پاک فوج نے ایک آپریشن میں 4 مغوی ایرانی فوجیوں کو بازیاب کرالیا     No IMG     دنیا بھر میں آج ہندو برادری اپنا مذہبی تہوار ہولی منا رہی ہے     No IMG     افغانستان کے صوبے ہرات میں سیلاب سے 13 افراد کے جاں بحق ہونے سے ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 63 ہوگئی     No IMG     لیبیا میں پناہ گزینوں کو لے جانے والی کشتی ڈوب گئی جس کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک     No IMG     اسرائیلی دہشت گردی، غرب اردن میں مزید3 فلسطینیوں کو شہید کردیا     No IMG     پیپلز پارٹی کےچیئرمین نے 3 وفاقی وزرا کو فارغ کرنے کا مطالبہ کردیا     No IMG     وزیراعظم عمران خان کی ہولی کے تہوار پر ہندو برادی کو مبارک باد     No IMG     سابق وزیراعظم نوازشریف نے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست دائر کردی     No IMG     سمجھوتہ ایکسپریس کیس کا فیصلہ 12 سال بعد بھی تاخیر کا شکار     No IMG     وزیر اعظم آئین کے آرٹیکل 214 کی شق دو اے پر عمل کرنے میں ناکام     No IMG     روس کے وزیر دفاع سرگئی شویگو نے شام کے صدر بشار اسد سے ملاقات     No IMG     بھارت اور پاکستان متنازع معاملات مذاکرات کے مذاکرات کے ذریعے حل کریں,چین     No IMG     بریگزیٹ پرٹریزامے کی حکمت عملی انتہائی کمزورہے، ٹرمپ     No IMG     امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو کی کویت کے بادشاہ سے ملاقات     No IMG     نیوزی لینڈ میں جمعہ کو سرکاری ریڈیو اور ٹی وی سے براہ راست اذان نشر ہوگی,جیسنڈا آرڈرن     No IMG    

امریکا نے واشنگٹن میں فلسطینی مشن بند کرنے کی تصدیق
تاریخ :   10-09-2018

واشنگٹن( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) امریکی دفتر خارجہ نے اس بات کی تصدیق کر دی ہے کہ واشنگٹن میں قائم فلسطینی لبریشن آرگنائزیشن (پی ایل او) کا دفتر بند کرنے کے احکامات دیے جا رہے ہیں۔ اسرائیل کی حمایت میں کیا جانے والا یہ تازہ ترین امریکی اقدام ہے۔

امریکی دفتر خارجہ کی خاتون ترجمان ہیتھر نوئرٹ کے بقول پی ایل او کو ایسے اقدامات کے لیے دفتر بنانے کی اجازت دی گئی تھی، جن کا مقصد اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کے درمیان دیرپا اور مکمل امن قائم کرنا ہو۔ ان کے مطابق فلسطینی حکام اسرائیل کے ساتھ براہ راست اور با معنی مذاکرات کرنے کے لیے کوئی اقدامات نہیں کر رہے، جس کی وجہ سے یہ مشن بند کیا جا رہا ہے۔

ٹرمپ انتظامیہ نے گزشتہ برس ہی فلسطینی حکام کو یہ پیغام دے دیا تھا کہ اگر اسرائیل کے ساتھ مذاکرات کا آغاز نہ کیا گیا تو واشنگٹن میں ان کا مشن دفتر بند کر دیا جائے گا۔ ایسوسی ایٹڈ پریس نے تین سفارتی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس کا باقاعدہ اعلان صدر ٹرمپ کے قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن آج پیر کے روز کرنے والے ہیں۔

فلسطینی عہدیدار صائب ایریکات نے اس امریکی فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے، ’’یہ مزید ایک تصدیق ہو گئی ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ تمام فلسطینیوں کو سزا دینے کی پالیسی جاری رکھے ہوئے ہے۔ ان پالیسیوں میں صحت، تعلیم اور انسانی خدمات کے لیے مالی امداد کی کٹوتی جیسی پالیسیاں شامل ہیں۔‘‘
فلسطین لبریشن آرگنائزیشن (پی ایل او) کو تمام فلسطینیوں کی نمائندہ جماعت سمجھا جاتا ہے۔ امریکا فلسطینی ریاست کو تسلیم نہیں کرتا لیکن اس کے باوجود اس نے پی ایل او کو واشنگٹن میں ایک سفارتی عمارت فراہم کر رکھی ہے تاکہ فلسطینی حکام کے ساتھ مذاکراتی عمل جاری رہے۔

واشنگٹن میں پی ایل او کے وفد کے سربراہ حسام زیڈ نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ فلسطین کے حوالے سے ’عشروں پرانے امریکی وژن اور رابطوں کو تار تار‘ کر دینا چاہتی ہے۔ فلسطینی سفیر حسام زیڈ کا کہنا تھا، ’’سیاسی بلیک میلنگ کے لیے انسانی حقوق اور ترقیاتی امداد کو استعمال کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔‘‘

ڈونلڈ ٹرمپ اقتدار میں آنے کے بعد سے فلسطینیوں کو متعدد دھچکے پہنچا چکے ہیں۔ حال ہی میں ٹرمپ انتظامیہ نے اقوام متحدہ کے اس ادارے کی مالی امداد بند کر دی تھی، جو فلسطینی مہاجرین کو امداد فراہم کرتا ہے۔ اسی طرح یروشلم میں ان ہسپتالوں کی امداد بھی بند کر دی گئی ہے، جو فلسطینیوں کو خدمات فراہم کرتے ہیں۔

ٹرمپ انتظامیہ نے متنازعہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرتے ہوئے اپنا سفارت خانہ بھی وہاں منتقل کر دیا تھا۔ جس کے بعد احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع ہوا تھا اور درجنوں فلسطینی مارے گئے تھے۔

ٹرمپ نے فلسطینیوں اور اسرائیل کے مابین ایک ’حتمی معاہدہ‘ کروانے کا وعدہ کر رکھا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
مودی حکومت کی ناکامی‘ کے خلاف اپوزیشن جماعتوں کے ملک گیر احتجاج میں تشدد
چینی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کے درمیان اقتصادی راہداری منصوبے کی رفتار بڑھانے پر اتفاق
Translate News »