سری لنکا کے وزیراعظم مہندا راجاپاکسے مستعفی ہوگئے     No IMG     سپریم کورٹ نے افضل کھوکھر اور سیف الملوک کھوکھر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دے دیا     No IMG     بھارتی ارب پتی مکیشن امبانی کی شادی پر خزانوں کے منہ کھُل گئے     No IMG     ایرانی وزیر خارجہ کی قطر کے وزير اعظم سے ملاقات     No IMG     وزیر اعظم کا دہشت گردوں کا آخری حد تک پیچھا کرنے کا عزم     No IMG     فرانسیسی پولیس کا معذور افراد پر بھی ظلم و ستم     No IMG     چین کینیڈین شہریوں کو رہا کرے، امریکی وزیر خارجہ     No IMG     بھارتی ریاست کرناٹک میں زہریلی خوراک کھانے سے تقریباً ایک درجن یاتریوں کی ہلاکت     No IMG     یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرتے ہیں، آسٹریلیا     No IMG     برطانوی وزیراعظم ٹیریزا مے کے پاس اب فقط چار آپشنز موجود ہیں۔     No IMG     سپریم کورٹ کا دہری شہریت والے ملازمین کے خلاف کارروائی کا حکم     No IMG     باردوی سرنگ کے دھماکے میں 6 سکیورٹی اہلکار ہلاک     No IMG     آئی ایم ایف سے پیکج صرف پاکستان کے مفاد کو مد نظر رکھ کر لیا جائے گا۔ وزیر خزانہ اسد عمر     No IMG     ہنگری میں غلام ایکٹ کے خلاف مظاہرے     No IMG     امریکی ایوان نمائندگان نے روہنگیا مسلمانوں پر بربریت کونسل کشی قرار دینے کی قرارداد بھاری اکثریت سے منظور     No IMG    

امريکی فوج کے ايک اعلیٰ اہلکار نے پاکستان اور امريکا کے باہمی تعلقات کو برقرار رکھنے کی وکالت کی
تاریخ :   16-01-2018

امريکی  (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو)فوج کے ايک اعلیٰ اہلکار نے پاکستان اور امريکا کے باہمی تعلقات کو برقرار رکھنے کی وکالت کی ہے جبکہ ايک اعلیٰ امريکی سفارت کار نے بھی پاکستانی حکام سے ملاقات ميں دہشت گردی کے خاتمے کے ليے پاکستان کے کردار کو سراہا۔

امريکی فوج کے ايک اعلیٰ اہلکار، ميرين جنرل جوزف ڈنفورڈ نے کہا ہے کہ حاليہ کشيدگی کے باوجود وہ پاکستان اور امريکا کے باہمی تعلقات کو بہتر بنانے کے ليے پر عزم ہيں۔ انہوں نے يہ بيان رواں ہفتے کے آغاز پر رپورٹرز کے ايک گروپ سے بيلجيم کے دارالحکومت برسلز ميں بات چيت کے دوران ديا۔ جنرل ڈنفورڈ نے کہا کہ اگرچہ دونوں ممالک تمام معاملات پر مشترکہ موقف نہيں رکھتے، تاہم واشنگٹن اسلام آباد کے ساتھ زيادہ کارآمد اور با اثر دوطرفہ روابط کا خواہاں ہے۔

امريکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے رواں ماہ کے آغاز پر اپنے ٹوئٹر پيغامات ميں اسلام آباد حکومت پر کڑی تنقيد کی تھی۔ انہوں نے لکھا تھا کہ واشنگٹن انتظاميہ برس ہا برس سے اسلام آباد کی مالی معاونت کرتی آئی ہے۔ تاہم اس کے بدلے ميں اسے صرف دھوکا ملا اور افغانستان ميں غير ملکی دستوں پر حملے کرنے والے طالبان عسکريت پسندوں کو پاکستان ميں مسلسل محفوظ پناہ گاہيں فراہم کی گئیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ کی ان ٹويٹس پر پاکستان ميں سخت رد عمل ظاہر کيا گيا تھا۔ يہ امر اہم ہے کہ افغانستان ميں سولہ سال سے جاری جنگ ميں پاکستان، امريکی و ديگر غير ملکی افواج کا ایک اہم اتحادی ملک ہے۔ علاوہ ازيں افغانستان ميں تعينات غير ملکی دستوں کے ليے پاکستان ایک بہت اہم سپلائی روٹ بھی ہے۔

جنرل ڈنفورڈ نے اپنے بيان ميں واضح کيا کہ پاکستانی فوج کے ساتھ عسکری سطح پر بات چيت امريکی افواج کے مرکزی کمان کے سربراہ جنرل جوزف ووٹل ہی کريں گے۔ ان کے بقول تعلقات بہتر بنانے کے ليے امريکی وزير دفاع جيمز میٹس بھی ضرورت پڑنے پر بات چيت کے اس عمل ميں شريک ہو سکتے ہيں۔

دريں اثناء امریکی وزارت خارجہ کی ايک اعلیٰ اہلکار ايلس ويلز نے بھی پاکستان کی خارجہ سيکرٹری تہمينہ جنجوعہ سے گزشتہ روز اسلام آباد میں ایک ملاقات کی۔ بعد ازاں اسلام آباد ميں وزارت خارجہ کی جانب سے اس بارے ميں جاری کردہ ایک بيان ميں کہا گيا کہ ایلس ويلز نے دہشت گردی کے انسداد کے ليے پاکستان کی کوششوں کو سراہا اور شدت پسندی کے خاتمے کے ليے انٹيلی جنس امور ميں مزيد تعاون کی ضرورت پر بھی زور ديا۔

Print Friendly, PDF & Email
آرمی چیفجنرل قمر جاوید باجوہ 2روزہ سرکاری دورے پرسری لنکا پہنچ گئے،گارڈآف آنرپیش کیا گیا
آسٹریا,پاکستانیوں اور افغانوں سمیت 45 ’منشیات فروش‘ گرفتار,آسٹرین پولیس

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »