No IMG    

اٹلی میلان میں ٹرین حادثہ، تین ہلاک، سو سے زائد زخمی
تاریخ :   25-01-2018

اٹلی(ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) شہر میلان شہرکے قریب ایک مسافر ٹرین کو پیش آنے والےحادثے کے نتیجے میں تین افراد ہلاک جبکہ 110 کے قریب زخمی ہو گئے ہیں۔ حکام کے مطابق ان زخمیوں میں سے 10 افراد کی حالت تشویشناک ہے۔
جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے نے یہ بات مقامی حکومت کی خاتون ترجمان کے حوالے سے بتائی ہے۔ چھ بوگیوں پر مشتمل یہ ٹرین مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے پانچ بجے کریمونا نامی شہر سے روانہ ہوئی جبکہ صبح سات بجے کے قریب یہ ٹرین پیوٹیلو نامی شہر کے قریب پٹری سے اُتر گئی۔ کریمونا شہر میلان سے 90 کلومیٹر جنوب مشرق میں واقع ہے۔صبح ساڑھے پانچ بجے کریمونا نامی شہر سے روانہ ہوئی جبکہ صبح سات بجے کے قریب یہ ٹرین پیوٹیلو نامی شہر کے قریب پٹری سے اُتر گئی

میلان کی نائب پولیس سربراہ کیارا امبروزیو نے میڈیا کو بتایا، ’’یہ ایسا وقت ہے جب زیادہ تر لوگ سفر کرتے ہیں اسی وجہ سے یہ ٹرین بھری ہوئی تھی۔‘‘
مقامی میڈیا کے مطابق امدادی اداروں کو حادثے کا شکار ہونے والی اس گاڑی سے ہلاک شدگان اور زخمیوں کو نکالنے میں قریب تین گھنٹے لگے۔ ٹیلی وژن پر دکھائی جانے والے مناظر میں زخمیوں کو بذریعہ ہیلی کاپٹر قریبی ہسپتالوں تک منتقل کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

ڈی پی اے کے مطابق ٹیلی وژن فوٹیج میں یہ بھی دیکھا جا سکتا ہے کہ صرف درمیانی بوگیاں ہی پٹری سے اُتریں، جس کا مطلب ہے کہ یہ حادثے کی وجہ ریلوے سوئچ کی خرابی ہے۔

اس حادثے میں زخمی ہونے والے ایک مسافر نے مقامی میڈیا کو بتایا، ’’سب کچھ ٹھیک ٹھاک جا رہا تھا، اچانک ٹرین نے جھٹکے لینا شروع کر دیے، پھر ہم نے ایک زور دار آواز سنی اور بوگیاں پٹری سے اُتر گئیں۔‘‘

حادثے کے فوری بعد پولیس اور آگ بجھانے والے عملے کے علاوہ تفتیش کار بھی فوری طور پر جائے حادثہ پر پہنچے اور انہوں نے حادثے کی وجہ جاننے کے لیے کی جانے والی تحقیقات کے سلسلے میں ٹرین کے ڈرائیور سے سوال وجواب کیے۔ اس حادثے کے بعد میلان سے مشرق کی طرف سے جانے والی لائن پر ٹرینوں کی آمد و رفت معطل کر دی گئی۔
اٹلی میں گزشتہ ہلاکت خیز ٹرین حادثہ جولائی 2016 میں ہوا تھا جب دو ٹرینوں کے درمیان تصادم کے نتیجے میں 23 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ یہ حادثہ اٹلی کے جنوب مشرقی شہر باری کے قریب پیش آیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فلسطینیوں کو ایک مرتبہ پھر دھمکی دی
یورپی یونین رواں برس کے وسط تک یونین میں پناہ کے یکساں قوانین بنانے کی کوشش

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »