امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔     No IMG     افریقی ملک مراکش کی عدالت نے ایک بچی کی اجتماعی عصمت ریزی کے گھناؤنے واقعے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع     No IMG     دوست کو چاقو کے وارسے قتل کرنے والی حسینا کو سزائے موت     No IMG     بہاولپور جلسے میں کم تعداد پر عمران خان برہم لیکن پارٹی عہدیداران نے ایسی بات بتادی کہ کپتان کیساتھ جہانگیر ترین بھی حیران پریشان     No IMG     اکرام گنڈا پور کے قافلے پر خود کش حملہ، ڈرائیور شہید، تحریک انصاف کے امیدوار اور 2 پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد زخمی     No IMG     پاکستان اچھا کھیلاہم بہت براکھیلے،زمبابوین کھلاڑی کا اعتراف     No IMG     پاکستان سمیت دنیا بھر میں28 جولائی کو مکمل چاند گرہن ہوگا     No IMG     حنیف عباسی کا فیصلہ انصاف کے اصولوں پر مبنی نہیں , شہباز شریف     No IMG     سعودی عرب غیر ملکی ٹرک ڈرائیوروں پر پابندی سے ماہانہ 200ملین ریال کا نقصان ہوگا     No IMG     امریکہ میں کال سینٹر اسکینڈل میں ملوث 21 بھارتی شہریوں کو20 سال تک کی سزا     No IMG     اسرائیی حکومت نے القدس میں سرنگ کی مزید کھدائی کی منظوری دے دی     No IMG     ویتنام کے شمالی علاقوں میں سمندری طوفان سے 20 افراد ہلاک اور14 زخمی ہوگئے     No IMG     شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا ملنے سے اب این اے 60 راولپنڈی کا الیکشن یکطرفہ ہو جائے گا     No IMG     حنیف عباسی نے انسداد منشیات عدالت کی جانب سے دی گئی عمرقید کو ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان     No IMG     اسرائیل کے مجرمانہ حملوں میں 4 فلسطینی شہری شہید     No IMG    

ایران

  • امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔

    ایران ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) کے صدر حسن روحانی نے بیرون ملک ایرانی سفراء کے اجتماع  سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی قوم امریکی دباؤں میں ہر گز نہیں آئے گي ۔ امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایرانی سفراء بیرون ملک ایرانی تاریخ، ادب ، ثقافت اور ایرانی قوم کے نمائندے ہیں ۔ ایرانی سفراء تمام ایرانیوں کے نمائندہ ہیں۔

    امریکہ کی موجودہ حکومت نے عالمی برادری کے ساتھ جنگ و جدال شروع کررکھا ہے امریکی حکومت صرف اپنے مفادات کو تحفظ فراہم کرنے کی کوشش کررہی ہے اور دوسرے ممالک کے مفادات کو پامال کررہی ہے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ امریکہ کی طرف سے بین الاقوامی حقوق کی مخالفت، عالم اسلام کی مخالفت اور مسئلہ فلسطین کی مخالفت  اس دور میں بام عروج پر پہنچی ہوئی ہے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ اسرائيل کی ماہیت اور حقیقت کے بارے میں ہماری بات بالکل درست  ثابت ہوئي ہے کہ اسرائیل انسانی حقوق کا سب سے بڑا دشمن ہے آج ثابت ہوگيا کہ اسرائیلی حکومت نسل پرست حکومت ہے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ آج دنیا میں ایرانی سفارتکاروں کی بہت بڑي ذمہ داری ہے ۔ امریکہ ایرانی قوم کا سب سے بڑا دشمن ہے اور ہمیں دشمن کی معاندانہ پالیسیوں کے بارے میں ہوشیار اور آگاہ رہنا چاہیے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایران اور ایرانی قوم کے خلاف امریکی سازشوں کا سلسلہ جاری ہے ہم نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کے ذریعہ ایران کے ایٹمی پروگرام کے خلاف 12 سالہ امریکی سازشوں کو ناکام بنادیا۔ ہم نے علاقائي ممالک کی دہشت گردی کے خلاف حمایت کرکے داعش کا عراق و شام سے خاتمہ کردیا ۔ہمارا ہمسایہ ممالک کے ساتھ قریبی تعاون جاری ہے۔ امریکہ ایرانی قوم کے ساتھ علاقائی اور عالمی اقوام کا بھی دشمن ہے اور ایرانی قوم کو امریکہ کی ظالمانہ اور تسلط پسندانہ  پالیسیوں کے خلاف استقامت اور پائداری پر فخر حاصل ہے۔ ہم امریکہ کی ظالمانہ اور تسلط پسندانہ پالیسیوں کا مقابلہ جاری رکھیں گے اور امریکہ کو اللہ تعالی کی مدد اور نصرت کے ساتھ شکست سے دوچار کردیں گے۔

  • سعودی عرب کے شہریوں نے 9000 امریکی شہریوں کو ہلاک اور زخمی کردیا۔یرانی وزير خارجہ

    ایران ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے اپنے ایک ٹوئیٹر بیان میں  کہا ہے کہ امریکی ہتھیار امریکی شہریوں کو بھی تحفظ فراہم نہیں کرسکے۔ سعودی عرب کے 15 شہریوں نے 9000 امریکی شہریوں کو ہلاک اور زخمی کردیا۔ انھوں نے کہا کہ امریکہ دنیا میں بڑی مقدار میں ہتھیار فروخت کرکے عدم استحکام پیدا کررہا ہے اور وہ بجٹ جو بہترین مستقبل کو بہتر بنانے کے لئے صرف کیا جاسکتا ہے امریکہ اسے ہتھیاروں کی ساخت میں صائع کررہا ہے۔ جواد ظریف کا کہنا ہے کہ فوجی ساز و سامان پر 35 فیصد بجٹ خرچ کرنے والا امریکہ اپنے ہی شہریوں کو تحفظ فراہم نہیں کرسکا ۔ 11 ستمر کے واقعہ میں سعودی عرب کے 15 شہریوں نے امریکہ کے 9000 شہریوں کو ہلاک اور زخمی کردیا ہے۔

  • نئی امریکی پابندیوں کے خلاف ایران عالمی عدالت انصاف میںباقاعدہ شکایت بھی درج کرا دی

    ایران( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) نے کہا ہے کہ وہ امریکا کی طرف سے سفارتی کاری اور قانونی ذمہ داریوں کی ہتک کے باوجود قانون کی بالا دستی کے لیے پرعزم ہے لیکن یہ بھی لازمی ہے کہ عالمی قوانین کی خلاف ورزیوں کی امریکی عادت کے خلاف مزاحمت کی جائے۔

    خبر رساں ادارے اے ایف پی نے ایرانی حکومت کے حوالے سے بتایا ہے کہ تہران نے واشنگٹن کی طرف سے عالمی جوہری ڈیل سے دستبرداری پر امریکا کے خلاف شکایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ اقدامات بین الاقوامی قوانین اور عالمی سفارت کاری کے خلاف ہیں۔ اس سلسلے میں ایران نے امریکا کے خلاف بین الاقوامی عدالت انصاف میں اب ایک باقاعدہ شکایت بھی درج کرا دی ہے۔

    مئی میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران اور عالمی طاقتوں کے مابین سن دو ہزار پندرہ میں طے پانی والی ایک تاریخی ڈیل سے الگ ہونے کا اعلان کر دیا تھا۔ اس کے نتیجے میں امریکا کی طرف سے ایران پر عائد پابندیوں کو بحال کیا جا رہا ہے۔

    تاہم ایران کا کہنا ہے کہ امریکا کی طرف سے اس ڈیل سے دستبرداری متعدد عالمی ذمہ داریوں کے ساتھ ساتھ سن انیس سو پچپن میں ایران اور امریکا کے مابین بہتر تعلقات کی خاطر طے پانے والی ایک ڈیل کی بھی خلاف ورزی ہے۔ Treaty of Amity نامی یہ سمجھوتہ ایران میں 1979ء کے انقلاب سے قبل ہوا تھا، جو اب تک ان دونوں ممالک کے مابین جاری قانونی جنگوں میں استعمال کیا جاتا ہے۔

    ایران میں اسلامی انقلاب کے بعد تہران میں امریکی سفارتخانے پر دھاوا بولے جانے کے بعد سن 1980 میں ان دونوں ممالک کے سفارتی تعلقات ختم ہو گئے تھے، جو ابھی تک بحال نہیں ہو سکے۔

    عالمی جوہری ڈیل سے الگ ہونے کے بعد امریکی حکومت ایران پر پابندیاں بحال کر رہی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ یہ پابندیاں دو مراحل میں عائد کی جائیں گی۔ پہلا مرحلہ اگست میں جبکہ دوسرا نومبر میں شروع ہو گا۔

    ان پابندیوں میں ایسی یورپی کمپنیوں کو بھی نشانہ بنایا جائے گا، جو ایران میں بزنس کر رہی ہیں اور ساتھ ہی ایران کی عالمی منڈی میں تیل کی فروخت کو بھی رکوانے کی کوشش کی جائے گی۔

    اس عالمی جوہری ڈیل میں شامل دیگر فریقین کی کوشش ہے کہ اس تاریخی معاہدے کو بچایا جائے۔ خدشہ ہے کہ اس ڈیل کی ناکامی کے سبب ایران جوہری ہتھیاروں کی تیاری کی کوشش دوبارہ شروع کر سکتا ہے، جو علاقائی اور عالمی امن کے لیے خطرہ ہو گا۔

  • امریکا عالمی برادری میں شدید تنہائی کا شکار ہو چکا ہے، ایرانی صدر

    تہران( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ امریکا عالمی برادری میں شدید تنہائی کا شکار ہو چکا ہے۔ روحانی کے بقول ایران پر پابندیاں عائد کرنےکے معاملے میں امریکا اس قدر الگ تھگ ہو کر رہ گیا ہے، جس کی پہلے کوئی مثال نہیں ملتی۔ آج ہفتے کو ٹیلی وژن سے نشر کیے گئے اپنے ایک خطاب میں ایرانی صدر نے مزید کہا کہ اس غیر قانونی اقدام کی وجہ سے امریکا کے اتحادی بھی اس سے دور چلے گئے ہیں۔ روحانی کا یہ بیان ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ برطانیہ کے موقع پر کیے جانے والے احتجاجی مظاہروں کے تناظر میں سامنے آیا ہے۔

  • ایران کی مسلح افواج کے چیف آف اسٹاف جنرل محمد باقری اعلی فوجی وفد کے ہمراہ پاکستان کے دورے پر روانہ

    تہران ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) ایرانکی مسلح افواج کے چیف آف اسٹاف  جنرل محمد باقری ایرانی فوج کے اعلی افسروں کے ایک وفد کے ہمراہ پاکستانی فوج

    کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی دعوت پر عنقریب  پاکستان کے دورے پر روانہ ہوں گے۔ اس سفر میں تہران اور اسلام آباد کے درمیان باہمی تعلقات کے فروغ، مشترکہ سرحدوں پر باہمی تعاون ، دہشت گردی کے خلاف جنگ  ، علاقائی و عالمی امور اور عالم اسلام کو در پیش چيلنجوں کے بارے میں تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

  • ایران نے بھارت کو بہت بڑی دھمکی دے ڈالی

    تہران ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) ایران کی حکومت نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت کے ایران سے پیٹرول کی درآمد بند کرنے کی صورت میں اس ملک کیلئے جاری خصوصی مراعات کو بھی بند کر دیا جائیگا۔جمعہ کو بھارت کیلئے ایران کے چارج ڈی افئیر مسعود رضوانیان نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اگر بھارت امریکی دباؤ میں آکر ایران سے پیٹرول کی درآمد کو بند کر ے گا اور ایرانی پیٹرول کی بجائے سعودی عرب،روس،عراق اور امریکہ جیسے ممالک سے پیٹرول خریدے گا تو اسے تہران سے حاصل کردہ خصوصی مراعات سے بھی محروم

    ہونا پڑے گا،امریکہ کے ایران سے پیٹرول کی خرید بند کرنے کیلئے اپنے اتحادیوں پر ڈالے گئے دباؤ کا ذکر کرتے ہوئے رضوانیان کا کہنا تھا کہ بھارت ایک قابل بھروسہ توانائی ساجھے دار ہے۔انہوں نے بھارت کے چابہار بندرگاہ کی توسیع کے منصوبے کیلئے کئے گئے وعدوں کو بھی پورا نہ کرنے پر تنقید کی اور اسٹریٹجک حوالے سے منصوبے کی اہمیت کی جانب توجہ مبذول کروائی۔انہوں نے کہا کہ منصوبے کی تکمیل کیلئے ہم بھارت کی جانب سے ضروری اقدامات کرنے کے منتظر ہیں۔ایرانی سفارت کار مسعود رضوانیان نے کہا کہ باہمی تعلقات کو فروغ دینے کیلئے دونوں ملکوں کا ہر شعبے میں موجودہ صلاحیت سے استفادہ کرنا ضروری ہے۔

  • ایران کی پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقہ مستونگ میں انتخابی ریلی پر خودکش حملے کی مذمت

    ایران ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) کی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقہ مستونگ میں انتخابی ریلی پر خودکش حملے کی مذمت کرتے ہوئے پاکستانی حکومت، عوام اور متاثرہ خاندانوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔ ترجمان نے خودکش حملے کو بزدلانہ قراردیتے ہوئے کہا کہ خودکش حملہ اسلامی، انسانی اور اخلاقی اقدار کے خلاف ہے جس کی جنتی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

  • ایران کا میزائل نظام مکمل طور پر متعارف اور دفاعی نوعیت کا ہے,ایرانی وزارت خارجہ

    ایران (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی  نے ایران کے میزائل پروگرام کے بارے میں نیٹو کی تشویش کو رد کرتے ہوئےکہا ہے کہ ایران کا میزائل نظام مکمل طور پر متعارف اور دفاعی نوعیت کا ہے۔۔ بہرام قاسمی نے نیٹو  کے اعلامیہ کو ایران کے خلاف تکراری اور بے بنیاد الزامات پر مبنی قراردیتے ہوئے کہا کہ ہم نیٹو کے اعلامیہ کو ماضی کی طرح رد کرتے ہیں ۔ ترجمان نے کہا کہ نیٹو بھی امریکہ کا ایک ذیلی فوجی ادارہ ہے جو خطے میں امریکی مفادات کو تحفظ فراہم کررہا ہے۔ ترجمان نے ایران کے میزائل پروگرام کو متعارف اور دفاعی قراردیتے ہوئے کہا کہ ایران ملکی اور قومی دفاع کے سلسلے میں کسی کی دھونس اور دھمکی کو برداشت نہیں کرےگا۔ ترجمان نے کہا کہ ایران کے متعارف اور دفاعی میزائل نظام کے بارے میں نیٹو کی تشویش غلط اور بے معنی ہے۔

  • ایران کے صوبہ مازندران کے صدر مقام ساری کی جامع مسجد میں آگ لگ گئی ۔ اس حادثے میں مسجد راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئی جبکہ 12 افراد زخمی

    ایران (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) صوبہ مازندران کے صدر مقام ساری کی قدیم اور جامع مسجد میں بجلی کی تاروں کے اتصال کی وجہ سے آگ لگ گئی ۔ اس حادثے میں مسجد راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئی ۔جبکہ 12 افراد زخمی ہوگئے جنھیں اسپتال منتقل کردیا گيا ہے۔ صوبہ مازندران کے گورنر موقع پر پہنچ گئے ہیں اور فائربریگیڈ کا عملہ بھی آگ پر قابو پانے کی کوشش کررہا ہے ۔ ذرائع کے مطابق مسجد سے ملحقہ دکانوں کو بھی نقصان پہنچا ہے امدادی ٹیمیں اپنے فرائض انجام دی رہی ہیں۔ مازندران کے گورنر کے مطابق ساری کی جامع مسجد قومی ورثہ میں ثبت ہےاور مسجد کی تعمیر نو قومی ورثہ کا ادارہ عوامی تعاون کے ساتھ انجام دےگا۔

  • بس اور تیل ٹینکر میں تصادم کے نتیجے میں 13 افراد جاں بحق

    ایران (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو)کے شہر سنندج میں آج صبح مسافر بس اور تیل ٹینکر میں تصادم ہوا جس کے نتیجے میں 13 افراد موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے۔

  • ایران کے نمائندے نے اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل کے اجلاس میں فلسطینی اور یمنی بے گناہ بچوں کے قتل عام کو روکنے کا مطالبہ

    ایران (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو)کے نمائندے غلام علی خوشرو  نے اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل کے اجلاس میں فلسطینی اور یمنی بے گناہ بچوں کے قتل عام کو روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔ ایرانی نمائندے نے کہا کہ اسرائيل کی غاصب حکومت کی طرف سے فلسطینی بچوں کے قتل عام کا سلسلہ جاری ہے اور اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے ابھی تک اسرائیل کو بچوں کے حقوق پامال کرنے اور قتل کرنے والے ممالک کی فہرست میں قرار نہیں دیا ہے۔ جناب خوشرو نے حلیہ دنوں میں وطن واپسی کی ریلیوں پر اسرائیلی فوج کے بہیمانہ حملوں میں فلسطینی بچوں کی شہادت پر تشویش کا اظءار کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل دنیا میں بچزں کے قتل عام میں سرفہرست ہے اور اقوام متحدہ کے سکریٹری نجرل کو چآہیے کہ وہ اسرائیل کو بچوں کے حقوق نقض کرنے والے ممالک کی فہرست میںق راردے۔

    اقوام متحدہ میں ایران کے نمائندے نے یمن میں سعودی عرب  اور امارات کے مجرمانہ اور بہیمانہ ہوائي حملوں میں یمنی بچوں کے قتل عام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یمنی بچوں کی صورتحال بھی فلسطینی بچوں کی طرح تشویشناک ہے اور اقوام متحدہ کو یمنی بچوں کے بارے میں بھی اپنی ذمہ داریوں پر عمل کرنا چاہیے۔ فلسطین اور یمن میں بچزں کے قتل عام کو رکوانا چآہیے انھوں نے کہا کہ اگر چہ سعودی عرب کا نام بچوں کے قتل عام کرنے والے ممالک کی فہرست سے حذف کردیا گیا ہے لیکن اس سے حقیقت تبدیل نہیں ہوسکتی۔

  • ایران میں پولیس نے سوشل میڈیا بالخصوص ‘انسٹاگرام’ پر رقص کی ویڈیو پوسٹ کرنے کے الزام میں متعدد خواتین کوگرفتار لیا

    ایران (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) میں پولیس نے سوشل میڈیا بالخصوص ‘انسٹاگرام’ پر رقص کی ویڈیو پوسٹ کرنے کے الزام میں متعدد خواتین کو حراست میں لیا ہے۔ ان میں ایک 18 سالہ دوشیزہ بھی شامل ہے۔

    انسٹا گرام پر متنازع ویڈیو پوسٹ کرنے کے الزام میں شوقیہ رقاصائوں کی گرفتاریوں پر عوامی حلقوں میں سخت غم وغصے کی لہر دوڑ گئی ہے۔ دوسری جانب حکام کا کہنا ہے کہ خواتین کی گرفتاری ‘انقلابی اقدار’ کی توہین کے جرم میں عمل میں لائی گئی ہے۔

    مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ‘ٹویٹر’ پر سماجی کارکنوں نے “مائدہ ۔ ھژبری ھیش ٹیگ’ اور ‘برقص تا برقصیم [تم رقص کرو تاکہ میں بھی رقص کروں] کے عنوانات سے مہم شروع کی ہے جس میں شہریوں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے۔

    پولیس نے رقص کی تربیت دینے والی متعدد خواتین کو بھی گرفتار کیا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ یہ گرفتاری عدالت کے حکم پر عمل میں لائی گئی ہیں۔ گرفتار خواتین کو سرکاری ٹی وی پر ‘اعتراف جرم’ کرنے پر مجبور کیا گیا ہے۔

    گرفتار کی گئی خواتین میں دو کی شناخت مائدہ ھژبری اور بناء کے ناموں سے کی گئی ہے اور ان کے مبینہ اعترافی بیانات بھی ٹی وی چینل پر نشر کئے گئے ہیں۔ مائدہ کو یہ کہتے سنا جاسکتا کہ اس نے اپنے رقص کی ویڈیو اس لیے انسٹا گرام پر پوسٹ کی تاکہ اسے زیادہ سے زیادہ فالورز ملیں تاہم اسے مقامی موسیقی کے مقابلے میں اور مغربی موسیقی کو ایران میں پسند کیے جانے کی زیادہ توقع نہیں۔

    سرکاری ٹی وی پر دکھائے گئے بیان میں مایدہ کو روتے ہوئے یہ کہتے دیکھا جا سکتا ہے کہ اس نے غیراخلاقی ارادے سے اپنے رقص کی فوٹیج انسٹا گرام پر پوسٹ نہیں کی۔ میں صرف یہ جاننا چاہتی تھی کہ لوگ اسے کتنا پسند کریں گے۔