چودھری پرویزالٰہی سے فردوس عاشق اعوان کی ملاقات     No IMG     یوکرین کے مزاحیہ اداکار ملک کے صدر منتخب     No IMG     وزیروں کو نکالنے سے سلیکٹڈ وزیراعظم کی نااہلی نہیں چھپے گی, بلاول بھٹو زرداری     No IMG     ایران کے صدر حسن روحانی نے تہران میں سعد آباد محل میں پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا باقاعدہ اور سرکاری طور پر استقبال     No IMG     بھارت اور چین کے مابین پیر کے روز بیجنگ میں باہمی فیصلہ کن مذاکرات کا آغاز     No IMG     بھارتی وزیر اعظم,ہمارا پائلٹ واپس نہ کیا جاتا تو اگلی رات خون خرابے کی ہوتی     No IMG     ملکی سیاسی پارٹیاں ووٹ تو غریبوں ،محنت کشوں کے نام پر لیتی ہیں مگر تحفظ جاگیرداروں اور مافیاز کو دیتی ہیں ,جواد احمد     No IMG     افغان سپریم کورٹ نے صدر کے انتخاب تک صدر اشرف غنی کی مدت صدارت میں توسیع کردی     No IMG     آزاد کشمیر میں منڈا بانڈی کے مقام پر ایک جیپ کھائی میں گرنے سے 5 افراد ہلاک     No IMG     مصرمیں صدرکےاختیارات میں اضافے کےلیے ہونےوالے تین روزہ ریفرنڈم میں ووٹ ڈالنےکا سلسلہ جاری ہے     No IMG     لاہور میں 3 منزلہ خستہ حال گھر زمین بوس ہونے کے نتیجے میں خاتون سمیت 6 افراد جاں بحق جبکہ 4 افراد زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان ایران کے پہلے سرکاری دورے پر تہران پہنچ گئے     No IMG     سری لنکا میں کل ہونے والے آٹھ بم دھماکوں کے نتیجے میں 300 افراد ہلاک اور 500 زخمی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے مکران کوسٹل ہائی وے پر دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکام سے واقعے پر رپورٹ طلب کر لی     No IMG     افغانستان اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ایک مرتبہ پھر کھٹائی میں پڑتے دکھائی دے رہے ہیں     No IMG    

اسرائیل کو تین آبدوزوں کی فروخت، جرمن
تاریخ :   23-10-2017

برلن حکومت (ورلڈ فاسٹ نیوز فار یو)  نے اسرائیل کو تین جرمن آبدوزوں کی فروخت کے طویل عرصے سے تعطل کے شکار منصوبے کی بالآخر منظوری دی دے ہے۔ اس دفاعی معاہدے کی مالیت ڈیڑھ ارب یورو بنتی ہے اور اس پر دستخط آج پیر تئیس اکتوبر کے روز کیے جا رہے ہیں۔

وفاقی جرمن دارالحکومت برلن سے موصولہ مختلف نیوز ایجنسیوں کی رپورٹوں کے مطابق جرمن حکومت کے ترجمان اشٹیفن رائبرٹ نے پیر تئیس اکتوبر کے روز صحافیوں کو بتایا کہ اسرائیل کو یہ آبدوزیں بہت بڑے جرمن صنعتی ادارے ’تِھسّن کرُپ میرین سسٹمز‘ (TKMS) کی طرف سے مہیا کی جائیں گی۔

اشٹیفن زائبرٹ نے کہا کہ اسرائیل اور جرمنی کے مابین یہ دفاعی تجارتی منصوبہ طویل عرصے سے تعطل کا شکار تھا، جس کی اب نہ صرف برلن میں وفاقی حکومت نے منظوری دے دی ہے بلکہ اسی منصوبے سے متعلق دونوں ممالک کی حکومتوں کے مابین ایک باقاعدہ معاہدے کی دستاویز پر آج تئیس اکتوبر کے روز دستخط بھی کیے جا رہے ہیں۔

میرکل حکومت کے ترجمان کے مطابق آبدوزوں کی فروخت کے حوالے سے جرمن اور اسرائیلی حکومتوں کے مابین معاہدہ اس بارے میں ہو گا کہ برلن حکومت اس ڈیل کے لیے اسرائیل کو مالی امداد کی صورت میں کتنے وسائل مہیا کرے گی۔

اشٹیفن زائبرٹ نے بتایا کہ جرمنی ان آبدوزوں کی خریداری کے لیے اسرائیل کو کتنی رقوم دے گا، یہ بات خفیہ ہی رکھی جائے گی لیکن برلن کی طرف سے اس امداد کی فراہمی کی وجہ یہ ہے کہ جرمنی یہ محسوس کرتا ہے کہ اسرائیل کی ریاستی سلامتی کے حوالے سے اس پر ایک خاص ذمے داری عائد ہوتی ہے۔یہ آبدوزیں جرمن صنعتی ادارے ٹی کے ایم ایس کی طرف سے شمالی جرمنی کے بندرگاہی شہر کِیل میں تیار کی جائیں گی۔ اب تک برلن میں وفاقی چانسلر کے دفتر نے اس فروخت کی منظوری اس لیے نہیں دی تھی کہ اسے شبہ تھا کہ شاید اس معاہدے میں رشوت کے طور پر کچھ ادائیگیاں کی گئی تھیں۔ تاہم حکومتی چھان بین کے بعد یہ ثابت ہو گیا تھا کہ یہ معاہدہ شفاف تھا اور اس سلسلے میں کسی قسم کی کوئی غیر شفاف مالی ادائیگیاں نہیں کی گئی تھیں۔

اشٹیفن زائبرٹ نے نیوز ایجنسی ڈی پی اے کو بتایا کہ تعطل کے شکار اسی معاہدے کے سلسلے میں اسرائیل میں بھی چھان بین کی گئی تھی، جس کے نتیجے میں کوئی بےقاعدگی سامنے نہیں آئی تھی۔

ڈی پی اے نے لکھا ہے کہ اسی معاہدے کے سلسلے میں اسرائیل میں حکام نے نہ صرف جرمن ادارے TKMS کے ایک سابق کاروباری پارٹنر کو گرفتار کر لیا تھا بلکہ اسی پس منظر میں اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو کے دفتر کے ایک سابق سربراہ اور ایک سابق اسرائیلی وزیر کو بھی حراست میں لے لیا گیا تھا۔

اسی اسکینڈل کی وجہ سے خود اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو بھی کافی زیادہ دباؤ کا شکار رہے تھے۔ ان پر الزام تھا کہ انہوں نے اس معاہدے سے متعلق ملکی فوج اور وزارت دفاع کی خواہشات کے برعکس اپنی مرضی منوانے کی کوشش کی تھی۔

نیوز ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس نے لکھا ہے کہ اسرائیل کو مستقبل میں مہیا کی جانے والی یہ تین نئی جرمن ساختہ آبدوزیں 2027ء سے ملکی بحریہ کے استعمال میں آ جائیں گی۔ ان تین آبدوزوں سے قبل اسرائیل گزشتہ دو عشروں کے دوران جرمنی سے مجموعی طور پر چھ دیگر آبدوزیں پہلے ہی خرید چکا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
نیب نے نگران جج کو اسحاق ڈار اور شریف خاندان کیخلاف ریفرنسز کی پیشرفت رپورٹ جمع کروا دی
ٹلرسن اچانک دورے پر افغانستان میں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Translate News »