امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔     No IMG     افریقی ملک مراکش کی عدالت نے ایک بچی کی اجتماعی عصمت ریزی کے گھناؤنے واقعے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات شروع     No IMG     دوست کو چاقو کے وارسے قتل کرنے والی حسینا کو سزائے موت     No IMG     بہاولپور جلسے میں کم تعداد پر عمران خان برہم لیکن پارٹی عہدیداران نے ایسی بات بتادی کہ کپتان کیساتھ جہانگیر ترین بھی حیران پریشان     No IMG     اکرام گنڈا پور کے قافلے پر خود کش حملہ، ڈرائیور شہید، تحریک انصاف کے امیدوار اور 2 پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد زخمی     No IMG     پاکستان اچھا کھیلاہم بہت براکھیلے،زمبابوین کھلاڑی کا اعتراف     No IMG     پاکستان سمیت دنیا بھر میں28 جولائی کو مکمل چاند گرہن ہوگا     No IMG     حنیف عباسی کا فیصلہ انصاف کے اصولوں پر مبنی نہیں , شہباز شریف     No IMG     سعودی عرب غیر ملکی ٹرک ڈرائیوروں پر پابندی سے ماہانہ 200ملین ریال کا نقصان ہوگا     No IMG     امریکہ میں کال سینٹر اسکینڈل میں ملوث 21 بھارتی شہریوں کو20 سال تک کی سزا     No IMG     اسرائیی حکومت نے القدس میں سرنگ کی مزید کھدائی کی منظوری دے دی     No IMG     ویتنام کے شمالی علاقوں میں سمندری طوفان سے 20 افراد ہلاک اور14 زخمی ہوگئے     No IMG     شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا ملنے سے اب این اے 60 راولپنڈی کا الیکشن یکطرفہ ہو جائے گا     No IMG     حنیف عباسی نے انسداد منشیات عدالت کی جانب سے دی گئی عمرقید کو ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان     No IMG     اسرائیل کے مجرمانہ حملوں میں 4 فلسطینی شہری شہید     No IMG    

آہم خبریں

  • امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔

    ایران ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) کے صدر حسن روحانی نے بیرون ملک ایرانی سفراء کے اجتماع  سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی قوم امریکی دباؤں میں ہر گز نہیں آئے گي ۔ امریکی صدر شیر کی دم کے ساتھ کھیلنا ترک کردے ۔ مزاحمت یا تسلیم کے علاوہ کوئي اور راستہ نہیں۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایرانی سفراء بیرون ملک ایرانی تاریخ، ادب ، ثقافت اور ایرانی قوم کے نمائندے ہیں ۔ ایرانی سفراء تمام ایرانیوں کے نمائندہ ہیں۔

    امریکہ کی موجودہ حکومت نے عالمی برادری کے ساتھ جنگ و جدال شروع کررکھا ہے امریکی حکومت صرف اپنے مفادات کو تحفظ فراہم کرنے کی کوشش کررہی ہے اور دوسرے ممالک کے مفادات کو پامال کررہی ہے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ امریکہ کی طرف سے بین الاقوامی حقوق کی مخالفت، عالم اسلام کی مخالفت اور مسئلہ فلسطین کی مخالفت  اس دور میں بام عروج پر پہنچی ہوئی ہے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ اسرائيل کی ماہیت اور حقیقت کے بارے میں ہماری بات بالکل درست  ثابت ہوئي ہے کہ اسرائیل انسانی حقوق کا سب سے بڑا دشمن ہے آج ثابت ہوگيا کہ اسرائیلی حکومت نسل پرست حکومت ہے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ آج دنیا میں ایرانی سفارتکاروں کی بہت بڑي ذمہ داری ہے ۔ امریکہ ایرانی قوم کا سب سے بڑا دشمن ہے اور ہمیں دشمن کی معاندانہ پالیسیوں کے بارے میں ہوشیار اور آگاہ رہنا چاہیے۔

    صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایران اور ایرانی قوم کے خلاف امریکی سازشوں کا سلسلہ جاری ہے ہم نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کے ذریعہ ایران کے ایٹمی پروگرام کے خلاف 12 سالہ امریکی سازشوں کو ناکام بنادیا۔ ہم نے علاقائي ممالک کی دہشت گردی کے خلاف حمایت کرکے داعش کا عراق و شام سے خاتمہ کردیا ۔ہمارا ہمسایہ ممالک کے ساتھ قریبی تعاون جاری ہے۔ امریکہ ایرانی قوم کے ساتھ علاقائی اور عالمی اقوام کا بھی دشمن ہے اور ایرانی قوم کو امریکہ کی ظالمانہ اور تسلط پسندانہ  پالیسیوں کے خلاف استقامت اور پائداری پر فخر حاصل ہے۔ ہم امریکہ کی ظالمانہ اور تسلط پسندانہ پالیسیوں کا مقابلہ جاری رکھیں گے اور امریکہ کو اللہ تعالی کی مدد اور نصرت کے ساتھ شکست سے دوچار کردیں گے۔

  • دوست کو چاقو کے وارسے قتل کرنے والی حسینا کو سزائے موت

    کینیا ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) کی ایک عدالت نے 24 سالہ ملکہ حسن روتھ کماندی کو اپنے بوائے فرینڈ کو چاقو کے پے درپے وار کرکے قتل کرنے کے جرم میں سزائے موت سنائی ہے۔

     سابق ملکہ حسن کماندی پرانسانی حقوق کی تنظیموں کی طرف سے بھی شدید تنقید کی گئی تھی اور اپنے محبوب کو چاقو کے25 وار کرکے بے رحمی کے ساتھ موت کےگھاٹ اتارنے کے اقدام کو ’غیرانسانی‘ فعل قرار دیا تھا۔

    خیال رہے کہ سزائے موت پانے والی 24 سالہ روتھ کماندی نے اپنے ٹرائل کے عرصے میں مقابلہ حسن میں حصہ لیا اور ملک کی ملکہ حسن کا ٹائٹل حاصل کای تھا۔ اس وقت وہ کینیا کی جیل 1095 میں قید تھی۔ اس پر الزام تھا کہ اس نے سنہ 2015ء کو اپنے بوائے فرینڈ فرید محمد کو چاقو کے پے درپے 25 وار کرکے موت کے گھاٹ اتار دیا تھا۔
    اس کے خلاف قتل کا مقدمہ ملک کی سپریم کورٹ میں چلایا گیا جہاں جمعرات کو خاتون جج جسٹس جیسی لیسیٹ نے ملزمہ کے خلاف کیس کا فیصلہ سنایا۔ جج نے اپنے فیصلے میں لکھا کہ ’میں چاہتی ہوں کہ نوجوان اس بات کو سمجھیں کہ اپنے دوست کا قتل یا اپنی مایوسی کا بدلہ لینے کے لیے کسی دوسرے کی جان لینا خود اپنی جان کو خطرے میں ڈالنے کے مترادف ہے‘۔

    ان کا کہنا تھا کہ اچھی بات تو یہ ہے کہ ہمیں غصہ تھوک کر دوسرے کے ساتھ رواداری اور تحمل کے ساتھ پیش آْنا چاہیے۔

    عدالت نے ملزمہ پر ٹرائل کےدوران غیر شفاف برتاؤ کا بھی الزام عاید کیا اور کہا کہ اس نے مقتول نوجوان کے موبائل فون سے ڈیٹا غائب کرنے اور شواہد مٹانے کی کوشش کی تھی۔ جُرم ثابت ہونے پر بھی اس نے کسی قسم کی شرمندگی کا اظہار نہیں کیا۔

    خیال رہے کہ کینیا میں سزائے موت کا قانون برسوں سے رائج ہے مگر سنہ 1987ء کے بعد کسی مجرم کو سزائے موت نہیں دی گئی۔

    مقتول کے اہل خانہ نے عدالتی فیصلے کو سراہتے ہوئے اسے اپنی کامیابی قرار دیا ہے

  • اکرام گنڈا پور کے قافلے پر خود کش حملہ، ڈرائیور شہید، تحریک انصاف کے امیدوار اور 2 پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد زخمی

    ڈیرہ اسماعیل خان ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) پاکستان تحریک انصاف کے خیبر پختونخوا اسمبلی سے امیدوار اکرام اللہ خان گنڈا پور کی گاڑی کے قریب دھماکہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں ان کا ڈرائیور شہید ،اکرام گنڈا پور اور2 پولیس اہلکار وں سمیت 6 افراد شدید زخمی ہوگئے ہیں۔

    انتخابی مہم کے دوران سابق صوبائی وزیر سردار اکرام اللہ خان گنڈا پور کی گاڑی کے قریب دھماکہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں سابق صوبائی وزیر ،ان کا ڈرائیور اور 2 پولیس اہلکار وں سمیت 6 افراد زخمی ہوئے جنہیں فوری طور پر تحصیل ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم ڈرائیور رمضان راستے میں ہی شہید ہوگیا جبکہ دیگر زخمیوں کی حالت سخت تشویشناک ہے جنہیں ڈیرہ اسماعیل خان کے ضلعی ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔
    عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ اکرام گنڈا پور تحصیل کولاچی میں ایک دھرنے میں شرکت کیلئے جارہے تھے کہ راستے میں ہی ایک خود کش حملہ آور ان کے قافلے کی جانب بڑھا اور خود کو دھماکے سے اڑالیا۔ دھماکے کے بعد اکرام گنڈا پور کی گاڑی تباہ ہوگئی۔ سکیورٹی فورسز کا کوئی بھی اہلکار موقع پر نہیں پہنچ سکا جس کے باعث مقامی لوگوں نے انہیں اپنی مدد آپ کے تحت انہیں ہسپتال منتقل کیا۔
    خیال رہے کہ 2013 کے الیکشن میں اکرام اللہ گنڈا پور کے بھائی اسرار اللہ گنڈا پور تحریک انصاف کی ٹکٹ پر رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔ عید الاضحیٰ کے موقع پر وہ اپنے حلقے کے لوگوں سے عید مل رہے تھے کہ اسی دوران ایک خود کش حملہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں اسرار گنڈا پور شہید ہوگئے تھے ۔ اسرار اللہ گھر کی راہداری سے تھوڑے فاصلے پر اپنے والد سردار عنایت اللہ گنڈہ پور کی قبر کے پاس کھلے آسمان تلے بیٹھے تھے کہ خود کش حملہ آورملاقاتیوں کے ایک گروپ کے ساتھ وہاں پہنچنے میں کامیاب ہو گیا۔ قبل اس کے کہ وہ عید ملنے کے لئے کرسی سے اٹھتے ایک زور دار دھماکہ ہوا جس کے نتیجے میں سردار اسرار اللہ خان گنڈا پور اپنے تین ذاتی محافظوں اور چار علاقہ عمائدین کے ساتھ شہید ہو گئے۔
    اکرام گنڈا پور اپنے بھائی پر ہونے والے حملے کے ملزمان کی گرفتاری کے حوالے سے دیے جانے والے دھرنے میں شرکت کیلئے کولاچی کے عدالت چوک جارہے تھے جبکہ ان کا چھوٹا بھائی انعام گنڈا پور پہلے سے ہی دھرنے میں موجود تھا۔ اکرام گنڈا پور کی جانب سے ڈی پی او اور ضلعی انتظامیہ کو سکیورٹی کی فراہمی کیلئے متعدد درخواستیں دی گئیں تاہم انہیں سکیورٹی فراہم نہیں کی گئی ۔

    واضح رہے کہ سردار اکرام اللہ خان گنڈا پور 2014 میں ہونے والے ضمنی الیکشن میں رکن خیبر پختونخوا اسمبلی منتخب ہوئے جس کے بعد وہ 2014 سے صوبائی حکومت کے خاتمے تک پرویز خٹک کی کابینہ میں بطور صوبائی وزیر زراعت اپنی خدمات سرانجام دیتے رہے ہیں۔ اب بھی وہ خیبر پختونخوا اسمبلی کے حلقہ پی کے 99 سے تحریک انصاف کے ٹکٹ پر ایم پی اے کا الیکشن لڑ رہے ہیں

  • حنیف عباسی کا فیصلہ انصاف کے اصولوں پر مبنی نہیں , شہباز شریف

    لاہور( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کو دیوار سے لگانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

    سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے حنیف عباسی کو عمرقید کی سزا سنانے کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ فیصلے کا وقت بتا رہا ہے کہ فیصلہ ناانصافی پر مبنی ہے، عین انتخابات سے چند دن قبل ہفتہ کی آدھی رات کو اس قدر عجلت میں فیصلہ سنانا ہی ساری کہانی بیان کر رہا ہے، پہلے میاں نواز شریف اور مریم نواز کو انتخابات سے قبل سزا سنائی گئی اور اب حنیف عباسی کو سزا دی گئی۔

    شہباز شریف نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کو دیوار سے لگانے کی کوشش کی جا رہی ہے، پاکستان کی عدالتوں میں ہزاروں کیسز مکمل ثبوتوں کے ساتھ زیر التوا ہیں لیکن مسلم لیگ (ن) کے امیدواروں کے مقدمات کے فیصلوں میں خاص تیزی دکھا ئی جا رہی ہے، حنیف عباسی کا فیصلہ انصاف کے اصولوں پر مبنی نہیں ہے۔

    مسلم لیگ (ن) کے صدر کا کہنا تھا کہ تمام لیگی امیدوار، کارکنوں اور ووٹرز سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ ان مذموم مقاصد کو ناکام بنانے کے لیے 25 جولائی کو باہر نکلیں، شیر پر مہر لگائیں اور ووٹ کی طاقت سے ان سب ہتھکنڈوں کو ناکام بنا دیں۔

  • سعودی عرب غیر ملکی ٹرک ڈرائیوروں پر پابندی سے ماہانہ 200ملین ریال کا نقصان ہوگا

    ریاض ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) بری نقل و حمل کی قومی کمیٹی کے چیئرمین سعود النفیعی نے واضح کیا ہے کہ سعودی سرمایہ کار وں کو ٹرکوں پر غیر ملکی ڈرائیوروں کی تقرری اور بری ٹرانسپورٹ کی سعودائزیشن کے سرکاری فیصلے منظور ہیں۔ حب الوطنی کا تقاضا بھی یہی ہے البتہ اگر حکومت یہ چاہتی ہے کہ اس کی بات پر عمل ہو تو سرمایہ کاروں سے وہی مطالبہ کرے جسے وہ پورا کرسکتے ہوں۔
    انہوں نے توجہ دلائی کہ مملکت میں 20لاکھ سے زیادہ ٹرک اور بسیں چل رہی ہیں۔ پورے ملک میں ہیوی ڈیوٹی ٹرانسپورٹ کے ڈرائیونگ لائسنس رکھنے والے سعودی ایک لاکھ کے لگ بھگ ہیں۔ سعودی ڈرائیور بری ٹرانسپورٹ کی ضرورتیں پوری نہیں کر سکتے۔ سعودی عرب رقبے کے لحاظ سے بھی بہت بڑا ملک ہے۔ اس کی ضرورتیں بہت ہیں۔
    انہوں نے کہا کہ غیر ملکی ڈرائیورو ں پر پابندی اور شہروں میں ٹرکوں کے داخلے کے اوقات محدود کرنے کے باعث ٹرک ٹرانسپورٹ کے مالکان کو ماہانہ 200ملین ریال کا نقصان ہو رہا ہے۔

    اس شعبہ کے مالکان کو ڈر ہے کہ یہ صورتحال برقرار رہی تو لاگت بڑھ جائے گی۔ اس کا نتیجہ اشیاء صرف کے مہنگا ہونے اور ان کی قیمتیں 30فیصد تک بڑھ جانے کی صورت میں برآمد ہوگا۔وزارت محنت ٹرانسپورٹ کے شعبے میں کام کرنے والے غیر ملکیوں کے اقاموں میں توسیع کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔ ٹرانسپورٹ کمپنیوں کو نئے ویزے بھی جاری نہیں کئے جا رہے ہیں جبکہ محنت او رکفالت کے قوانین کی خلاف ورزی پر جرمانے بھی ہو رہے ہیں۔
    ایک اطلاع یہ ہے کہ ٹرانسپورٹ کمپنیاں ایسے پیشوں پر عملہ حاصل کر رہے ہیں جن کی سعودائزیشن کا ابھی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔ دریں اثناء ٹرانسپورٹ کے ماہرین نے توقع ظاہر کی ہے کہ آئندہ سال مملکت میں ٹرانسپورٹ کے شعبہ میں غیر معمولی تبدیلیاں رونما ہوں گی۔ بنی کبیر سوسائٹی کے چیئرمین حسین بن علی آل ایوب نے الشرق الاوسط سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ سال ٹرانسپورٹ اور لاجسٹک خدمات کے شعبے میں زبردست تغیرات آئیں گے۔ اس شعبہ میں 100ارب ریال سے زیادہ کیسرمایہ کاری ہوئی ہے۔

  • اسرائیی حکومت نے القدس میں سرنگ کی مزید کھدائی کی منظوری دے دی

    بیت المقدس ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) اسرائیلی حکومت کی طرف سے القدس میں تعمیر ومرمت کے حوالے سے قائم کردہ ضلعی کمیٹی نے پرانے بیت المقدس میں کھودی گئی سرنگ کو مزید طول دینے کے لیے کھدائی کی منظوری دے دی ہے۔

    مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق منصوبے کے تحت بیت المقدس کے باب الخلیل سے باب العامود تک سرنگ کھودنے کی منظوری دی گئی ہے۔ القدس کے شمال کی سمت میں کھودی جانے والی اس سرنگ کو ’اسرائیلی آرمی ٹنل‘ کا نام دیا گیا ہے۔

    عبرانی جریدے ’کول ھعیر‘ کے مطابق مذکورہ سرنگ کو القدس میں آمد ورفت کے لیے استعمال کیا جائے گا۔ اس کی تکمیل کے بعد شاہراہ الانبیاء پر گاڑیوں اور  القدس کی میٹرو ٹرین پر سواریوں کا بوجھ کم کرنے میں مدد ملے گی۔ سرنگ کا نیا حصہ ایک کلو میٹر پر محیط ہوگا۔

    خیال رہے کہ اسرائیل نے ملٹری ٹنل کے نام سے سرنگ کی کھدائی کا سلسلہ کچھ عرصہ قبل شروع کیا تھا۔ اس منصوبے پر 3 کروڑ 60 لاکھ ڈالر کا تخمینہ لگایا  گیا ہے۔ شمال کی طرف سے یہ سرنگ مندلبوم اور امریکن کالونی ہوٹل سے متصل ہے۔

    سرنگ سے باہر نکلنے کے تین ہنگامی راستے بھی بنائے گئے ہیں۔

  • شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا ملنے سے اب این اے 60 راولپنڈی کا الیکشن یکطرفہ ہو جائے گا

    راولپنڈی( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) شیخ رشید نے حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا دینے کی مخالفت کردی، سربراہ عوامی مسلم لیگ کا کہنا ہے کہ اب الیکشن یکطرفہ ہو جائے گا، خواہش ہے عدالت حنیف عباسی کو ان کے مقابل الیکشن لڑنے کی اجازت دے۔ تفصیلات کے مطابق رہنما ن لیگ اور این اے 60 راولپنڈی سے امیدوار حنیف عباسی کو ایفی ڈرین کیس میں مجرم قرار دیتے ہوئے عمر قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا دیے جانے پر ان کے حریف پاکستان عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے ردعمل دیا ہے۔ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا ملنے سے اب این اے 60 راولپنڈی کا الیکشن یکطرفہ ہو جائے گا۔

    شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حنیف عباسی کو اپنے کیے کی سزاملی ہے، یہ لوگ منشیات فروخت کرکے دولت اکٹھی کرتے ہیں، تاہم ان کی خواہش ہے کہ عدالتحنیب عباسی کو الیکشن میں حصہ لینے کی اجازت دے دے۔

    شیخ رشید کا کہنا ہے کہ وہ یکطرفہ الیکشن نہیں لڑنا چاہتے۔  واضح رہے کہ انسداد منشیات عدالت نے مسلم لیگ ن کے رہنماء حنیف عباسی کیخلاف ایفیڈرین کیس کا فیصلہ سنادیا۔ رہنما ن لیگ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا سنا دی گئی، جج محمد اکرم نے مجرم کو کمرہ عدالت سے فوری گرفتار کرنے کا حکم دیا، فیصلہ 11 گھنٹے کی تاخیر سے سنایا گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق راولپنڈی کی انسداد منشیات عدالت کے جج سردارمحمد اکرم خان کی سربراہی میں مسلم لیگ ن کے رہنماء حنیف عباسی کیخلاف ایفیڈرین کیس کی سماعت ہوئی۔اس موقع پرحنیف عباسی کے وکیل تنویر اقبال نے عدالت کی ڈیڈلائن کے مطابق اپنے دلائل مکمل کیے۔ وکیل صفائی نے عدالت میں سیلز ریکارڈ اور بینک ٹرانزیکشن کاریکارڈ بھی پیش کیا۔جس کے بعد جج سردار محمد اکرم نے ایفیڈرین کیس کا فیصلہ سنا دیا۔ انسداد منشیات عدالت کے جج محمد اکرم نے 11 گھنٹے کی تاخیر کے بعد سنائے گئے فیصلے میں رہنما ن لیگ حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا سنائی۔جج نے احاطہ عدالت میں موجود اے این ایف اہلکاروں کو حکم دیا  کہ حنیف عباسی کو فوری گرفتار کر لیا جائے۔ جبکہ فیصلے میں دیگر 7 ملزمان کو شک کا فائدہ دے کر بری کر دیا گیا ہے۔ عمر قید کی سزا کے بعد حنیف عباسی کو انتخابات میں حصہ لینے کیلئے بھی نااہل قرار دے دیا گیا ہے۔ انسداد منشیات عدالت کی جانب سے ایفیڈرین کیس کاتحریری اور تفصیلی فیصلہ بعد میں جاری کیا جائے گا۔واضح رہے اسلام آباد ہائیکورٹ نے انسدادمنشیات عدالت کوحنیف عباسی کیخلاف آج 21جولائی کوفیصلہ سنانے کا حکم دے رکھا تھا۔ تاہم آج عدالت کے جج محمد اکرم فیصلہ سنانے کیلئے کمرہ عدالت پہنچے تومسلم لیگ ن کے سینکڑوں کارکن بھی عدالت پہنچ گئے ۔ جس کے باعث کمرہ عدالت ن لیگی کارکنان سے کھچا کھچ بھر گیا اور ن لیگی کارکنان نے قیادت کے حق میں نعرے بازی بھی کی۔جس پر جج سردار اکرم خان نے اظہار برہمی کرتے ہوئے کمرہ عدالت خالی کروانے کی ہدایت کردی۔جج نے کہا کہ سی پی او کوفون کرکے فورس منگوائی جائے۔ انہوں نے ن لیگی کارکنان سے کہا کہ میں بھی انسان ہوں مجھے شور میں فیصلہ لکھنے میں مشکل پیش آرہی ہے۔ جس کے باعث اے این ایف اہلکاروں کی بڑی تعداد کمرہ عدالت میں پہنچ گئی۔ تاہم اس موقع پرحنیف عباسی اورسینیٹرچوہدری تنویرنے کارکنا ن کو نعرے بازی سے روکتے ہوئے پرامن رہنے کی ہدایت کی اور کارکنان کوکمرہ عدالت سے باہر نکال دیا۔فیصلہ سنانے سے قبل عدالت کی سکیورٹی سخت کردی گئی۔ بکتر بند گاڑی اور پولیس کی نفری تعینات کردی گئی۔ تاہم کیس میں ملوث حنیف عباسی سمیت دیگر ملزمان عدالت کے اندرہی موجود رہے۔جبکہ میڈیا اور ن لیگی کارکنان کوکمرہ عدالت سے باہر نکال دیا گیا۔ بعد ازاں میڈیا کے احتجاج کے بعد انہیں اندر جانے کی اجازت دے دی گئی۔ حنیف عباسی کیخلاف ایفی ڈرین کوٹہ کیس کا فیصلہ ہفتے کے روز دوپہر 12 بجے محفوظ کیا تھا۔تاہم کیس کا فیصلہ 11 گھنٹے کی تاخیر سے رات 11 بجے سنایا گیا۔ فیصلے کے بعد احاطہ عدالت میں موجود ن لیگی کارکنوں نے غنڈہ گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے توڑ پھوڑ کی اور حنیف عباسی کو گرفتار ہونے سے بچانے کی کوشش کی۔ تاہم عدالت میں موجود اے این ایف اہلکاروں نے فوری صورتحال کو قابو میں کرتے ہوئےن لیگ کے مشتعل کارکنوں کو احاطہ عدالت سے باہر نکال دیا، جبکہ حنیف عباسی کو فوری گرفتار کرکے عدالت سے لے جایا گیا۔ اس فیصلے کے بعد حنیف عباسی راولپنڈی کے حلقے این اے 60 سے انتخاب بھی نہیں لڑ پائیں گے۔ حنیف عباسی کو انتخاب لڑنے کیلئے بھی نااہل قرار دے دیا گیا ہے

  • حنیف عباسی نے انسداد منشیات عدالت کی جانب سے دی گئی عمرقید کو ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان
    راولپنڈی( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو)انسداد منشیات عدالت کے فیصلے پر حنیف عباسی کا ردعمل سامنے آ گیا۔ حنیف عباسی نے انسداد منشیات عدالت کی جانب سے دی گئی عمرقید کو ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان کردیا۔تفصیلات کے مطابق حنیف عباسی کے خلاف ایفی ڈرین کیس راولپنڈی کی انسداد منشیات کی خصوصی عدالت میں زیر سماعت تھا اور آج اس کیس کا فیصلہ سنایا جانا تھا ۔انسداد منشیات کی عدالت نے اس کیس کی سماعت کرتے ہوئے 12 بجے اس کیس کا فیصلہ محفوظ کردیا گیا تھا اور امید ظاہر کی جارہی تھی کہ یہ فیصلہ 4 سے 5 گھنٹے میں سنایا جائے گا تاہم اس کیس کا فیصلہ باقی تمام اہم کیسسز کی طرح اس کیس کا فیصلہ بھی تاخیر کا شکار ہوا۔تاہم اب سے کچھ دیر پہلے انسداد منشیات کی خصوصی عدالت کے جج عدالت میں پہنچ گئے۔جج نے تمام ملزمان کو کٹہرے میں بلایا اور فیصلہ سنانا شروع کر دیا۔

    ایفیڈرین کیس میں حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا سنادی گئی۔جس کے بعد حنیف عباسی کو کمرہ عدالت سےگرفتار کرلیا گیا۔۔پاکستان کی عدالتی تاریخ کا پہلا فیصلہ ہے جو رات 11 بجے آیا۔اس موقع پر حنیف عباسی کی حمایتیوں اور مسلم لیگ ن کے کارکنان نے ہنگامہ برپا کردیا اور حنیف عباسی کی گرفتاری میں رکاوٹ بن گئے۔اس کے علاوہ انہوں نے عدالت میں توڑ ہھوڑ شروع کر دی۔جج نے احاطہ عدالت میں موجود اے این ایف اہلکاروں کو حکم دیا کہ حنیف عباسی کو فوری گرفتار کر لیا جائے۔اس موقع پر یہ بھی خبر سامنے آ رہی تھی کہ گرفتاری کے وقت سابق وفاقی وزیر اور مسلم لیگ ن کے رہنما حنیف عباسی کی طبیعت خراب ہو گئی تھی۔طبیعت خرابی کی وجہ کمرہ عدالت میں حبس اور گرمی بنی ۔تاہم انسداد منشیات فورس کے اہلکاروں نے حینف عباسی کو گرفتار کر کے بکتر بند گاڑی تک پہنچا دیا جس کے ذریعے انکو ممکنہ طور پر اڈیالہ جیل منتقل کیا جائے گا۔تازی ترین خبر کے مطابق حنیف عباسی کا اس فیصلے پر ردعمل سامنے آ گیا ہے۔۔حنیف عباسی نے اعلان کیا ہے کہ وہ فیصلے کو ہائی کورٹ میں چیلنج کریں گے۔واضح رہے کہ اس فیصلے سے مسلم لیگ ن کو بڑا سیاسی جھٹکا پہنچا ہے۔۔حنیف عباسی این اے60 راولپنڈی سے ن لیگ کے امیدوار تھے جہاں انکا مقابلہ شیخ رشید سے تھا۔یاد رہے کہ حنیف عباسی نے 500کلو گرام ایفی ڈرین کا کوٹہ لیا تھا اور ان پر الزام تھا کہ انہوں نے یہ ایفی ڈرین منشیات فروشوں کے ہاتھوں بیچ دیا تھا۔

  • اسرائیل کے مجرمانہ حملوں میں 4 فلسطینی شہری شہید
    غزہ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) پر اسرائیل کے مجرمانہ حملوں میں 4 فلسطینی شہری شہید ہوگئے ہیں۔

     

  • مسلم لیگ (ن)کے امیدوار حنیف عباسی کو ایفی ڈرین کیس میں عمر قید کی سزا سناتے ہوئے باقی سات ملزمان کو عدم ثبوت کی بنا پر بری کر دیا ،ْ فیصلے کے بعد حنیف عباسی کو کمرہ عدالت سے گرفتار کرلیا گیا

    راولپنڈی ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) راولپنڈی کی انسداد منشیات عدالت نے حلقہ این اے راولپنڈی 60سے مسلم لیگ (ن)کے امیدوار حنیف عباسی کو ایفی ڈرین کیس میں عمر قید کی سزا سناتے ہوئے باقی سات ملزمان کو عدم ثبوت کی بنا پر بری کر دیا ،ْ فیصلے کے بعد حنیف عباسی کو کمرہعدالت سے گرفتار کرلیا

     

    گیا اور سز ا کے بعد لیگی امیدوار الیکشن کیلئے نا اہل ہوگئے ہیں ۔تفصیلات کے مطابق عدالت کی جانب سے حنیف عباسی و دیگر ملزمان کے خلاف ایفی ڈرین کوٹہ کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا گیا تھا جو تاخیر کا شکار ہوا اور رات کو 11 بجے کے قریب سنا دیا گیا۔۔عدالت نے مسلم لیگ (ن)کے رہنما اور حنیف عباسی کو مقدمے میں عمر قید کی سزا سنائی تاہم ان کے ساتھ نامزد دیگر ملزمان کو عدم ثبوت کی بنا پر بری کردیا ہے۔

    پاکستان مسلم لیگ (ن) کے کارکنان کی بڑی تعداد عدالت میں موجود تھی جہاں فیصلے کے بعد حنیف عباسی کو گرفتار کرنے میں کافی مشکلات پیش آئیں، مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں نے فیصلے کے خلاف شدید احتجاج کیا۔

    قبل ازیں انسدادِ منشیات عدالت کے جج سردار محمد اکرم خان نے حنیف عباسی اور دیگر کے خلاف 2012 میں درج کیے گئے مقدمے کی سماعت کی، اس دوران حنیف عباسی کے وکیل تنویر اقبال پیش ہوئے اور کیس پر دلائل دینے کا سلسلہ شروع کیا۔وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ میرے موکل پر الزام عائد کیا گیا جبکہ ایفی ڈرین منشیات کے زمرے میں نہیں آتی، مقدمے کا اندراج بھی ٹھیک نہیں ہوا کیونکہ اس کیس میں نائن سی کا مقدمہ قانونی طور پر بنتا ہی نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف) حکام ساتھ ساتھ یہ الزام بھی لگا رہے ہیں کہ حنیف عباسی نے ایفی ڈرین کوٹہ کا غلط استعمال کیا۔وکیل تنویر اقبال نے کہا کہ قانون یہ بھی کہتا ہے کہ شک کا فائدہ دیتے ہوئے کسی بھی ملزم کو ایسے کیس سے بری کیا جا سکتا ہے۔دورانِ سماعت وکیل حنیف عباسی نے کہا کہ اے این ایف ایفی ڈرین کے حوالے سے کوئی ایک مثال بتا دے کہ یہ غلط استعمال ہوئی جس پر عدالت کے جج نے ریمارکس دیے کہ جتنا جلدی آپ اپنے دلائل مکمل کرلیں زیادہ بہتر ہے، کہیں ایسا نہ ہو کہ بجلی چلی جائے تو مشکل ہو گی۔عدالت نے استفسار کیا کہ اے این ایف اگر لیب میں ٹیسٹنگ کے لیے کوئی چیز بھجواتی ہے تو وہاں سے کیا رپورٹ آتی ہی کیا لیب اس کا تعین کر سکتی ہے، انہوں نے کہا کہ کیا مختلف مواقع پر جو دستاویزات اے این ایف حکام تحویل میں لیتے رہے، ان کی وصولی کی رسید دیتے رہی اس پر وکیل صفائی نے کہا کہ اے بی فارما اور حماس فارما سے متعلق کوریئر سروس کا ریکارڈ موجود ہے۔حنیف عباسی کے وکیل نے کہا کہ تحقیقاتی افسر کو چاہیے تھا کہ وہ 5100 جار سمیت تمام ثبوتوں کا ریکوری میمو بناتے مگر ایسا نہیں کیا گیا اور کوئی مضبوط شہادت موجود نہیں ہے۔دوران سماعت وکیل حنیف عباسی کے دلائل مکمل ہونے کے بعد عدالت نے اے این ایف کے وکیل کو جوابی دلائل کا آخری موقع دیا۔اے این ایف پروسیکیوٹر نے اپنے جوابی دلائل دیتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ ایفیڈرین سے تیار کردہ ادویات کا بیج یہاں سے کراچی گیا ہی نہیں۔انہوں نے کہا کہ جو این آئی ایچ نے رپورٹ بھیجی وہ متعلقہ اتھارٹی نے بھجوائی، جس میں ایفیڈرین مقدار 9.3 فیصد آئی ہے۔پروسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ ایکٹ کی خلاف ورزی ہوئی ہے جب انکوائری ہوئی تو اس کے بعد مقدمہ درج ہوا، تاہم ہمارا یہ موقف ہے کہ جس مقصد کیلئے ایفیڈرین حاصل کی گئی اسے اس مقصد کے لئے استعمال نہیں کیا گیا۔۔حنیف عباسی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ کی دونوں فیصلوں کو دیکھا ہے اور اس سے پہلے مکمل طور پر فیصلوں کا مطالعہ نہیں کر سکا تھا ،ْعدالت نے دونوں فریقین کے دلائل سننے کے بعد ایفی ڈرین کوٹہ کیس کا فیصلہ محفوظ کرلیا اور کہا گیا کہ فیصلہ تین سے چار گھنٹوں میں سنایا گیا تاہم عدالت کی جانب سے دن بارہ بجے کیاگیا فیصلہ رات تقریباً گیارہ بجے کے قریب سنایا گیا ۔عدالت نے اپنے فیصلے میں حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا سناتے ہوئے باقی سات ملزمان کو بری کر دیا ۔عدالتی فیصلے میں کہا گیا کہ 363 کلو گرام ایفیڈرین کا درست استعمال کیا گیا ،ْ ملزم حنیف عباسی باقی ایفیڈرین کے استعمال کا ثبوت نہ دے سکے۔فیصلے کے بعد حنیف عباسی الیکشن لڑنے کیلئے بھی نااہل ہوگئے۔خیال رہے کہ حنیف عباسی قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 60 راولپنڈی سے پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار تھے اور اس حلقے سے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید بھی الیکشن لڑ رہے تھے۔ایفی ڈرین کوٹہ کیس کی سماعت کے موقع پر عدالت میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے اور کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کے لیے پولیسکی بھاری نفری کو انسداد منشیات کی خصوصی عدالت کے باہر پہنچا دیا گیا تھا ،ْ لیگی کارکنوں کی بڑی تعداد بھی احاطہ عدالت میں موجود تھی۔واضح رہے کہ پاکستانمسلم لیگ (ن) کے رہنما حنیف عباسی سمیت دیگر ملزمان پر جولائی 2012 میں 5 سو کلو گرام ایفی ڈرین حاصل کرنے کا کیس دائر کیا گیا تھا۔مذکورہ مقدمے میں حنیف عباسی کے علاوہ غضنفر، احمد بلال، عبدالباسط، ناصر خان، سراج عباسی، نزاکت اور محسن خورشید نامی شخصیات شامل ہیں۔ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں دورانِ سماعت اب تک 5 ججز تبدیل ہو چکے ہیں جبکہ اس میں 36 گواہان نے اپنی شہادتیں قلمبند کرائیں۔ملزمان پر الزام عائد ہے کہ انہوں نے ایفی ڈرین کا غلط استعمال کرتے ہوئے منشیاات اسمگلروں کو فرخت کیں۔ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں اے این ایف نے حنیف عباسی سمیت دیگر ملزمان پر نائن سی ایکٹ کے تحت مقدمہ نمبر 41 درج کیا تھا۔یاد رہے کہ رواں ماہ 16 تاریخ کو لاہور ہائی کورٹ کے راولپنڈی بینچ کے جسٹس عبادالرحمن لودھی نے انسدادِ منشیات عدالت کو حکم دیا تھا کہ وہ مذکورہ کیس کو روزانہ کی بنیاد پر سماعتکرتے ہوئے 21 جولائی تک نمٹا دے۔ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف حنیف عباسی نے سپریم کورٹ سے رجوع کیا تاہم اعلیٰ عدالت نے 17 جولائی کو فیصلہ سناتے ہوئے ایفی ڈرین کیس کا فیصلہ 21 جولائی کو سنانے کے اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم کیخلاف حنیف عباسی کی درخواست مسترد کی۔

  • افغانستان میں قیام امن کیلیے پاکستان کاتعاون اہم ہے،امریکی فوج کی سینٹرل کمان

     امریکی ( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) فوجکی سینٹرل کمان (سینٹ کام )کے کمانڈرجنرل جوزف ووٹل نے کہاہے کہ افغانستان میں قیام امن کیلیے پاکستان کاتعاون اہم ہے۔ فلوریڈامیں سینٹرل کمان کے ہیڈکوارٹرزمیں امریکی فوج کی جنوبی ایشیاکے بارے میں حکمت عملی کے بارے میں محکمہ دفاع کی بریفنگ کے دوران جنرل جوزف ووٹل نے کہاکہ افغانستان میں پائیدارسیاسی حل کے مقصد کے حصول کیلیے پاکستان کاتعاون انتہائی اہمیت کاحامل ہے۔ پاکستان سے ڈومور کے مطالبے پرمبنی امریکی انتظامیہ کے موقف کااعادہ کرتے ہوئے انھوں نے کہاکہ ہم اس اہم کردار کو نبھانے میں مدد کیلیے پاکستان کے ساتھ قریبی طورپرمل کرکام کررہے ہیں جس کا عندیہ انھوں نے دیااوراب وقت آگیاہے کہ وہ آگے بڑھیں۔ افغانستان فورسزکی استعداد بہترہورہی ہے تاہم انھیں طالبان اورداعش کے شدت پسندوں کامقابلہ کرنے کیلیے مزیدوقت درکارہے، افغان فورسز لڑرہی ہیں اور جانی نقصان بھی ہورہاہے تاہم ہرگزرتے دن کے ساتھ ان کی صلاحیت اورکارکردگی میں بہتری آرہی ہے۔

  • امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تمام چینی درآمدات پر ڈیوٹی لگانے کی دھمکی

    واشنگٹن( ورلڈفاسٹ نیوزفاریو) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 505.5ارب ڈالر تمام چینی درآمدات پر ڈیوٹی لگانے کی دھمکی دے دی۔ امریکی نیٹ ورک سی این بی سی کو انٹرویو میں انھوں نے 2017 میں چین سے درآمدکی گئی 505ارب ڈالر کی چینی مصنوعات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاکہ میں 500 تک کے لیے جانے کو تیار ہوں، میں یہ سیاست کے لیے نہیں کر رہا، میں یہ اپنے ملک کی خاطر بہتر دیز کے لیے کر رہا ہوں، چین ہمیں کافی عرصے سے کاٹ رہا ہے۔ گزشتہ روز ٹرمپ نے اپنے انٹرویو میں اپنے دعوے کا اعادہ کیاکہ امریکہ ٹریڈ پالیسی سمیت ایشوز پر فائدہ اٹھا رہا ہے، میں انھیں (چین کو) خوف زدہ کرنا نہیں چاہتا بلکہ میں انھیں بہتری پر مجبور کرنا چاہتا ہوں، مجھے صدر زی بہت پسند ہیں مگر یہ بہت غیرمنصفانہ ہے۔ انھوں نے فیڈرل ریزرو کی پالیسی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور مانیٹری پالیسی کو سخت کرنے پر ناپسندیدگی کا اظہار کیا۔ بعد میں وائٹ ہاؤس نے ایک بیان جاری کرکے کہاکہ صدر مرکزی بینک کی آزادی کا احترام کرتے ہیں اور پالیسی سازی میں مداخلت کرنا نہیں چاہتے۔ واضح رہے کہ امریکہ نے رواں ماہ چین کی 34ارب ڈالر کی مصنوعات کے لیے 25 فیصد درآمدی ڈیوٹی لگائی تھی۔ جس کے نتیجے میں چین نے بھی پوری طور پر اتنی ہی مالیت کی امریکی مصنوعات پر یکساں شرح سے ٹیرف عائد کردیے تھے اور واشنگٹن پر اقتصادی تاریخ کی سب سے بڑی تجارتی جنگ شروع کرنے کا الزام عائد کیا تھا، امریکا مزید 16ارب ڈالر کی چینی مصنوعات پر ٹیرف لگانے کا جائزہ لے رہا ہے۔ علاوہ ازیں امریکی صدر نے اپنی ٹوئٹ میں چین اور یورپی یونین پر تجارتی فائدے کے لیے اپنی کرنسیوں کی قدر مصنوعی طور پر کم رکھنے کا الزام عائد کیا اور مرکزی بینک کی شرح سود بڑھانے کی پالیسی کو ایک بار پھر شدید تنقید کا نشانہ بنایا کہ اس سے سب کو نقصان ہو رہا ہے۔