آرمی چیف سے بحرین نیشنل گارڈ کے کمانڈر کی ملاقات     No IMG     اسرائیل کی جیل میں آگ بھڑک اٹھی، کئی کمرے جھلس گئے     No IMG     اسرائیلی فوج کی گھر گھر تلاشی15 فلسطینی شہری گرفتار     No IMG     وزیر ریلوے شیخ رشید کی نا اہلی کے لیے الیکشن کمیشن میں درخواست دائر     No IMG     فضائی حدود کی بندش، ائیرانڈیا کو کروڑوں کا نقصان     No IMG     دہشت گردی کا کوئی دین اور نسل نہیں ہوتی ,سعودی وزیر خارجہ     No IMG     ایران، عراق اور شامی افواج کے خون نے تینوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید مضبوط بنایا, بشار الاسد     No IMG     آصف زرداری اور فریال تالپور کی 10 دن کے لیے حفاظتی ضمانت منظور     No IMG     سابق وزیراعلی شہباز شریف کے خلاف ایک اور انکوائری شروع     No IMG     کینیڈین وزیر اعظم جسٹس ٹروڈو نے نیوزی لینڈ میں دہشت گردی کے واقعہ کی مذمت     No IMG     روسی صدر پوتن نے کہا ہے کہ وہ روس میں کرائسٹ چرچ جیسا دہشت گرد حملہ نہیں ہونے دیں گے     No IMG     برطانوی حکام نے نیوزی لینڈ کی مسجدوں میں ہوئی دہشت گردی کی طرز پر برطانیہ میں بھی واقعات پیش آنے کا خدشہ     No IMG     نیوزی لینڈ کی پارلیمنٹ کے پہلے اجلاس کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا     No IMG     نیوزی لینڈ مساجد پر دہشت گرد حملے سے متعلق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنے بیان پر میڈیا کی تنقید سے برہم     No IMG     نیوزی لینڈ کی قومی فٹسل ٹیم کے گول کیپر عطا الیان بھی کرائسٹ چرچ واقعے میں شہید     No IMG    

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں کے اولین واضح نتائج سامنے آنا شروع
تاریخ :   12-07-2018

واشنگٹن (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں کے اولین واضح نتائج سامنے آنا شروع امریکا میں سرمایہ کاری کم تر

امریکی وزارت تجارت کے تحت کام کرنے والے اقتصادی تجزیوں کے دفتر یا بی ای اے (BEA) کے مطابق 2017ء میں امریکا میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا مجموعی حجم 32 فیصد کم ہو کر تقریباﹰ 260 ارب ڈالر رہ گیا، جو 221 ارب یورو کے قریب بنتا ہے۔ اس سے ایک سال قبل 2016ء میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا یہی مجموعی حجم 380 ارب ڈالر کے قریب رہا تھا۔

اس طرح ٹرمپ کے دور صدارت میں ایک سال کے دوران امریکی معیشت میں کی جانے والی بیرونی سرمایہ کاری میں تقریباﹰ 120 ارب ڈالر کی کمی ہوئی۔ اس کے برعکس 2015ء میں امریکا میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا یہ سالانہ حجم 440 ارب ڈالر کے قریب تک پہنچ گیا تھا، جو ایک نیا ریکارڈ تھا۔

ماہرین کے مطابق امریکا میں بیرونی سرمایہ کاری اگرچہ ایک ایسے بین الاقوامی رجحان کی وجہ سے بھی ہوئی ہے، جس نے ماضی کے مقابلے میں دنیا کی اس سب سے بڑی معیشت کو اب زیادہ متاثر کیا ہے۔ یورپی سلامتی اور تعاون کی تنظیم او ای سی ڈی کے مطابق گزشتہ برس دنیا بھر میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں قریب 18 فیصد کی کمی دیکھنے میں آئی تھی۔

لیکن جہاں تک امریکا کا سوال ہے تو وہاں بیرونی سرمایہ کاری میں کمی کی ایک بڑی وجہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیاں بھی بنی ہیں۔ دنیا کے کئی بڑے بڑے سرمایہ کار یہ اعلان کر چکے ہیں کہ وہ صدر ٹرمپ کی محصولات سے متعلق متنازعہ سیاست اور اقتصادی حفاظت پسندی کی سوچ کی وجہ سے فی الحال انتظار اور امریکا میں نئی غیر ملکی سرمایہ کاری سے اجتناب کریں گے۔
ان بیرونی سرمایہ کاروں اور کئی اقتصادی ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ امریکی صدر نے گزشتہ مہینوں میں واشنگٹن کے قریبی اور روایتی طور پر بڑے تجارتی ساتھیوں کے ساتھ جو تنازعات شروع کیے ہیں، فی الحال امریکا میں غیر ملکی سرمایہ کاری پر ان کے اثرات کے بارے میں کچھ نہیں کہا جا سکتا۔ اسی لیے امریکا میں سرمایہ کاری سے متعلق فیصلوں میں اعتماد اور پیش رفت کے بجائے خدشات اور احتیاط پسندی زیادہ نمایاں ہیں۔

امریکا کو اس وقت جن ممالک یا خطوں کے ساتھ تجارتی جنگوں کا سامنا ہے، ان میں امریکا کا ہمسایہ ملک کینیڈا، دنیا کے دوسری سب سے بڑی معیشت چین اور 28 ممالک پر مشتمل یورپی یونین نمایاں ترین ہیں۔ لیکن دوسری طرف ٹرمپ صدارتی منصب سنبھالنے کے بعد سے مسلسل یہ کوششیں بھی کر رہے ہیں کہ بین الاقوامی سرمایہ کار شخصیات اور اداروں کو امریکا میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ لگانا چاہیے۔ عملی طور پر ان کوششوں کے نتائج مثبت کے بجائے منفی ہیں۔

صدر ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں نے امریکا میں بیرونی سرمایہ کاری کو کس حد تک متاثر کیا ہے، اس کی ایک مثال جرمنی کی بھی ہے۔ جرمن صوبے باڈن ورٹمبرگ میں قائم ایک بہت بڑا ادارہ ’ویُورتھ‘ (Wuerth) بھی ہے، جو دنیا بھر میں تعمیراتی شعبے کی مشینری اور ساز و سامان فروخت کرتا ہے۔

اس ادارے کے سربراہ رائن ہولڈ ویُورتھ کہتے ہیں کہ انہوں نے ٹرمپ کے دور صدارت میں امریکا میں اپنے کاروبار کو وسعت دینے کے ارادوں کو التوا میں ڈال دیا ہے۔ انہوں نے کہا، ’’ہمارے ادارے کی سالانہ آمدنی میں سے 1.8 ارب یورو یا 14 فیصد حصہ امریکا سے آتا ہے۔ لیکن اس کے باوجود میں چاہتا ہوں کہ ہم امریکا میں اپنی موجودہ کاروباری سرگرمیوں میں کوئی اضافہ نہ کریں۔‘‘ رائن ہولڈ ویُورتھ کے مطابق ان کا ادارہ امریکا میں اس وقت دوبارہ سرمایہ کاری کرے گا، جب ڈونلڈ ٹرمپ چلے جائیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
سعودی عرب کا ایک جنگی طیاروہ جنوب میں العسیر علاقہ میں گر کرتباہ
عمران خان کی جیب سے برآمد ہونے والی کوکین کی تصاویر بھی شائع
Translate News »