جرمن نے شام اور عراق کے لیے مالی امداد سو ملین یوروکا اعلان     No IMG     سعودی عرب کے سفیر خالد بن سلمان واشنگٹن سے فرار ہوگئے     No IMG     کویت نے غزہ میں تعمیر نو اور جنگ سے تباہ ہونے والے مکانات کی تعمیر کے لیے 25 لاکھ ڈالر کی امداد دینے کا اعلان     No IMG     اسرائیل کا غزہ پر فضائی حملہ ایک فلسطینی نوجوان شہید 8 زخمی     No IMG     روس کے زیر انتظام کریمیا میں بم دھماکے کے نتیجے میں 18 افراد ہلاک اور 50 زخمی     No IMG     ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے کہا ہے کہ اگر امریکہ شام میں کئے گئے وعدے پورے کرے     No IMG     پی آئی اے نے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کےالزامات کو غلط قرار دیتے ہوئے سینیٹر مشاہد اللہ خان کو کلین چٹ دیدی     No IMG     قطر کی حکومت نے ملازمت کے خواہش مندوں کے لیے پاکستان میں ویزا مرکز کھولنے کا اعلان     No IMG     مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے کہاہے کہ کے الیکٹرک بکا ہی نہیں تھا اس لئے کسی ڈیل کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا،     No IMG     سلمان خان نے اپنے بھائیوں کے ساتھ مل کر میرا ریپ کیا,بھارتی ماڈل اور وی جے پوجا مشرا کا الزام     No IMG     اسلام آباد ہائی کورٹ نے ایس ایس پی تشدد کیس میں وزیراعظم عمران خان کی بریت کیخلاف وفاق کی اپیل پر مقدمے کا ریکارڈ طلب کرلیا     No IMG     ابوظہبی, پاکستان کی میچ پر گرفت مضبوط ، ایک وکٹ کے نقصان پر 106 رنز جوڑ لیے ،245 رنز کی برتری     No IMG     افغانستان کے صوبے ہلمند میں انتخابی مہم کے دفتر میں دھماکے سے انتخابی امیدوار سمیت 3 افراد ہلاک     No IMG     ہارون اختر اور سابق وزیر اعظم کی بہن سعدیہ عباسی نااہل قرار     No IMG     بھارت اور چین نے افغانستان کے سفارت کاروں کو تربیت دینے کے مشترکہ پروگرام کا آغاز کر دیا     No IMG    

امریکا کی ٹرمپ انتظامیہ کا سرکاری امداد لینے والے تارکینِ وطن کے گرین کارڈز بندکرنے پر غور
تاریخ :   24-09-2018

واشنگٹن ( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) امریکا کی ٹرمپ انتظامیہ نے خوراک ، طبی علاج و معالجے اور مکانوں کی سہولت کی شکل میں سرکاری امداد حاصل کرنے والے تارکین ِ وطن کو گرین کارڈز کا اجراء بند کرنے پر غور شروع کردیا ہے اورا س مقصد کے لیے نئے قواعد وضوابط تجویز کردیے ہیں۔

امریکا کے وفاقی قانون کے تحت گرین کارڈ کے حصول کے خواہاں افراد کو پہلے ہی یہ ثابت کرنا پڑتا ہے کہ وہ قومی خزانے پرکوئی بوجھ ثابت نہیں ہوں گے۔نئے قواعد کے تحت کسی بھی شکل میں سرکاری امداد حاصل کرنے والے گرین کارڈ کے نااہل قرار پائیں گے۔

امریکا کے محکمہ ہوم لینڈ سکیورٹی کے مطابق ’’مجوزہ قواعد وضوابط کے تحت پہلے سے موجود قانون میں بالکل صراحت کردی جائے گی کہ جو لوگ بھی امریکا میں آنے اور یہاں عارضی یا مستقل طور پر رہنے کے خواہاں ہیں ، انھیں یہ واضح کرنا ہوگا کہ وہ مالی طور پر خود اپنی امداد کرسکتے ہیں، اپنے اخراجات برداشت کرسکتے اور ان کا سرکاری فوائد پر انحصار نہیں ہوگا‘‘۔

447 صفحات کو محیط ان مجوزہ قواعد وضوابط کو محکمے کی ویب سائٹ پر شائع کردیا گیا ہے اور آیندہ ہفتوں میں یہ وفاقی رجسٹر پر بھی نمودار ہوجائیں گے۔اس کے بعد 60 دن تک لوگ ان پر اپنی رائے کا اظہار کرسکیں گے۔پھر یہ نافذ العمل ہوجائیں گے۔

ٹرمپ انتظامیہ نے یہ تجویز ملک میں وسطی مدت کے انتخابات سے صرف سات ہفتے قبل پیش کی ہے ۔اس سے ری پبلکن پارٹی کو صدر ٹرمپ کے قانونی یا غیر قانونی تارکین وطن کے خلاف کریک ڈاؤن کے حامی ووٹروں کی حمایت حاصل ہونے کا امکان ہے۔

دوسری جانب تارکینِ وطن کے حامی ایڈووکیسی گروپوں کا کہنا ہے کہ لوگ مکانوں سے بے دخلی اور خرابیِ صحت کے مسائل سے دوچار ہونے کے خطرے کے باوجود سرکاری امدادی پروگراموں سے دستبردار ہوجائیں گے کیونکہ اگر وہ ان امدادی پروگراموں سے استفادے کا سلسلہ جاری رکھتے ہیں تو انھیں امریکی ویزا جاری کرنے سے انکار کیا جاسکتا ہے۔

تارکین وطن جن امدادی پروگراموں سے استفادے کی بنا پر ویزے کے نااہل ہوسکتے ہیں ،ان میں طبی نگہداشت کے پارٹ ڈی میں بیان کردہ ادویہ ، بعض ہنگامی سروسز کے لیے خدمات، تعلیم ، فوڈ اسٹیمپ اور سیکشن 8 کے تحت ہاؤسنگ واؤچرز شامل ہیں۔

امریکا میں مقیم تارکین ِوطن کے حامی گروپوں نے صدر ٹرمپ کے اس فیصلے کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور ان کا کہنا ہے کہ اس کے تحت امریکا میں اب صرف امیر لوگ ہی رہ سکتے ہیں یا یہاں آ سکتے ہیں اور غریب ممالک سے تعلق رکھنے والے تارکین وطن پر اس ملک کے دروازے بند کیے جارہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
چین کے مالیاتی حکام نے فضائی آلودگی کی وجہ سے 158 کمپنیوں کے خلاف کارروائی
اسرائیل,کا فلسطینی گاؤں کے انہدام کا فیصلہ
Translate News »