مسلم لیگ ق نے کا تحریک انصاف کے رویے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کو تحفظات سے آگاہ کرنے کا فیصلہ     No IMG     تحریک انصاف نے سابق صدرآصف علی زرداری کی نااہلی کے لیے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے سانحہ ساہیوال پر بغیر تحقیقات کے بیانات دینے پر وزرا اور پنجاب پولیس پر سخت اظہار برہمی     No IMG     وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کی جسٹس ثاقب نثارپرتنقید، موجود چیف جسٹس کی تعریف     No IMG     برطانیہ میں بھی برف باری سے شدید سردی     No IMG     برطانیہ کے سابق وزیراعظم کے جان میجر نے موجودہ وزیرِاعظم تھریسا مے سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ یورپ سے علیحدگی (بریگزٹ) پر ریڈ لائن سے پیچھے ہٹ جائیں     No IMG     میکسیکو میں پیٹرول کی پائپ لائن میں دھماکے اور آگ لگنے کے حادثے میں ہلاکتوں کی تعداد 73 ہوگئی     No IMG     امریکی سینیٹر لنزے گراہم کی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات     No IMG     سی ٹی ڈی کے مطابق ذیشان کا تعلق داعش سے تھا ,صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت     No IMG     وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو معلوم ہی نہیں پھولوں کا گلدستہ کہاں پیش کرنا ہے کہاں نہیں؟     No IMG     لاہورمیں شہریوں نے پولیس کی دھلائی کر ڈالی، بھاگ کر جان بچائی     No IMG     وزارتِ تجارت نےکاروں کی درآمد پر لگائی جانی والی پابندیوں پر نظر ثانی کرتے ہوئے انہیں مزید سخت کردیا     No IMG     خواتین کے مساوی حقوق اور تشدد کے خاتمے کے لیے امریکہ، برطانیہ سمیت مختلف ممالک میں خواتین کی جانب سے ریلیاں نکالی گئیں۔     No IMG     فرانس میں صدر میکروں کی حکومت کے خلاف پیلی جیکٹ والوں کا احتجاج اس ہفتے بھی جاری رہا، کئی مقامات پر پولیس اور مظاہرین میں جھڑپیں     No IMG     وزیراعلیٰ پنجاب نے اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کرلیا     No IMG    

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں کے اولین واضح نتائج سامنے آنا شروع
تاریخ :   12-07-2018

واشنگٹن (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں کے اولین واضح نتائج سامنے آنا شروع امریکا میں سرمایہ کاری کم تر

امریکی وزارت تجارت کے تحت کام کرنے والے اقتصادی تجزیوں کے دفتر یا بی ای اے (BEA) کے مطابق 2017ء میں امریکا میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا مجموعی حجم 32 فیصد کم ہو کر تقریباﹰ 260 ارب ڈالر رہ گیا، جو 221 ارب یورو کے قریب بنتا ہے۔ اس سے ایک سال قبل 2016ء میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا یہی مجموعی حجم 380 ارب ڈالر کے قریب رہا تھا۔

اس طرح ٹرمپ کے دور صدارت میں ایک سال کے دوران امریکی معیشت میں کی جانے والی بیرونی سرمایہ کاری میں تقریباﹰ 120 ارب ڈالر کی کمی ہوئی۔ اس کے برعکس 2015ء میں امریکا میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا یہ سالانہ حجم 440 ارب ڈالر کے قریب تک پہنچ گیا تھا، جو ایک نیا ریکارڈ تھا۔

ماہرین کے مطابق امریکا میں بیرونی سرمایہ کاری اگرچہ ایک ایسے بین الاقوامی رجحان کی وجہ سے بھی ہوئی ہے، جس نے ماضی کے مقابلے میں دنیا کی اس سب سے بڑی معیشت کو اب زیادہ متاثر کیا ہے۔ یورپی سلامتی اور تعاون کی تنظیم او ای سی ڈی کے مطابق گزشتہ برس دنیا بھر میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں قریب 18 فیصد کی کمی دیکھنے میں آئی تھی۔

لیکن جہاں تک امریکا کا سوال ہے تو وہاں بیرونی سرمایہ کاری میں کمی کی ایک بڑی وجہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیاں بھی بنی ہیں۔ دنیا کے کئی بڑے بڑے سرمایہ کار یہ اعلان کر چکے ہیں کہ وہ صدر ٹرمپ کی محصولات سے متعلق متنازعہ سیاست اور اقتصادی حفاظت پسندی کی سوچ کی وجہ سے فی الحال انتظار اور امریکا میں نئی غیر ملکی سرمایہ کاری سے اجتناب کریں گے۔
ان بیرونی سرمایہ کاروں اور کئی اقتصادی ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ امریکی صدر نے گزشتہ مہینوں میں واشنگٹن کے قریبی اور روایتی طور پر بڑے تجارتی ساتھیوں کے ساتھ جو تنازعات شروع کیے ہیں، فی الحال امریکا میں غیر ملکی سرمایہ کاری پر ان کے اثرات کے بارے میں کچھ نہیں کہا جا سکتا۔ اسی لیے امریکا میں سرمایہ کاری سے متعلق فیصلوں میں اعتماد اور پیش رفت کے بجائے خدشات اور احتیاط پسندی زیادہ نمایاں ہیں۔

امریکا کو اس وقت جن ممالک یا خطوں کے ساتھ تجارتی جنگوں کا سامنا ہے، ان میں امریکا کا ہمسایہ ملک کینیڈا، دنیا کے دوسری سب سے بڑی معیشت چین اور 28 ممالک پر مشتمل یورپی یونین نمایاں ترین ہیں۔ لیکن دوسری طرف ٹرمپ صدارتی منصب سنبھالنے کے بعد سے مسلسل یہ کوششیں بھی کر رہے ہیں کہ بین الاقوامی سرمایہ کار شخصیات اور اداروں کو امریکا میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ لگانا چاہیے۔ عملی طور پر ان کوششوں کے نتائج مثبت کے بجائے منفی ہیں۔

صدر ٹرمپ کی اقتصادی پالیسیوں نے امریکا میں بیرونی سرمایہ کاری کو کس حد تک متاثر کیا ہے، اس کی ایک مثال جرمنی کی بھی ہے۔ جرمن صوبے باڈن ورٹمبرگ میں قائم ایک بہت بڑا ادارہ ’ویُورتھ‘ (Wuerth) بھی ہے، جو دنیا بھر میں تعمیراتی شعبے کی مشینری اور ساز و سامان فروخت کرتا ہے۔

اس ادارے کے سربراہ رائن ہولڈ ویُورتھ کہتے ہیں کہ انہوں نے ٹرمپ کے دور صدارت میں امریکا میں اپنے کاروبار کو وسعت دینے کے ارادوں کو التوا میں ڈال دیا ہے۔ انہوں نے کہا، ’’ہمارے ادارے کی سالانہ آمدنی میں سے 1.8 ارب یورو یا 14 فیصد حصہ امریکا سے آتا ہے۔ لیکن اس کے باوجود میں چاہتا ہوں کہ ہم امریکا میں اپنی موجودہ کاروباری سرگرمیوں میں کوئی اضافہ نہ کریں۔‘‘ رائن ہولڈ ویُورتھ کے مطابق ان کا ادارہ امریکا میں اس وقت دوبارہ سرمایہ کاری کرے گا، جب ڈونلڈ ٹرمپ چلے جائیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
سعودی عرب کا ایک جنگی طیاروہ جنوب میں العسیر علاقہ میں گر کرتباہ
عمران خان کی جیب سے برآمد ہونے والی کوکین کی تصاویر بھی شائع
Translate News »