آرمی چیف جنرل قمر جاویدباجوہ کی امیر قطر شیخ تمیم بن حمد الثانی سےملاقات     No IMG     تحریک انصاف ملک کو حقیقی حقیقی فلاحی ریاست اور نچلے طبقے کو اوپر لائیں گے:وزیر اعظم عمران خان     No IMG     صرافہ مارکیٹ میں سونے کی فی تولہ قیمت میں 1450 روپے کا اضافہ     No IMG     برٹش ائیر ویز جون 2019ءمیں پاکستان سے دوبارہ پروازیں شروع کرنے کا اعلان     No IMG     ریاست کی خود مختاری اور علاقائی سالمیت کا تحفظ کیا جائے گا,وزیر خارجہ     No IMG     چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اور ترک صدر کے مابین ملاقات     No IMG     سعودی عرب نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل سے متعلق امریکی سینیٹ کی قرارداد کو مسترد کردیا     No IMG     سابق سینیٹر اور پیپلز پارٹی کے رہنما فیصل رضا عابدی پر انسداد دہشت گردی کی عدالت نے فردجرم عائد کر دی     No IMG     مقبوضہ کشمیر میں نوجوانوں کی شہادت پراحتجاجی مارچ     No IMG     چیف جسٹس آف پاکستان کا دورہ تُرکی ,تُرک کمپنی نے ڈیمز فنڈ میں عطیہ دے دیا     No IMG     وینزویلا سے تعلق رکھنے والی 25 سالہ نوجوان لڑکی نے ملکہ حسن کا ٹائٹل جیت لیا     No IMG     حزب اللہ کی ايک اور سرنگ دريافت ,اسرائیلی فوج کا دعوی     No IMG     عوام اپنے مسائل کے حل کیلیے وزیر اعظم کمپلینٹ پورٹل کا استعمال کریں،وزیراعظم     No IMG     سابق صدر آصف زرداری نے پنجاب کی بجلی بند کرنے کی دھمکی دے دی     No IMG     رشوت کا سب سے بڑا ناسور پٹواری ہیں, چیف جسٹس     No IMG    

امریکی اور اسرائیلی ایران کا مقابلہ کرنے کے لیے متعدد تفصیلی ورکنگ پلان
تاریخ :   29-12-2017

اسرائیل  (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) کی قومی سلامتی کے مشیر مائر بن شبات نے رواں ماہ کی 12 تاریخ کو ایک اعلی سطح کے اسرائیلی سکیورٹی وفد کے سربراہ کی قیادت کرتے ہوئے اپنے امریکی ہم منصب ہربرٹ میکماسٹر اور ان کی سکیورٹی ٹیم کے ساتھ دو روز تک خفیہ بات چیت کا انعقاد کیا۔ اس کے نتیجے میں دونوں ملکوں کے بیچ تزویراتی تعاون کی ایک دستاویز پر دستخط کیے گئے۔ اس کا مقصد خطّے میں ایرانی پھیلاؤ کا مقابلہ کرنا اور عسکری ، سکیورٹی اور سیاسی طور پر اس کو روکنے کے واسطے تفصِلی منصوبے وضع کرنا ہے۔

معلومات کے مطابق خطّے میں ایرانی سرگرمیوں بالخصوص شام میں ایران کو عسکری طور پر پنجے گاڑنے سے روکنے اور حزب اللہ ملیشیا کا مقابلہ کرنے کے واسطے مشترکہ ورکنگ گروپ تشکیل دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ حزب اللہ ، حماس ، اسلامی جہاد اور دیگر تنظیموں کے لیے ایران کی سپورٹ کو روکنا بھی شامل ہے۔

دوسرا ورکنگ گروپ ایرانی بیلسٹک میزائلوں کے معاملے اور ایران کی حزب اللہ کو تزویراتی ہتھیاروں کی فراہمی کی کوششوں سے نمٹے گا۔ اسی مقصد کے لیے وقتا فوقتا اسرائیلی فضائیہ شام میں حملے کرتی رہتی ہے۔ اس کے علاوہ ایران کو شام اور لبنان میں درست نشانے پر پہنچنے والے میزائلوں کی تیاری کے لیے کارخانے قائم کرنے سے روکنا ہے۔

تیسرا ورکنگ گروپ خطّے میں جارحیت کے ممکنہ منظرنامے سے نمٹے گا۔ اس میں ایران داخل ہو سکتا ہے بالخصوص حزب اللہ کے ساتھ جنگ کا منظرنامہ بھی ہے۔

چوتھا ورکنگ گروپ ایران کی جوہری صلاحیتوں کو سبوتاژ کرنے کے لیے خفیہ کارروائیوں اور سفارتی کوششوں کو سنبھالے گا۔ یہ ایرانی جوہری سرگرمیوں کی کڑی نگرانی اور ایران کی جانب سے جوہری معاہدے کی خلاف ورزیوں کا انکشاف کرے گا۔ اس کے علاوہ جوہری معاہدے سے ہٹ کر اضافی سفارتی آلات کار تلاش کرے گا تا کہ ایران پر پابندیاں عائد کی جا سکیں۔

امریکی اور اسرائیلی ذرائع کا کہنا ہے کہ تزویراتی یادداشت میں ایران کا مقابلہ کرنے کے لیے متعدد تفصیلی ورکنگ پلان شامل ہیں۔

اسرائیلی وزیر اعظم بنیامین نیتنیاہو یہ دھمکی دے چکے ہیں کہ اسرائیل کسی طور بھی شام میں ایران کو عسکری طور پر پنجے گاڑنے نہیں دے گا اور اسرائیل اپنی جانب رخ کیے جانے والے مہلک ہتھیاروں کو نشانہ بنائے گا۔

اسرائیل گولان کے پہاڑی علاقے میں ہونے والی آخری پیش رفت کو بھی تشویش کی نظر سے دیکھتا ہے جہاں بشار حکومت کی فورسز اور حزب اللہ ملیشیا نے جبل الشیخ کے نزدیک واقع بیت جن فارمز پر کنٹرول حاصل کر لیا۔ اسرائیل کو اندیشہ ہے کہ یہ پیش قدمی شامی گولان پر حزب اللہ اور ایران کے کنٹرول حاصل کرنے کا آغاز ہو سکتا ہے جس کا مقصد لڑائی کے لیے ایک متحدہ محاذ کا حصول ہے

Print Friendly, PDF & Email
ترکی کا روس سے جد ید روسی میزائل ایس چار سوخر ید نے کا اعلان
پاکستان کی سلامتی کو خطرات کا معاملہ، کیا جنگ کا خدشہ ہے یاں سیاسی سازشی نظریات کی گونج

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »