چودھری پرویزالٰہی سے فردوس عاشق اعوان کی ملاقات     No IMG     یوکرین کے مزاحیہ اداکار ملک کے صدر منتخب     No IMG     وزیروں کو نکالنے سے سلیکٹڈ وزیراعظم کی نااہلی نہیں چھپے گی, بلاول بھٹو زرداری     No IMG     ایران کے صدر حسن روحانی نے تہران میں سعد آباد محل میں پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا باقاعدہ اور سرکاری طور پر استقبال     No IMG     بھارت اور چین کے مابین پیر کے روز بیجنگ میں باہمی فیصلہ کن مذاکرات کا آغاز     No IMG     بھارتی وزیر اعظم,ہمارا پائلٹ واپس نہ کیا جاتا تو اگلی رات خون خرابے کی ہوتی     No IMG     ملکی سیاسی پارٹیاں ووٹ تو غریبوں ،محنت کشوں کے نام پر لیتی ہیں مگر تحفظ جاگیرداروں اور مافیاز کو دیتی ہیں ,جواد احمد     No IMG     افغان سپریم کورٹ نے صدر کے انتخاب تک صدر اشرف غنی کی مدت صدارت میں توسیع کردی     No IMG     آزاد کشمیر میں منڈا بانڈی کے مقام پر ایک جیپ کھائی میں گرنے سے 5 افراد ہلاک     No IMG     مصرمیں صدرکےاختیارات میں اضافے کےلیے ہونےوالے تین روزہ ریفرنڈم میں ووٹ ڈالنےکا سلسلہ جاری ہے     No IMG     لاہور میں 3 منزلہ خستہ حال گھر زمین بوس ہونے کے نتیجے میں خاتون سمیت 6 افراد جاں بحق جبکہ 4 افراد زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان ایران کے پہلے سرکاری دورے پر تہران پہنچ گئے     No IMG     سری لنکا میں کل ہونے والے آٹھ بم دھماکوں کے نتیجے میں 300 افراد ہلاک اور 500 زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے مکران کوسٹل ہائی وے پر دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکام سے واقعے پر رپورٹ طلب کر لی     No IMG     افغانستان اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑتے دکھائی دے رہے ہیں     No IMG    

امریکہ افغانستان میں اپنی 16 سالہ ناکامی کا الزام پاکستان پر لگا رہا ہے, وزیر دفاع انجینئر خرم دستگیر خان
تاریخ :   26-01-2018

اسلام آباد ۔ر(ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) وزیر دفاع انجینئر خرم دستگیر خان نے کہا ہے کہ امریکہ افغانستان میں اپنی 16 سالہ ناکامی کا الزام پاکستان پر لگا رہا ہے، افغان سرحد کے ساتھ باڑ لگانے کی ایک وجہ پاکستان پر مسلسل الزام تراشیاں تھیں، پاکستان کی داخلی سلامتی کی صورتحال بہتر ہوئی ہے، چین۔پاکستان اقتصادی راہداری کے نتیجہ میں پاکستان اپنی جغرافیائی حیثیت سے استفادہ کرنے کی پوزیشن میں آ گیا ہے، پاکستان دنیا کی تیزی سے ابھرتی ہوئی کنزیومر مارکیٹ بن گیا ہے۔بیلجیئم میں پاکستانی سفارتخانہ کی طرف سے یہاں موصولہ پریس ریلیز کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے بیلجیئم کے قومی ٹی وی اور ریڈیو چینل (وی آر ٹی۔فلمیش ریڈیو اور ٹی وی) کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔ یہ انٹرویو بیلجیئم کے صحافی سٹیون ویکٹر ڈیکرائینے نے وزیر دفاع کے 22 سے 25 جنوری کو ہونے والے دورہ بیلجیئم کے دوران کیا۔ وزیر دفاع چار رکنی پارلیمانی وفد کی قیادت کر رہے تھے۔وی آر ٹی نے یہ انٹرویو اپنے ریڈیو پر نشر کرنے کے ساتھ ویب سائٹ پر آرٹیکل کی شکل میں شائع بھی کیا۔ افغانستان کی صورتحال کے حوالے سے وزیر دفاع نے کہا کہ پاکستان پر بہت الزام تراشیاں کی گئیں اور ایک وجہ یہ الزام تراشیاں بھی ہیں کہ ہم نے افغان سرحد کے ساتھ باڑ لگانے کا کام شروع کیا، دلچسپ بات یہ ہے کہ ہم نے کہا کہ آپ الزام تراشیاں میں مصروف رہیں کہ افغان سرحد سے آر پار لوگ آ جا رہے ہیں، ہم افغانستان کے ساتھ 2600 کلومیٹر سرحد پر باڑ لگائیں گے، پاکستان نے 250 کلومیٹر پر باڑ لگانے کا کام تقریباً مکمل کر لیا ہے، کسی نے اس میں ہمارے ساتھ تعاون نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ امریکہ افغانستان میں اپنی 16 سالہ ناکامی کا الزام پاکستان پر عائد کرتا ہے، امریکہ نے کھربوں ڈالر خرچ کئے، ہزاروں فوجیوں کی جانیں قربان کیں اور بہت سے زخمی ہوئے مگر اس وقت بھی افغانستان کے 45 فیصد علاقے افغان حکومت کے کنٹرول میں نہیں ہیں۔ وزیر دفاع نے خبردار کیا کہ جب تک افغانستان میں صورتحال غیر مستحکم رہے گی تب تک پاکستان میں بدامنی برقرار رہے گی۔پاک۔امریکہ تعلقات کے حوالہ سے ایک سوال کے جواب میں وزیر دفاع نے کہا کہ ہم توقع کر رہے ہیں کہ اہل یورپ ہمارا نقطہ نظر امریکیوں کو پہنچائیں گے جو کہ اس وقت پاکستان کے نقطہ نظر کو سمجھنے پر آمادہ نہیں ہیں۔ وزیردفاع نے کہا کہ ہمارا نقطہ نظر ہے کہ افغانستان میں جمہوری استحکام ناگزیر ہے۔ پاکستان کی داخلی سلامتی کی صورتحال سے متعلق سوال کے جواب میں وزیر دفاع نے کہا کہ مجموعی طور پر داخلی سلامتی کی صورتحال بہتر ہوئی ہے اور میرے نزدیک اس سے بڑھ کر کوئی اور بہتر الفاظ نہیں کہ ہم نے معجزاتی طور پر داخلی سلامتی کی صورتحال کو بہتر بنایا ہے اور اسی لئے اب پورا پاکستان پرامن ہے، اب بھی دہشت گردی کے چند واقعات رونما ہوئے ہیں لیکن بڑے پیمانے پر دہشت گردی کے واقعات میں 80 فیصد تک کمی آئی ہے جو 2012ء میں اپنے عروج پر تھے۔انہوں نے کہا کہ آرمی پبلک سکول کے 2017ء کے واقعہ جس میں 142 بچے شہید ہوئے، نے پاکستانی عوام کے ذہنوں سے ابہام کو دور کر دیا کہ دہشت گردوں کا مذہب سے کوئی تعلق نہیں اور نہ ہی ان کی کوئی قومیت ہے، دہشت گرد صرف ایک لعنت ہیں جو پاکستان کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔ پاکستان میں اقتصادی صورتحال سے متعلق ایک سوال کے جواب میں انجینئر خرم دستگیر خان کا کہنا تھا کہ اس وقت پاکستان دنیا کی تیزی سے ابھرتی ہوئی کنزیومر مارکیٹ بن گیا ہے جہاں بین الاقوامی کمپنیاں پاکستان کی کنزیومر مارکیٹ میں بھرپور دلچسپی لے رہی ہیں اور کاروبار کرنے کی خواہاں ہیں۔پاکستان میں بنیادی ڈھانچہ ترقی پا رہا ہے اور ہمیں یقین ہے کہ پاکستان اپنی تزویراتی جغرافیائی حیثیت سے استفادہ کرنے کی پوزیشن میں ہے، اب چین۔پاکستان اقتصادی راہداری اور اس کے تحت آنے والی سرمایہ کاری کے نتیجہ میں اس سے فائدہ ملے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
خواتین کیلیے مردوں کا فٹ بال میچ دیکھنا حرام ہے،سعودی مفتی
مریم نواز نے کہا ہے کہ سرعام جھوٹ بولنے ، پوری قوم کو ہیجان میں مبتلا کرنے ، وفاقی کابینہ کو بدنام کرنے اور زینب کیس کا رخ موڑنے کی کوشش

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »