بلاول جیل گئے توتحریک چلاوں گا:شیخ رشید     No IMG     ناروے کے دارالحکومت اوسلو میں پاکستانیوں اور کشمیریوں کا بھارت کے خلاف مظاہرہ     No IMG     برطانوی پارلیمنٹ کے 45 ارکان نے کشمیر پر اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس کو خط     No IMG     مکہ مکرمہ میں غلاف کعبہ تبدیل کرنے کی روح پرور تقریب     No IMG     افریقی ملک تنزانیہ میں آئل ٹینکر میں دھماکے سے 57 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی     No IMG     بھارت کی کسی بھی مہم جوئی کا جواب دیاجائیگا،میجر جنرل آصف غفور     No IMG     اپوزیشن نے سلیکٹڈ وزیراعظم اور اس کی حکومت کوماننے سے انکار کردیا۔     No IMG     مریم نواز کو چوہدری شوگر ملز کیس میں 21 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے     No IMG     وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اہم سفارتی مشن پر چین پہنچ گئے     No IMG     نیب قانون کا یہ مطلب نہیں کہ جیسے چاہیں استعمال کریں، چیف جسٹس پاکستان آصف سعید کهوسہ     No IMG     سابق صدر نے حکومت کی بینڈ بجا دی     No IMG     اسلام آباد جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے صدارتی ریفرنس چیلنج کردی     No IMG     اسلامی تعاون کی تنظیم او آئی سی کا اجلاس منعقد ہوا جس میں بھارت کے زیر انتظام کشمیر کی صورتحال پر تشویش کا اظہار     No IMG     بھارتی لوک سبھا میں مقبوضہ کشمیر کو دو حصوں میں تقسیم کرنے کا بل منظور     No IMG     مقبوضہ کشمیرسے بھارتی قبضہ ختم کرانا سلامتی کونسل کی ذمہ داری ہے، ملیحہ لودھی     No IMG    

افریقہ

  • افریقی ملک تنزانیہ میں آئل ٹینکر میں دھماکے سے 57 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی (8/10/2019)

    دارالسلام(ورلڈفاسٹ نیوزفاریو–10 اگست 2019) افریقی ملک تنزانیہ میں آئل ٹینکر میں دھماکے سے 57 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے۔تنزانیہ کے سرکاری ٹی وی کے مطابق آئل ٹینکر میں دھماکے کا واقعہ دارالحکومت دارالسلام سے 120 میل مغرب میں موروگورو کے علاقے میں پیش آیا۔
    میڈیا رپورٹس کے مطابق ٹینکر کو حادثہ پیش آنے کے بعد عوام کی بڑی تعداد آئل جمع کرنے میں مصروف تھی کہ دھماکا ہو گیا۔
    مقامی میڈیا کے مطابق دھماکے کے نتیجے میں 57 افراد ہلاک اور 65 زخمی ہوئے۔
    حکومتی ترجمان نے سوشل میڈیا پر جاری بیان میں آئل ٹینکر کو پیش آنے والے حادثے کے نتیجے میں ہونے والے جانی نقصان پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔

  • مصر دارالحکومت قاہرہ میں ہسپتال کے باہر دھماکہ، 19 افراد جاں بحق، 30 زخمی (8/5/2019)

    قاہرہ (ورلڈفاسٹ نیوزفاریو–05 اگست 2019)مصر ی دارالحکومت قاہرہ کے ایک کینسر ہسپتا ل کے باہر دھماکے کے نتیجے میں 19 افراد جاں بحق اور 30 شدید زخمی ہو گئے۔
    غیر ملکی خبر رساں ادارے نے مصر کے محکمہ صحت کی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ غلط سمت سے آنے والی ایک کار تین گاڑیوں سے ٹکرا گئی جس کے نتیجے میں دھماکہ ہوا ،گاڑیوں کو آگ لگ گئی ۔
    مصر کے پبلک پراسیکیوٹر کے ایک بیان کے مطابق اس واقعہ کی تحقیقات ابھی جاری ہیں اور اس وقت مزید کوئی بات سرکاری سطح پر واضح نہیں کی گئی ہے۔
    مصر میں امراض کینسر کے علاج کے لئے کام کرنے والے ادارے کا علاقہ قاہرہ کے عین وسط میں واقع ہے اور اس علاقے میں کاروباری اوقات کے دوران کافی رش دیکھنے میں آتا ہے۔
    مصری وزارت صحت کے مطابق دھماکے کی شدت سے کینسر ہسپتال کے اندرونی ڈھانچے کو بھی نقصان پہنچا ہے۔
    وزارت صحت کا کہنا تھا کہ ہسپتال سے تمام مریضوں کو ایک اور قریبی ہسپتال منتقل کردیا ہے۔

  • قطر عالمی امن و سلامتی کے لیے سنگین خطرہ ہے قطر کو سزا دینے کا وقت آ پہنچا ہے: جنرل المسماری (7/24/2019)

    لیبیا ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو – 24 جولائی2019ء) لیبیا کی قومی فوج کے ترجمان میجر جنرل احمد المسماری نے کہا ہے کہ امریکی اخبار ‘نیویارک ٹائمز’ نے صومالیہ میں ہونے والے بم دھماکوں اور دہشت گردی کے واقعات میں قطری انٹیلی جنس اداروں کے ملوث ہونے کے ناقابل تردید شواہد ثابت کر دیے ہیں۔
    ان کا کہنا ہے کہ قطر صومالیہ اور بعض دوسرے افریقی ملکوں میں موجود دہشت گردوں کی مدد کر رہا ہے۔
    میڈیا سےبا ت کرتے ہوئے جنرل المسماری کا کہنا تھا کہ ہم ماضی میں بار بار ذرائع ابلاغ اور دوسرے علاقائی اور عالمی فورمز پر لیبیا میں قطر کی دہشت گردانہ سرگرمیوں پر صدائے احتجاج بلند کرچکے ہیں۔ ہم نے عالمی سطح‌ پر قطری دہشت گردی کے ٹھوس شواہد بھی پیش کیے۔
    ان کا مزید کہنا تھا کہ قطر کی اہم شخصیات جن میں سفارت کار اور انٹیلی جنس عہدیدار شامل ہیں دہشت گردی کی معاونت ملوث پائے گئے ہیں۔ ہم باربار قطر کی دہشت گردوں کو پیسے اور اسلحہ کی فراہمی، لاجسٹک اور سیاسی معاونت کے ثبوت پیش کرتے رہے ہیں۔ اب وقت آگیا ہے کہ قطر کو عرب اور افریقی ملکوں‌ میں دہشت گردی کی معاونت کی سزا دی جائے۔
    انہوں نے مزید کہا کہ ہم زور دے کر کہتے چلے آرہے ہیں کہ قطر عالمی امن و سلامتی کے لیے سنگین خطرہ ہے اور خطے میں دہشت گردی کو توانائی فراہم کرنے کا مرکز ہے۔ المسماری نے قطر کے سیاسی، ابلاغی،سفارتی اور دیگر تمام شعبوں میں بائیکاٹ کی ضرورت پر زور دیا۔
    خیال رہے کہ حال ہی میں امریکی اخبار ‘نیویارک ٹائمز’ نے اپنی رپورٹ میں بتایا تھا کہ قطری انٹیلی جنس ادارے صومالیہ میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث ہیں۔ صومالیہ میں دہشت گردی کی کارروائیوں اور بم دھمکاکوں کا مقصد قطری مفادات کو فروغ دینا اور مخالفین کو کم زور کرنا تھا۔
    اخباری رپورٹ کے مطابق امیر قطر کے ایک مقرب کاروباری شخص خلیفہ المہندی نے موغادیشو میں متعین قطری سفیر سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ شدت پسندوں‌ نے قطری مفادات کے دفاع کے لیے بوصاصو شہر میں بم دھماکے کیے۔

  • صومالیہ میں خود کش حملے صحافیوں اور سیاست دانوں سمیت 26 افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی (7/13/2019)

    صومالیہ ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو ۔ 13 جولائی2019ء) صومالیہ میں ایک ہوٹل پر خود کش حملے اور فائرنگ کے نتیجے میں صحافیوں اور سیاست دانوں سمیت 26 افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہو گئے۔ اطلاعات کے مطابق شورش زدہ صومالیہ کے ہوٹل میں اس وقت خودکش حملہ کیا گیا جب وہاں مختلف سیاسی جماعتوں کے قائدین کا اہم اجلاس جاری تھا اور اس موقع پر سخت سکیورٹی کے باوجود بارود سے بھری کار کو ہوٹل کے مرکزی دروازے پر ٹکرا کر دہشت گرد اندر داخل ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

    درجن سے زائد دہشت گردوں نے ہوٹل کے اندر گھس کر اندھا دھند فائرنگ کی اس دوران صومالیہ کی فوج نے بھی ہوٹل کا گھیراؤ کرلیا اور 3 گھنٹے کی گھمسان کی جنگ کے بعد ہوٹل کو دہشت گردوں کے قبضے سے واگزار کر والیا تاہم اس دوران دو طرفہ فائرنگ سے 26 افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہو گئے۔

    خود کش حملے اور فائرنگ سے کینیا کے 2 صحافی بھی ہلاک ہوئے جو سیاسی قائدین کے اجلاس کی کوریج کے لیے ہوٹل میں موجود تھے، اس کے علاوہ صومالیہ میں ہونے والے صدارتی انتخاب کے ایک امیدوار بھی ہلاک ہوگئے جب کہ دیگر ہلاک ہونے والوں میں امریکی، برطانوی، کینیڈی شہری کے علاوہ کینیا اور تنزانیہ کے باشندے بھی شامل ہیں۔

    صومالیہ کی ریاست جوبالند کے صدر احمد محمد کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کیسمایو کے ہوٹل کو شدت پسندوں سے آزاد کروالیا گیا ہے، درجنوں افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کیا گیا جب کہ اس دوران مقابلے میں داعش سے منسلک دہشت گرد تنظیم الشباب سے تعلق رکھنے والے 4 دہشت گرد بھی مارے گئے۔

Translate News »