پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

امریکا کے ساتھ امن کوششوں کا حصہ نہیں بنیں گے،فلسطینی لیڈر محمود عباس
تاریخ :   23-12-2017

فلسطینی (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو) لیڈر محمود عباس نے کہا ہے کہ مشرق وسطیٰ میں کسی قسم کی امریکی امن کوشش کو تسلیم نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے یہ بات فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں صدر ماکروں کے ساتھ ملاقات کے بعد کہی۔

پیرس میں صدر ایمانوئل ماکروں کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فلسطین کے صدر محمود عباس نے واضح کیا کہ امریکا اب امن عمل کا ایک ایماندار ثالث نہیں رہا اور اس باعث اُس کی جانب سے پیش کی جانے والی کوئی بھی تجویز قابل قبول نہیں ہو گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ فلسطین اور اسرائیل کے درمیان امریکی جانبداری واضح ہو کر سامنے آ گئی ہے۔

اس پریس کانفرنس میں فرانسیسی صدر نے صورت حال پر اظہار خیال محتاط انداز میں کیا اور اس کا شائبہ نہیں ہونے دیا کہ وہ کسی فریق کے حلیف ہیں۔ انہوں نے البتہ یہ ضرور کہا کہ یہ امریکی غلطی ہے کہ وہ اس متنازعہ صورت حال کو تنہا حل کرنا چاہتا ہے جبکہ اس تنارعے کے اصل اور حقیقی فریق اسرائیل اور فلسطین ہیں۔

مشترکہ نیوز بریفنگ میں فرانسیسی صدر نے واضح کیا کہ مستقبل قریب میں اُن کے ملک کی جانب سے فلسطینی ریاست کو فی الحال تسلیم کرنے کا کوئی امکان نہیں ہے۔ ماکروں نے یروشلم کو امریکا کی جانب سے اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان پر کہا کہ ایسا کر کے امریکا نے خود کو مرکزی دھارے سے علیحدہ کر لیا ہے اور وہ نہیں چاہتے کہ فرانس بھی کسی ایسی صورت حال کا شکار ہو

پریس کانفرنس میں فلسطینی لیڈر نے یہ بھی کہا کہ امریکا نے یروشلم کی حیثیت کو ایک نیا رنگ دے کر خود کو مشرق وسطیٰ کے امن مسئلے کے لیے نا اہل قرار دے دیا ہے۔ انہوں نے امریکی صدر کے اُس اعلان کی بھی مذمت کی جس میں انہوں نے دھمکی دی تھی کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں امریکا کے خلاف ووٹ دینے والے ممالک کی مالی امداد بند کر دی جائے گی۔

یہ امر اہم ہے کہ جمعرات اکیس دسمبر کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 120 اراکین نے اُس قرارداد کی منظوری دی تھی، جس میں امریکا سے کہا گیا ہے کہ وہ یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے میں تبدیلی پیدا کرے

 

Print Friendly, PDF & Email
بیت المقدس میں کئی ممالک کا اپنے سفارتخانے منتقل کرنے پرغور,اسرائیل کے وزیر اعظم نیتن یاہو
اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے شمالی کوریا پر مزید اقتصادی پابندیاں عائد

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »