بحریہ ٹاون کی انتظامیہ کی طرف سے کراچی میں مذکورہ سوسائٹی کو قانونی دائرے میں لانے کی لیے 350 ارب کی پیشکش     No IMG     وزیراعظم نے آئی جی پنجاب کی کارکردگی پر برہمی کا اظہار     No IMG     وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے سانحہ ساہیوال پر تشکیل دی جانے والی جے آئی ٹی کو مزید وقت دینے سے انکار کر دیا ہ     No IMG     ای سی جی رپورٹ میں نواز شریف کے دل کا سائز بڑھا ہوا نظر آیا۔ طبی معائنے کے بعد اسپتال داخل کرنے کا فیصلہ     No IMG     انڈونیشیا میں ایک بار پھر 6.6 شدت کا زلزلہ ریکارڈ کیا گیا     No IMG     حب کے قریب بیلہ کراس پر مسافر کوچ اور ٹرک کے درمیان تصادم کے بعد آگ لگنے سے جاں بحق افراد کی تعداد 27 ہوگئی     No IMG     پنجاب اور سندھ کے متعدد شہروں میں دھند کا راج برقرار     No IMG     سانحہ ساہیوال کی فائل دبنے کا خدشہ پیدا ہو گیا ، حادثے کی جگہ کے تمام شواہد ضائع کر دیئے     No IMG     مسلم لیگ ق نے کا تحریک انصاف کے رویے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کو تحفظات سے آگاہ کرنے کا فیصلہ     No IMG     تحریک انصاف نے سابق صدرآصف علی زرداری کی نااہلی کے لیے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی     No IMG     وزیراعظم عمران خان نے سانحہ ساہیوال پر بغیر تحقیقات کے بیانات دینے پر وزرا اور پنجاب پولیس پر سخت اظہار برہمی     No IMG     وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کی جسٹس ثاقب نثارپرتنقید، موجود چیف جسٹس کی تعریف     No IMG     برطانیہ میں بھی برف باری سے شدید سردی     No IMG     برطانیہ کے سابق وزیراعظم کے جان میجر نے موجودہ وزیرِاعظم تھریسا مے سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ یورپ سے علیحدگی (بریگزٹ) پر ریڈ لائن سے پیچھے ہٹ جائیں     No IMG     میکسیکو میں پیٹرول کی پائپ لائن میں دھماکے اور آگ لگنے کے حادثے میں ہلاکتوں کی تعداد 73 ہوگئی     No IMG    

اسحاق ڈار کا آئی ایم ایف جانےمیں کوئی قصورنہیں وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر
تاریخ :   13-10-2018

اسلام آباد ( ورلڈ فاسٹ نیوزفاریو ) وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ اسحاق ڈار کے آئی ایم ایف کے پاس جانے میں کوئی قصور نہیں، ن لیگ کے پاس آئی ایم ایف کے علاوہ کوئی آپشن نہیں تھا، اسی طرح ہمارے پاس بھی اب کوئی آپشن نہیں۔ انہوں نے آج یہاں اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ

آئی ایم ایف کے پاس جا رہے ہیں لیکن قوم سلامتی پر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔
چین کے قرضوں کی تفصیلات آئی ایم ایف کو دینے میں کوئی حرج نہیں۔ سی پیک کے قرضوں کا عوام پر کوئی بوجھ نہیں ہے۔ آئی ایم ایف کا قرضہ سی پیک کی ادائیگی پر خرچ نہیں ہوگا۔ سی پیک قرضوں کی واپسی کو چین کے ساتھ جوڑنے کا امریکی الزام درست نہیں۔ 9 ارب ڈالر کے قرضوں کی واپسی میں چین کا صرف 30 کروڑ قرض ہے۔
چین کو ہم نے آئندہ 3 سال میں 90 ارب ڈالر ادا کرنے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے زرمبادلہ کے ذخائر مزید گرتے جارہے ہیں۔ زرمبادلہ کے ذخائر 8ارب رہ گئے ہیں۔ انہوں نے آئی ایم ایف کے پاس قرض مانگنے کیلئے جانے پر عوامی ردعمل کے جواب میں کہا کہ پاکستان نے 18مرتبہ آئی ایم ایف سے معاہدہ کیا، جس میں 7 بار فوجی حکومتیں اور11 بار سویلین حکومتیں آئی ایم ایف کے پاس جاچکی ہیں۔ لیکن ایسے لگ رہا ہے جیسے اب ہم نے کوئی انوکھا کام کردیا ہے۔
آئی ایم ایف کے پاس جانے پر اس بار زیادہ ردعمل آیا ہے۔ اسد عمر نے کہا کہ کبھی نہیں کہا کہ آئی ایم ایف کے پاس نہیں جائیں گے۔ بدتر معاشی صورتحال کے باعث آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا۔ آئی ایم ایف کے پاس وزیراعظم عمران خان اور دوست ممالک کی مشاورت سے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت اڑھائی مہینے بعد ہی آئی ایم ایف کے پاس چلی گئی تھی۔
کیونکہ ن لیگ کے پاس آئی ایم ایف کے پاس جانے کے علاوہ کوئی آپشن نہیں تھا، اس میں اسحاق ڈار کا کوئی قصور نہیں۔ ہمارے پاس بھی اب کوئی آپشن نہیں ہے۔ تاہم جب حکومت چھوڑ کر جائیں گے توحالات مختلف ہوں گے۔ آئی ایم ایف کی شرائط ماننے والی ہوئیں تو نظر ثانی کرسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب ، چین یا کسی دوسرے دوست ملک نے قرض دینے کیلئے کوئی شرائط نہیں رکھیں۔
انہوں نے کہا کہ ایران پر امریکی پابندیوں سے تیل کی قیمتیں بڑھیں گی۔تیل کی قیمتیں بڑھنے سے پاکستان کومزید نقصان ہوگا۔ تیل کی قیمتوں میں اضافے سے درآمدی بل میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ کرنٹ خسارہ 18ارب ڈالر تک پہنچ چکا ہے۔ بیل آؤٹ پیکج معیشت کیلئے ناگزیر ہے۔آئی ایم ایف کے پاس جانے کی بڑی وجہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ہے۔
کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ہر مہینے 2 ارب روپے بڑھ رہا ہے۔گزشتہ حکومت ختم ہوئی تو18ارب سے زرمبادلہ کے ذخائر8 ارب تک آگئے ہیں۔ستمبر 2018ء میں 8 ارب 40 کروڑ روپے تک آگئے ہیں۔ واضح رہے وزیرخزانہ اسد عمر اور حکومت کو آئی ایم ایف کے پاس جانے پر شدید ردعمل کا سامنا ہے۔ کیونکہ تحریک انصاف کی حکومت نے انتخابی مہم اور اپنے جلسوں میں باربار اعلان کیا تھا کہ قرض نہیں مانگیں گے۔
کبھی آئی ایم ایف کے پاس قرض مانگنے نہیں جائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ آئی ایم ایف سے بھیک مانگنے سے بہتر ہے خودکشی کرلوں۔ تاہم پی ٹی آئی رہنماؤں کوان کے انہی نعروں کے باعث اب شدید ردعمل کا سامنا ہے۔ دوسری جانب اگر دیکھا جائے تو ملکی کرنٹ خسارے اور گرتی ہوئی معاشی صورتحال کو سنبھالا دینے کیلئے آئی ایم ایف کے پاس جانا کوئی بڑی بات نہیں۔ حکومت کو کوشش کرنی چاہیے کہ نئے قرضوں کا بوجھ عوام پر نہ پڑنے دیا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
این اے 131 سے رہنما تحریک انصاف ہمایوں اختر کو ٹکٹ دینے کو بہت بڑی غلطی
امریکی صدرکی سعودی عرب کو سنگین نتائج کی دھمکی
Translate News »