گاڑیوں کی درآمد پر ٹیکس اب غیر ملکی کرنسی میں ادا کرنا ہوگا, وزیر خزانہ     No IMG     تائيوان, کے معاملے ميں مداخلت برداشت نہيں کی جائے گی, چين     No IMG     امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ترکی کی معیشت کو تباہ کرنے کے بیان سے یوٹرن لیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان معاشی ترقی کے وسیع مواقع ہی     No IMG     وزیراعظم سے سابق امریکی سفیر کیمرون منٹر کی ملاقات     No IMG     آپ لوگ کام نہیں کر سکتے چیف جسٹس نے اسد عمرکو دو ٹوک الفاظ میں کیا کہہ ڈالا     No IMG     شادی والے گھر میں آگ لگنے سے دلہن سمیت 4 خواتین جاں بحق     No IMG     قومی ترقی میں بھرپور کردار ادا کریں گے،آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ     No IMG     اپوزیشن ,جماعتوں نے منی بجٹ مسترد کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کو سونے کی کلاشنکوف کا تحفہ مل گیا     No IMG     سعودی لڑکی رھف کا فرار ہونے کے بعد پہلا انٹرویو     No IMG     بنگلہ دیش,گارمنٹس ملازمین کا تنخواہوں میں اضافہ نہ ہونے پر مظاہرہ     No IMG     بھارتی فوج مغربی سرحد کیساتھ دہشتگردانہ کارروائیوں کیخلاف سخت ایکشن لینے سے نہیں ہچکچائے گی۔     No IMG     حکومت نے ایک ہفتے میں ہم سے 113 ارب روپے قرض لیاہے، پاکستانی اسٹیٹ بینک     No IMG     وزیراعظم کی اپوزیشن پر شدید تنقید     No IMG     چین کی عدالت نے منشیات کی اسمگلنگ کے الزام میں کینیڈا کے شہری کی 15 سال قید کی سزا کو پھانسی میں تبدیل کردیا     No IMG    

امریکا کے ساتھ امن کوششوں کا حصہ نہیں بنیں گے،فلسطینی لیڈر محمود عباس
تاریخ :   23-12-2017

فلسطینی (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) لیڈر محمود عباس نے کہا ہے کہ مشرق وسطیٰ میں کسی قسم کی امریکی امن کوشش کو تسلیم نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے یہ بات فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں صدر ماکروں کے ساتھ ملاقات کے بعد کہی۔

پیرس میں صدر ایمانوئل ماکروں کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فلسطین کے صدر محمود عباس نے واضح کیا کہ امریکا اب امن عمل کا ایک ایماندار ثالث نہیں رہا اور اس باعث اُس کی جانب سے پیش کی جانے والی کوئی بھی تجویز قابل قبول نہیں ہو گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ فلسطین اور اسرائیل کے درمیان امریکی جانبداری واضح ہو کر سامنے آ گئی ہے۔

اس پریس کانفرنس میں فرانسیسی صدر نے صورت حال پر اظہار خیال محتاط انداز میں کیا اور اس کا شائبہ نہیں ہونے دیا کہ وہ کسی فریق کے حلیف ہیں۔ انہوں نے البتہ یہ ضرور کہا کہ یہ امریکی غلطی ہے کہ وہ اس متنازعہ صورت حال کو تنہا حل کرنا چاہتا ہے جبکہ اس تنارعے کے اصل اور حقیقی فریق اسرائیل اور فلسطین ہیں۔

مشترکہ نیوز بریفنگ میں فرانسیسی صدر نے واضح کیا کہ مستقبل قریب میں اُن کے ملک کی جانب سے فلسطینی ریاست کو فی الحال تسلیم کرنے کا کوئی امکان نہیں ہے۔ ماکروں نے یروشلم کو امریکا کی جانب سے اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان پر کہا کہ ایسا کر کے امریکا نے خود کو مرکزی دھارے سے علیحدہ کر لیا ہے اور وہ نہیں چاہتے کہ فرانس بھی کسی ایسی صورت حال کا شکار ہو

پریس کانفرنس میں فلسطینی لیڈر نے یہ بھی کہا کہ امریکا نے یروشلم کی حیثیت کو ایک نیا رنگ دے کر خود کو مشرق وسطیٰ کے امن مسئلے کے لیے نا اہل قرار دے دیا ہے۔ انہوں نے امریکی صدر کے اُس اعلان کی بھی مذمت کی جس میں انہوں نے دھمکی دی تھی کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں امریکا کے خلاف ووٹ دینے والے ممالک کی مالی امداد بند کر دی جائے گی۔

یہ امر اہم ہے کہ جمعرات اکیس دسمبر کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 120 اراکین نے اُس قرارداد کی منظوری دی تھی، جس میں امریکا سے کہا گیا ہے کہ وہ یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے میں تبدیلی پیدا کرے

 

Print Friendly, PDF & Email
بیت المقدس میں کئی ممالک کا اپنے سفارتخانے منتقل کرنے پرغور,اسرائیل کے وزیر اعظم نیتن یاہو
اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے شمالی کوریا پر مزید اقتصادی پابندیاں عائد

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »